بشریٰ بی بی کو سکیورٹی کی بنا پر جیل منتقل نہیں کر سکتے :سپرنٹنڈنٹ

 بشریٰ بی بی کو سکیورٹی کی بنا پر جیل منتقل نہیں کر سکتے :سپرنٹنڈنٹ

اسلام آباد(اپنے نامہ نگار سے )اسلام آباد ہائیکورٹ میں سابق وزیر اعظم کی اہلیہ بشری ٰبی بی کی بنی گالا سے اڈیالہ جیل منتقلی کی درخواست پر سماعت ہوئی ۔

 سپرنٹنڈنٹ اڈیالہ جیل نے رپورٹ عدالت میں جمع کروادی، جس میں کہاگیا کہ سکیورٹی وجوہات کی بنا پر بشریٰ بی بی کو جیل منتقل نہیں کر سکتے ،جیل میں جگہ کم ہے ، 250 خواتین پہلے ہی قید ہیں،دوران سماعت چیف کمشنر اسلام آباد کی جانب سے جواب جمع نہ کروایا جاسکا جبکہ سرکاری وکیل نے چیف کمشنر کے جواب کے لیے وقت دینے کی استدعا کی،عدالت نے استدعا منظور کرتے ہوئے سماعت دو ہفتوں تک کیلئے ملتوی کردی۔ادھر اسلام آباد ہائیکورٹ میں دائر عظمیٰ خان کی بشریٰ بی بی کے میڈیکل چیک اپ کی درخواست پر لگے رجسٹرار آفس کے اعتراضات دور کر دیئے گئے ،جسٹس ثمن رفعت امتیاز آج عظمیٰ خان کی درخواست پر سماعت کریں گی،ڈائری برانچ نے عظمیٰ خان کی درخواست پر رٹ نمبر الاٹ کردیا۔درخواست میں کہاگیا ہے کہ خاندانی معالج ڈاکٹر عاصم یوسف کو بشریٰ بی بی کے میڈیکل چیک اپ کی اجازت دی جائے ۔

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں