18 ویں سندھ گیمز کا کل سے آغاز ، 4 ہزار ایتھلیٹس حصہ لیں گے

18 ویں  سندھ  گیمز  کا  کل  سے  آغاز  ،  4  ہزار  ایتھلیٹس  حصہ  لیں  گے

کراچی (اسٹاف رپورٹر) نگراں وزیر کھیل ڈاکٹر سید جنید علی شاہ اور نگراں وزیر اطلاعات سندھ محمد احمد شاہ نے مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے ا علان کیا ہے کہ 18ویں سندھ گیمز کا آغاز جمعے (کل ) سے کراچی میں کیا جائے گا جس میں چار ہزار کے قریب ایتھلیٹس حصہ لیں گے ۔

اولڈ سندھ اسمبلی بلڈنگ میں پریس کانفرنس میں بات کرتے ہوئے وزیر اطلاعات سندھ محمد احمد شاہ نے کہا کہ سندھ گیمز کا آغاز کا خوش آئند ہے ،چاہتے ہیں سندھ کے ٹیلنٹ کو عالمی سطح تک پہنچانے میں معاون کا کردار ادا کریں ۔ ڈاکٹر سید جنید علی شاہ نے بتایا کہ سندھ گیمز کا انعقاد نیشنل کوچنگ سینٹر کراچی میں ہوگا، گیمز 26فروری تک جاری رہیں گے، سندھ گیمز میں 69شعبوں میں 3700 ایتھلیٹ حصہ لیں گے ، 69 ڈسیپلین میں مردوں کی 42  جبکہ خواتین کی 27 ڈسیپلین رکھے گئے ہیں۔سندھ گیمز اس وقت 8 سال بعد ہو رہے ہیں جبکہ صوبائی سطح پر ہونے والے گیمز کا یہ بڑا ایونٹ ہر سال ہونا چاہیے ، سندھ میں کھیلوں کی سرگرمیوں کو فروغ دینے کی بے حد ضرورت ہے ،ہم چاہتے ہیں سندھ کے نوجوان نیشنل اور انٹرنیشنل سطح پر اپنی پہچان بنائیں، ڈاکٹر سید جنید علی شاہ نے کہا اسپورٹس کے مسائل کے حوالے سے آواز اٹھنا مثبت بات ہے ، جس سے اندازہ ہوتا ہے کہ یہاں کھیلوں کی سرگرمیوں کو لے کر لوگ کتنے سنجیدگی ہیں، انہوں نے کہا کہ سندھ گیمز کو کراچی کے علاوہ دیگر شہروں میں بھی منعقد کرنا چاہتے تھے لیکن موجودہ صورتحال اور دھرنوں کے ماحول کی وجہ سے سندھ گیمز کو کراچی میں منعقد کیا جا رہا ہے ، صوبائی وزیر نے کہا کہ سندھ گیمز میں ثقافتی کھیلوں کو بھی ترجیح دی گئی ہے جس میں ملاکھڑو، ونجھ وٹی، کوڈی کوڈی (کبڈی کبڈی) کی کیٹگریز رکھی گئی ہیں۔ ایک سوال کے جواب میں نگراں وزیر کھیل نے کہا کہ سندھ اولمپک ایسوسی ایشن کو مضبوط کرنے کی ضرورت ہے ، اس کے الیکشن کو موثر بنانے کی ضرورت ہے ۔

 

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں