نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- پیپلزپارٹی بینظیرکی نہیں آصف زرداری اوربلاول کی پارٹی ہے،فوادچودھری
  • بریکنگ :- آپ کےکرتوتوں کی وجہ سےآج پاکستان مشکلات کاشکارہے،فوادچودھری
  • بریکنگ :- ن لیگ ووٹ کوعزت دوکانعرہ لگاتی ہے،فوادچودھری
  • بریکنگ :- ووٹ کو 2،2 ہزارمیں خریدناووٹ کوعزت دیناہے؟فوادچودھری
  • بریکنگ :- ن لیگ اداروں کوبلیک میل کررہی ہے،فوادچودھری
  • بریکنگ :- بعدمیں پتہ چلتاہےیہ ساری ویڈیوزجعلی تھیں،فوادچودھری
  • بریکنگ :- ن لیگ لوگوں کولالچ دےکرالیکشن لڑتی ہے،فوادچودھری
  • بریکنگ :- ن لیگ اورپیپلزپارٹی کوای وی ایم سےگھبراہٹ ہوتی ہے،فوادچودھری
  • بریکنگ :- عمران خان کاپورےپاکستان میں ووٹ ہے،فوادچودھری
  • بریکنگ :- مریم نوازنےکہامیری لندن توکیاپاکستان میں بھی کوئی جائیدادنہیں،فوادچودھری
  • بریکنگ :- بعدمیں پتہ چلامریم نوازکی لندن میں بھی اربوں روپےکی جائیدادہے،فوادچودھری
  • بریکنگ :- یہ سب سیاسی بونےہیں،وزیراطلاعات فوادچودھری
Coronavirus Updates

بلدیاتی انتخابات تسلیم نہیں کرتے ،ملتوی کریں:فضل الرحمن

بلدیاتی انتخابات تسلیم نہیں کرتے ،ملتوی کریں:فضل الرحمن

دنیا اخبار

ووٹرلسٹیں مشکوک، الیکشن کمیشن خود تصدیق شروع کررہا ہے :سربراہ پی ڈی ایم ، بلوچستان میں خود حکمران جماعت اپوزیشن کے پاس آئی یہ حادثہ تھا :پریس کانفرنس

اسلام آباد (اپنے رپورٹرسے ،دنیا نیوز)جمعیت علما اسلام و پاکستان ڈیمو کر یٹک موومنٹ کے سربراہ مولانا فضل الر حمن نے کہاکہ بلدیاتی انتخابات تسلیم نہیں کرتے انہیں ملتوی کردیا جائے ،اپنی رہائشگاہ پر پریس کانفرنس کرتے ہوئے انہوں نے کہا خیبر پختونخوا میں بلدیاتی انتخابات کے حوالے سے الیکشن کمیشن نے شیڈول جاری کردیا ہے پی ڈی ایم سے وابستہ سیاسی جماعتوں سے مشاورت ہوئی ہے ہمارا دو ٹوک اور واضح موقف چلا آرہا ہے کہ 2018 کے نتائج کو ہم تسلیم نہیں کرتے ان نتائج کی بنیاد پر جو حکومتیں قائم کی گئیں ہیں وہ ناجائز اور جعلی ہیں جو حکومت خود دھاندلی کی پیداوار ہے اس کی نگرانی میں کیسے انتخابات قبول کریں ؟ الیکشن کمیشن نے خود یہ کہا ہے کہ ہم ووٹر لسٹوں کی تصدیق کا سلسلہ شروع کررہے ہیں اس کا مطلب یہ ہے کہ ووٹر لسٹیں مشکوک ہیں اس لئے ویری فیکیشن کی جارہی ہے ، تمام پی ڈی ایم جماعتوں کے پاس بظاہر بلدیاتی انتخابات کے بائیکاٹ کا راستہ بچتا نظر نہیں آرہا ،ڈی جی آئی ایس آئی کے نوٹیفکیشن میں تاخیر اور اب اجرا سب فیس سیونگ ہے ،جو حکومت لوگوں کو امن نہ دے سکے اور معیشت بھی تباہ کردے تو اسے حکومت کا کوئی حق نہیں، کالعدم تنظیم کے ساتھ معاملات کوقانون کے دائرے میں شائستگی کے ساتھ حل کیا جائے ۔

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں
Advertisement