صحت کے شعبہ میں اصلاحات لائی جائیں :نگران وزیراعظم

 صحت کے شعبہ میں اصلاحات لائی جائیں :نگران وزیراعظم

اسلام آباد (خصوصی نیوز رپورٹر ،اے پی پی) نگران وزیراعظم انوار الحق کاکڑ نے ہدایت کی ہے کہ طبی تعلیم کو عصری تقاضوں سے ہم آہنگ کیا جائے ، افرادی قوت کی عالمی مارکیٹ میں ماہرین کی مانگ پوری کرنے کے لئے صحت کے شعبہ میں اصلاحات لائی جائیں۔

 وزیراعظم آفس کے میڈیا ونگ سے جاری بیان کے مطابق ان خیالات کا اظہار انہوں نے ملک میں طبی تعلیم اور مریضوں کی دیکھ بھال میں اصلاحات کے لئے تشکیل شدہ ٹاسک فورس کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں وزیراعظم کو ملک میں صحت کے شعبے کو بین الاقوامی معیار پر لانے کے لئے بنائی گئی حکمت عملی پر بریفنگ دی گئی۔ وزیراعظم نے اجلاس میں صحت کے شعبے کی موجودہ صورتحال اور اس میں اصلاحات کی ضرورت پر زور دیا ۔ وزیراعظم نے ہدایت کی کہ افرادی قوت کی عالمی مارکیٹ میں صحت کے شعبے کے ماہرین کی مانگ پوری کرنے کے لئے ملک میں صحت کے شعبہ میں اصلاحات لائی جائیں۔ انہوں نے کہا کہ نرسنگ ایک انتہائی اہم شعبہ ہے اور اس کی ترقی کیلئے مزید توجہ کی ضرورت ہے ۔اجلاس میں وزارت صحت، کالج آف فزیشنز اینڈ سرجنز آف پاکستان، پاکستان میڈیکل اینڈ ڈینٹل کونسل، ہائیر ایجوکیشن کمیشن اور ملک کی میڈیکل یونیورسٹیز کے اشتراک سے شعبہ صحت میں کئے گئے اقدامات پر بریفنگ دی گئی ۔

اجلاس میں بتایا گیا کہ شعبہ صحت میں اصلاحات کے لئے تین مراحل پر مشتمل حکمت عملی بنائی گئی ہے جس کا مقصد پاکستانی شعبہ صحت میں بین الاقوامی معیار کے مطابق قواعد و ضوابط کا نفاذ یقینی بنانا ہے ۔اجلاس میں شعبہ صحت میں گریجویٹ اور پوسٹ گریجویٹ سطح پر اصلاحاتی حکمت عملی پر بریفنگ دی گئی۔وزیراعظم نے معاون خصوصی ڈاکٹر عامر بلال کی قیادت میں شعبہ صحت میں اصلاحات کے لئے ٹاسک فورس کے اقدامات کو سراہا ۔ دریں اثنا نگران وزیراعظم انوار الحق کاکڑ نے پاکستان کی ترقی میں بوہرہ برادری کے کردار کو سراہتے ہوئے کہا کہ پاکستان کی حکومت اور عوام بوہرہ برادری کی خدمات کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں۔

وزیراعظم نے ان خیالات کا اظہار داؤدی بوہرہ برادری کے روحانی پیشوا ڈاکٹر سیدنا مفصل سیف الدین کی قیادت میں بوہرہ برادری کے آٹھ رکنی وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ملاقات میں وزیرِ اعظم کے نمائندہ خصوصی برائے بین المذاہب ہم آہنگی مولانا طاہر اشرفی بھی شریک تھے ۔ وزیرِ اعظم نے ڈاکٹر سیدنا مفصل سیف الدین کے دورہ پاکستان کا خیر مقدم کرتے ہوئے بوہرہ برادری کے پاکستان کی ترقی میں کردار کو سراہا ۔ وزیرِ اعظم نے کہا کہ پاکستانی حکومت اور عوام بوہرہ برادری کی پاکستان کیلئے خدمات کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں ۔وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان میں ہر مذہب اور رنگ و نسل کے لوگ موجود ہیں جن کو برابر حقوق حاصل ہیں ۔

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں