نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں 24 گھنٹےکےدوران کوروناسےمزید 10 اموات
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں کوروناسےجاں بحق افرادکی تعداد 28 ہزار 777 ہوگئی
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےکےدوران 42 ہزار 944 کوروناٹیسٹ کیےگئے،این سی اوسی
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےمیں کوروناکےمزید 336 کیس رپورٹ،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک میں کورونامثبت کیسزکی شرح 0.78 فیصدرہی،این سی اوسی
Coronavirus Updates

اپوزیشن کو صرف اقتدار کی تڑپ، احتجاج خود نمائی کے سوا کچھ نہیں، بزدار

اپوزیشن کو صرف اقتدار کی تڑپ، احتجاج خود نمائی کے سوا کچھ نہیں، بزدار

دنیا اخبار

مہنگائی کی آڑ میں منفی سیاست کی جا رہی ،ان کو مسائل سے کوئی غرض نہیں،مہنگائی پر قابو پانے کیلئے اقدام کر رہے ہیں ، جیل ملازمین کے سروس سٹرکچر کو بہتر بنا یا جا رہا ، ایک اضافی بنیادی تنخواہ کے برابر پریزن سکیورٹی الاؤنس دیا جائیگا، بیان

لاہور(سیاسی رپورٹر سے ) وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے کہا ہے کہ اپوزیشن کا احتجاج خود نمائی کے سوا کچھ نہیں۔ حکومت کو عام آدمی کے مسائل کا پورا ادراک ہے اور مہنگائی پر قابو پانے کیلئے ہر ممکن اقدام کیا جا رہا ہے ۔ضلع کی سطح پر پرائس کنٹرول کمیٹیوں کو متحرک کر دیا گیا جس سے اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں وقت کے ساتھ استحکام آ رہا ہے ۔پرائس کنٹرول میکانزم پر تسلسل کے ساتھ عملدرآمد جاری رہے گا۔اپنے بیان میں بزدار نے کہا کہ اپوزیشن مہنگائی کی آڑ میں منفی سیاست کر رہی ہے ۔موجودہ حالات میں انتشار کی سیاست کی کوئی گنجائش نہیں۔ اپوزیشن کو عوام کے مسائل سے کوئی غرض نہیں، انہیں صرف اقتدار کی تڑپ ہے ۔اپوزیشن کا موجودہ حالات میں رویہ ملکی مفاد کے منافی ہے ۔اپوزیشن جماعتیں عوام میں اپنی ساکھ کھو چکی ہیں۔ادھر وزیراعلیٰ نے کہا ہے کہ قیدیوں کے لئے تاریخ سازپیکیج فرسودہ جیل نظام میں انقلابی اصلاحات کا پیش خیمہ ثابت ہوگا۔ قیدیوں اورجیل عملے کیلئے 5ارب50کروڑ روپے کے تاریخی پیکیج کی مثال قیام پاکستان سے لے کر آج تک نہیں ملتی۔ 1894کے نظام کو127سال بعدبدل رہے ہیں۔ قیدیوں کے ساتھ جیلوں میں جو سلوک ہوتا ہے وہ ناقابل بیان ہے ۔اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ 127سالہ پرانے جیل قوانین اور قواعدوضوابط کو تبدیل کیا جارہاہے ۔ قیدی انسان ہیں اوران کے بھی بنیادی حقوق ہیں۔ قیدیوں کومعاشرے کا مفید رکن بنانے پر توجہ دی جائے گی۔ پیکیج کے تحت قیدیوں کو میٹرس، کمبل اور تکیہ رکھنے کی اجازت ہوگی۔ موسم سرمامیں گرم پانی کیلئے جیلوں میں گیزرلگائے جا رہے ہیں۔ سیل اور بیرکس میں ائیرکولر، ایگزاسٹ فین، لائٹس اور اضافی پنکھے لگائے جائیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ خواتین قیدیوں کے ساتھ 6سال تک کے بچوں کیلئے تعلیم، تفریحی سہولیات اور ڈے کیئر سینٹر کا اہتمام کیا جائے گا۔ کم عمر قیدیوں کے حقوق کا تحفظ یقینی بنایا جائے گا۔کم عمر قیدیوں کے استحصال کی ہرگز اجازت نہیں دی جائے گی۔محکمہ صحت ہر ماہ جیلوں میں قیدیوں کے چیک اپ کیلئے میڈیکل کیمپ لگائے گا۔ قیدیوں کی سہولت کے لئے لنچ اورڈنر کے اوقات کار میں تبدیلی کردی گئی ہے ۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ پنجاب حکومت نے قیدیوں کے ساتھ جیل ملازمین کو ریلیف دینے کیلئے خصوصی پیکیج دیاہے ۔ جیل عملے کے سروس سٹرکچر کو بہتر بنا یا جا رہا ہے ۔تنخواہوں و الاؤنسز کے ساتھ جیل ملازمین کو ایک اضافی بنیادی تنخواہ کے برابر پریزن سکیورٹی الاؤنس دیا جائے گا اور اس پیکیج پر تقریباً2 ارب 77 کروڑروپے خرچ ہوں گے ۔ انہوں نے کہا کہ جیل وارڈن، ہیڈ وارڈن اور چیف وارڈن کی پوسٹوں کو اپ گریڈ کرنے کی منظوری دے دی ہے اور ان پوسٹوں کی اپ گریڈیشن پر 9 کروڑ 24 لاکھ روپے خرچ ہوں گے ۔ محکمہ جیل خانہ جات کو 21 آپریشنل گاڑیاں دی جا رہی ہیں جس پر 10 کروڑ 64 لاکھ روپے صرف ہوں گے ۔ انہوں نے کہا کہ پولیس شہدا پیکیج کی طرز پر جیل شہدا کے مروجہ پیکیج میں اضافہ کیاہے ۔ پنجاب پریزن سروس کے شہدا کے بچوں کو سرکاری ملازمت دی جائے گی۔ پنجاب پریزن فاؤنڈیشن کے اشتراک سے جیل ملازمین کے بچوں کو سکالرشپ، جہیز فنڈاور میڈیکل الاؤنس دیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ ہر جیل کو 2، 2 جیل وین دی جائیں گی، 72 وین کی فراہمی پر 91 کروڑ 40 لاکھ روپے لاگت آئے گی۔

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں
Advertisement