نمونیا میں مبتلا 13بچے رپورٹ، مجموعی تعداد 1523 ہوگئی

نمونیا میں مبتلا 13بچے رپورٹ، مجموعی تعداد 1523 ہوگئی

ملتان(لیڈی رپورٹر)چلڈرن کمپلیکس ملتان میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران نمونیا میں مبتلا 13 مزید بچے رپورٹ ، رواں سال چلڈرن کمپلیکس میں نمونیا میں مبتلا 51 بچے دم توڑ چکے ہیں۔

محکمہ سپیشلائزڈ ہیلتھ کئیر جنوبی پنجاب ڈیٹا تک مرتب کرنے سے قاصر نشتر ہسپتال انتظامیہ کی غیر سنجیدگی بھی عروج پر تفصیل کے مطابق ترجمان چلڈرن کمپلیکس ملتان ڈاکٹر معاذ کے مطابق یکم جنوری سے 23 فروری 2024 کے درمیان نمونیا چیسٹ انفیکشن کے شکار 1ہزار 523 بچے چلڈرن کمپلیکس رپورٹ ہوئے رپورٹ ہونے والے نمونیا میں مبتلا بچوں میں سے 51 بچوں نے چلڈرن کمپلیکس میں دم توڑا جبکہ 1 ہزار 398 بچے صحت یاب ہو کر گھروں کو واپس چلے گئے جبکہ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران چلڈرن کمپلیکس میں 13مزید بچے رپورٹ ہوئے یوں اس وقت نمونیا چیسٹ انفیکشن کا شکار 74 بچے چلڈرن کمپلیکس میں زیر علاج ہیں جبکہ سیکرٹری سپیشلائزڈ ہیلتھ کئیر جنوبی پنجاب رانا افضل ناصر خاں کاغذی کارروائیاں دکھانے میں مصروف ہیں جنہوں نے صرف دو تین دن نمونیا کے حوالے سے ڈیٹا شیئر کیا جس کے بعد سے نمونیا سے متعلق کوئی اپ ڈیٹ فراہم نہیں کی گئی جبکہ نشتر ہسپتال انتظامیہ کی بھی اس حوالے سے غیر سنجیدگی عروج پر ہے جہاں پیڈز میڈیسن کے دو وارڈز میں روزانہ نمونیہ چیسٹ انفیکشن کا شکار بچے رپورٹ ہو رہے ہیں ۔

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں