3سے 10لاکھ بل، کاشتکاروں کا ہائیکورٹ سے رجوع

3سے 10لاکھ بل، کاشتکاروں کا ہائیکورٹ سے رجوع

ملتان (کورٹ رپورٹر) ضلع ڈیرہ غازی خان بالخصوص وہوا اور تونسہ شریف کے سینکڑوں کاشت کاروں نے میپکو کی جانب سے۔۔

 تین سے دس لاکھ روپے تک کے بجلی کے بل بھجوانے کے خلاف عدالت عالیہ سے رجوع کرلیا۔کسان اتحاد کے صدر عبدالغفور کلاچی،غلام رسول،محمد رمضان،مظہر اقبال عنایت اللہ کلاچی اور اللہ وسایا وغیرہ نے میڈیا کو بتایا کہ کسانوں نے مختلف گروپوں میں رٹ درخواستیں دائرکرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔وہوا کے 48 کاشت کاروں نے سردار وسیم خان جسکانی کے توسط سے رٹ دائر کی ہے انہوں نے بتایا کہ میپکو نے 2015 میں مؤخر کئے گئے ٹیوب ویلوں کے متنازعہ بل موجودہ بلوں میں شامل کرکے بھجوادیئے ہیں اور یک مشت ادائیگی نہ کرنے کی صورت میں کنکشن منقطع کرنے اور ٹرانسفارمرز اتارنے کی بھی دھمکی دی گئی ہے ۔انہوں نے بتایا کہ میپکو نے نو سالہ ایوریج اور ایڈیشنل سرچارج اور دیگر جرمانے بھی ان بلوں میں شامل کر دیئے ہیں۔دوسری جانب کاشتکار ناجائز منافع خوروں اور ذخیرہ اندوزوں کی وجہ سے پریشان ہیں جو انہیں کھاد مہنگے داموں فروخت کررہے ہیں۔لیکن گندم کی فصل کو بچانے کیلئے وہ مسلسل جدو جہد کررہے ہیں اور حالت جنگ میں ہیں۔ پٹیشنرز کے وکیل سردار محمد وسیم خان جسکانی نے ۔ بتایا کہ ان کی رٹ درخواست کی سماعت جمعہ کے روز متوقع ہے ۔اور انہیں عدالت عالیہ سے ریلیف ملنے کی پوری امید ہے ۔

 

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں