نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- کوروناسےمتاثر 3398 مریضوں کی حالت تشویشناک،این سی اوسی
  • بریکنگ :- پنجاب 3 لاکھ 58 ہزار 387،سندھ میں 3 لاکھ 87 ہزار 261 کیسز
  • بریکنگ :- خیبرپختونخواایک لاکھ 45 ہزار 306،بلوچستان میں 30 ہزار 627 کیس رپورٹ
  • بریکنگ :- اسلام آباد 88 ہزار 344،گلگت بلتستان میں 8 ہزار 318 کیسز
  • بریکنگ :- آزادکشمیرمیں کورونامریضوں کی تعداد 25 ہزار 34 ہوگئی،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک میں کورونامثبت کیسزکی شرح 7.19 فیصدرہی،این سی اوسی
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےمیں کوروناکےمزید 3582 کیس رپورٹ،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں کورونامریضوں کی تعداد 10 لاکھ 43 ہزار 277 ہوگئی
  • بریکنگ :- ملک میں کوروناکےایکٹوکیسزکی تعداد 75 ہزار 373 ہے
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں 24 گھنٹےکےدوران کوروناسےمزید 67 اموات
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں کوروناسےجاں بحق افرادکی تعداد 23 ہزار 529 ہوگئی
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےمیں کوروناکے 1355 مریض صحت یاب،این سی اوسی
  • بریکنگ :- کوروناسےصحت یاب افرادکی مجموعی تعداد 9 لاکھ 44 ہزار 375 ہوگئی
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےکےدوران 49 ہزار 798 کوروناٹیسٹ کیےگئے
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں ایک کروڑ 61 لاکھ 58 ہزار 330 کوروناٹیسٹ کیےجاچکے
Coronavirus Updates

مالی سال 2021 : 14.24 ارب ڈالر غیر ملکی قرض اور امداد وصول : حجم ہدف سے 2.28 ارب ڈالر زیادہ

مالی سال 2021 : 14.24 ارب ڈالر غیر ملکی قرض اور امداد وصول : حجم ہدف سے 2.28 ارب ڈالر زیادہ

دنیا اخبار

8.17ارب ڈالرغیرملکی قرض اورگرانٹس،2.50ارب ڈالربانڈزکے اجراسے حاصل،کیری لوگربل کے تحت 57لاکھ ڈالرملے عالمی کمرشل بینکوں سے 4.72ارب ڈالرقرض ملا،چین نے زرمبادلہ ذخائر کیلئے ایک ارب ڈالردیئے :اقتصادی امورڈویژن

اسلام آباد(خبر نگار خصو صی)30جون 2021 کو ختم ہونے والے مالی سال 2020-21 کے دوران پاکستان کو عالمی مالیاتی اداروں اور دوست ممالک سے قرض اور امداد کی مد میں مقرر کردہ ہدف 12 ارب ڈالر کے مقابلے میں 14 ارب 24 کروڑ ڈالر موصول ہوئے ۔ اس طرح قرض اور گرانٹس کی مالیت بجٹ میں مقرر کردہ ہدف سے 2 ارب 28 کروڑ ڈالر بڑھ گئی ہے ۔ اقتصادی امور ڈویژن کی جانب سے جاری کئے گئے حتمی اعداد وشمار کے مطابق پاکستان کو جولائی 2020 سے لیکر جون 2021 کے دوران 8 ارب 17 کروڑ 14 لاکھ ڈالر مالیت کا غیر ملکی قرض اور غیر ترقیاتی گرانٹس موصول ہوئی ہیں جن میں سے پاکستان نے سرمایہ کی عالمی منڈی میں بانڈز کا اجرا کرکے 2 ارب 50 کروڑ ڈالر جمع کئے ۔ امریکا سے کیری لوگر بل کے تحت 57 لاکھ 50 ہزار ڈالر کی امداد ملی۔ عارضی طور پر بے گھر افراد کی بحالی کیلئے ایک کروڑ 38 لاکھ 70 ہزار ڈالر ملے ۔ غیر ترقیاتی امداد اور غیر ترقیاتی قرض کی مد میں 11 ارب 22 کروڑ 39 لاکھ ڈالر موصول ہوئے ۔ بڑے ترقیاتی منصوبوں کیلئے ترقیاتی قرض کی مالیت ایک ارب 72 کروڑ 29 لاکھ ڈالر رہی۔ ریاست پاکستان کی ضمانت پر ایک ارب 23 کروڑ 80 لاکھ ڈالر قرض اور امداد موصول ہوئی۔ سعودی عرب سے زرمبادلہ کے ذخائر بلند رکھنے کیلئے ایک ارب ڈالر ملے ۔ عالمی کمرشل بینکوں سے 4 ارب 72 کروڑ ڈالر کا کمرشل قرضہ بھی لیا گیا۔

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں
Advertisement