نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےمیں کوروناکےمزید 3582 کیس رپورٹ،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں کورونامریضوں کی تعداد 10 لاکھ 43 ہزار 277 ہوگئی
  • بریکنگ :- ملک میں کوروناکےایکٹوکیسزکی تعداد 75 ہزار 373 ہے
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں 24 گھنٹےکےدوران کوروناسےمزید 67 اموات
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں کوروناسےجاں بحق افرادکی تعداد 23 ہزار 529 ہوگئی
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےمیں کوروناکے 1355 مریض صحت یاب،این سی اوسی
  • بریکنگ :- کوروناسےصحت یاب افرادکی مجموعی تعداد 9 لاکھ 44 ہزار 375 ہوگئی
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےکےدوران 49 ہزار 798 کوروناٹیسٹ کیےگئے
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں ایک کروڑ 61 لاکھ 58 ہزار 330 کوروناٹیسٹ کیےجاچکے
  • بریکنگ :- کوروناسےمتاثر 3398 مریضوں کی حالت تشویشناک،این سی اوسی
  • بریکنگ :- پنجاب 3 لاکھ 58 ہزار 387،سندھ میں 3 لاکھ 87 ہزار 261 کیسز
  • بریکنگ :- خیبرپختونخواایک لاکھ 45 ہزار 306،بلوچستان میں 30 ہزار 627 کیس رپورٹ
  • بریکنگ :- اسلام آباد 88 ہزار 344،گلگت بلتستان میں 8 ہزار 318 کیسز
  • بریکنگ :- آزادکشمیرمیں کورونامریضوں کی تعداد 25 ہزار 34 ہوگئی،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک میں کورونامثبت کیسزکی شرح 7.19 فیصدرہی،این سی اوسی
Coronavirus Updates

بچوں سے مزدوری، تباہ کن اثرات مرتب ہو رہے :مقررین

بچوں سے مزدوری، تباہ کن اثرات مرتب ہو رہے :مقررین

دنیا اخبار

جو گھرانے بچوں سے مزدوری کرانے پر مجبور ہیں انکے مسائل کو حل کرنا ہوگا

ملتان (خبرنگارخصوصی ) چائلڈ لیبر کے خلاف عالمی دن کے سلسلہ میں آواز دو پروگرام کے تحت ‘‘بچوں سے مزدوری، مستقبل تباہ’’ کے عنوان کے تحت منعقدہ کمیونٹی ڈائیلاگ سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا ہے کہ پاکستان میں بچوں کی مزدوری بہت بڑا مسئلہ ہے ۔ اس سے بچوں، ان کے گھرانوں اور معاشرے پر تباہ کن اثرات مرتب ہورہے ہیں۔ سینئر رکن آواز ڈسٹرکٹ فورم و صدر انجمن تاجران ملتان خالد محمود قریشی نے کہا کہ بچوں کی مزدوری سے غربت میں کمی اور معاشی ترقی کی طویل مدتی کوششوں کو نقصان ہورہا ہے ۔ چائلڈ پروٹیکشن آفیسر سید اعجاز رضا، لیبر انسپکٹر نعیم کھرل ، چیئرپرسن دارلامان شیلٹر ہوم شاہد محمود انصاری، سماجی رہنماء ڈاکٹر فاروق لنگاہ ،ڈسٹرکٹ منیجر آواز دو پروگرام فرخ خان نے کہا کہ بچوں سے مزدوری بدترین اقسام ہے ڈسٹرکٹ فورم کے فوکل پرسن جواد امین قریشی و دیگرعابد سعید، عبدالمطلب فرخ، بشری بخش، آصف رشیداور حیدر زمان نے کہا کہ جو گھرانے بچوں سے مزدوری کرانے پر مجبور ہیں انکے درپیش مسائل کو حل کرنا ہوگا۔ بچوں کی لازمی تعلیم کے ساتھ ساتھ فنی تربیت کا اہتمام کیا جائے ۔

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں