دودھ، گوشت کی قیمت کا اختیار کسان کو دینے کا فیصلہ

دودھ، گوشت کی قیمت کا اختیار کسان کو دینے کا فیصلہ

لاہور(عمران اکبر)وفاقی حکومت نے دودھ، گائے اور بکر ے کے گوشت کی قیمت مقرر کرنے کا حکومتی اختیار ختم کرنے کا فیصلہ کرلیا۔

صوبائی حکومتوں کو اختیارات ختم کرنے کی پالیسی بھجوا دی گئی،فیصلہ صوبائی حکومتوں کی کیبنٹ کمیٹی سے مشروط ہے۔ تفصیل کے مطابق وفاقی وزارت برائے غذائی تحفظ نے دودھ اور گوشت کی قیمت مقرر کرنے کا اختیار کسانوں کو دینے کی پالیسی تیار کرلی، اہم اشیائے ضروریہ کی قیمت کا تعین نجی شعبہ کو دینے کے متعلق پالیسی صوبہ پنجاب کو بھجوادی گئی ۔پالیسی متن کے مطابق دودھ اورگوشت کی قیمت مقرر کرنے کے لئے کسانوں میں مقابلہ کرانے کا موقع فراہم کیا جائے ،اس سے قیمت کم ہوگی۔ نجی شعبہ کو قیمت تعین کرنے کا اختیار ملنے سے پیداوار میں بھی اضافہ ہوگا ،90 فیصد مویشی پالنے والے غریب ہیں۔قیمتیں مقرر کرنے کا مقصد پورے معاشرے کو سبسڈی فراہم کرنا ہے ۔واضح رہے مرغی اور مچھلی کی قیمت مقرر نہ ہونے کی وجہ سے بکرے اور گائے کے گوشت سے سستی ہیں۔

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں