آئی ایم ایف کو خط کپڑے چوک میں دھونے کے مترادف، سراج الحق

آئی ایم ایف کو خط کپڑے چوک میں دھونے کے مترادف، سراج الحق

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ آئی ایم ایف کو خط لکھنا گھر کے کپڑے چوک میں دھونے کے مترادف ہے اور بیرونی ادارے کو ملکی معاملات میں دخل اندازی کے لیے خط قومی مفاد میں نہیں۔

اپنے ایک بیان میں سراج الحق نے کہا کہ الیکشن کمیشن کے سربراہ قوم سے معافی مانگ کر استعفیٰ دیں، موجودہ الیکشن سے پاکستان کی بدنامی ہوئی اور امریکا نے بھی پاکستان میں الیکشن کا آڈٹ کروانے کا کہہ دیا ہے ۔ان کا کہنا تھا کہ الیکشن جمہوریت بچاؤ کا اجلاس اسلام آباد میں ہوا اور ہم الیکشن اصلاحات پر قومی ڈائیلاگ شروع کررہے ہیں۔ آئی ایم ایف کے قرضوں سے پاکستان کی معیشت مزید تباہ ہوجائے گی، آئی ایم ایف سے آئندہ نسلیں مقروض ہیں اور روز بجلی گیس پٹرول کی قیمتوں میں اضافہ کیا جا رہا ہے ۔امیر جماعت اسلامی نے مزید کہا کہ آئی ایم ایف و ورلڈ بینک کے بدلے غیر سودی نظام معیشت کا پورا سسٹم ہے اور ہمیں اسی کو اپنانے کی طرف جانا چاہیے ، مسئلہ یہ ہے کہ ہمارے حکمران خود کشکول لے کر آئی ایم ایف کے سامنے جھک جاتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ پیپلزپارٹی والوں نے بھی امریکی اداروں اور آئی ایم ایف کو خطوط لکھے۔

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں