سعودی بچے نے اونٹ کے بالوں سے مملکت کا نقشہ بنا دیا

سعودی بچے نے اونٹ کے بالوں سے مملکت کا نقشہ بنا دیا

ریاض(نیٹ نیوز)سعودی عرب کے یوم تاسیس کے موقع پر 14 سالہ سعودی بچے یزید الشھرانی نے اونٹ کے بالوں سے مملکت کا نقشہ تیار کر کے سب کو حیران کر دیا ہے۔۔۔

 جس کو مہنگا ترین اور صدی کا سب سے بہترین فن پارہ کہا جا رہا ہے۔ جس کی ویڈیو اور تصاویر سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئی ہیں۔اپنی اس لاجواب تخلیق کو ننھے فنکار یزید الشھرانی نے ‘‘صدی کی پینٹنگ’’ کا نام بھی دیا ہے ۔فن پارے کے تخلیق کار یزید الشھرانی کے والد علی الشھرانی کا کہنا ہے کہ یہ فن پارہ بنانے کا آئیڈیا ان کے بیٹے کا تھا جس کے لیے انہوں نے مدد فراہم کی۔ان کا کہنا تھا کہ اس فن پارے کو تیار کرنے میں اونٹ کے بال اور خالص اون کا استعمال کیا گیا ہے جس کی تیاری میں 10 ماہ کا وقت لگا۔ یہ فن پارہ دنیا کا مہنگا ترین فن پارہ کہا جا سکتا ہے کیونکہ یہ سعودی عرب کی تہذیبی اور ثقافتی تاریخ کی عکاسی کرنے والی دستاویز کی حیثیت بھی رکھتا ہے۔

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں