دودھ فروش انتظامیہ کے کنٹرول سے باہر:قیمتوں میں خود ساختہ اضافہ برقرار

دودھ فروش انتظامیہ کے کنٹرول سے باہر:قیمتوں میں خود ساختہ اضافہ برقرار

گوجرانوالہ (نیوز رپورٹر)گوجرانوالہ میں دودھ فروش انتظامیہ کے کنٹرول سے باہر،انتظامیہ کی جانب سے کارروائیوں کے باجود دودھ فروشوں نے دودھ اور دہی کی قیمتوں میں خود ساختہ طور پر اضافہ کر دیا ۔

دودھ 220 سے 230روپے جبکہ دہی 250روپے فی کلو گرام کے حساب سے فروخت ہونے لگی ۔تفصیلات کے مطابق گوجرانوالہ میں دودھ فروشوں نے من مانی کرتے ہوئے دودھ 220روپے فی کلو جبکہ دہی 250روپے فی کلو کے حساب سے فروخت کر نا شروع کر دئیے ۔ پہلے صرف تین سے چار دودھ فروشوں نے دودھ اور دہی کی قیمتوں میں اضافہ کیا جن کو دیکھا دکھی دیگر دودھ فروشوں نے نے بھی قیمتوں میں اضافہ کر دیا۔ضلعی انتظامیہ کی جانب سے جو ریٹ لسٹ جاری کی گئی ہے اس کے مطابق دودھ کی قیمت 170روپے فی لیٹر ہے جبکہ دہی کی 180روپے فی کلو گرام ہے لیکن گوجرانوالہ میں کسی بھی جگہ اس ریٹ پر دودھ اور دہی فروخت نہیں ہو رہا۔وحدت کالونی ،پیپلز کالونی ،سیٹلائٹ ٹائون ،باغبانپورہ ،ماڈل ٹاون ،فتو منڈٖ ،گرجاکھ کے علاقوں میں دکاندار کھلے عام مہنگا دودھ فروخت کر رہے ہیں۔ پرائس کنٹرول مجسٹریٹس کی جانب سے دودھ فروشوں کو پانچ سے دس ہزار روپے تک جرمانہ کیا گیا لیکن اس کے باجود دودھ فروش بلا کسی خوف وڈر کھلے عام اپنے من مانے ریٹ پر دودھ اور دہی فروخت کر رہے ہیں ۔شہریوں کا کہنا ہے کہ منافع خوری کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کرے ،صرف جرمانے ہی نہیں انہیں دو دوماہ کے لیے جیل میں بند کیا جائے ۔ 

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں