نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- کوئٹہ:بلوچستان عوامی پارٹی کےاہم رہنماؤں کااجلاس
  • بریکنگ :- اجلاس میں عبدالقدوس بزنجواورظہوربلیدی کی شرکت
  • بریکنگ :- میرجان محمدجمالی اورسردارصالح بھوتانی کی بھی شرکت
  • بریکنگ :- اتحادیوں کےتعاون سےبننےوالی نئی حکومت سےمتعلق تبادلہ خیال
  • بریکنگ :- پارٹی کی جانب سےنئےقائدایوان کیلئےعبدالقدوس بزنجوکےنام پراتفاق
  • بریکنگ :- اسپیکرکےعہدےکیلئےمیرجان محمدجمالی مشترکہ امیدوارہوں گے
  • بریکنگ :- کابینہ کیلئےناموں کاحتمی فیصلہ اتحادیوں کی رائےسےکیاجائےگا
Coronavirus Updates

وزیراعلیٰ بلوچستان کیخلاف تحریک عدم اعتماد ، کئی حکومتی ارکان ابھی تک ناراض

پاکستان

کوئٹہ: (دنیا نیوز) وزیراعلی بلوچستان جام کمال کے خلاف تحریک عدم اعتماد کے معاملے پر کئی حکومتی اراکین کی ناراضگی بدستور قائم ہے، وزیراعلی کو مزید وقت دینے کی تجویز بھی زیرغور ہے مگر اپوزیشن تحریک عدم اعتماد پر ڈٹی ہوئی ہے۔

وزیراعلی بلوچستان جام کمال کے خلاف تحریک عدم اعتماد کےمعاملے پر حکومتی ناراض اراکین کی ناراضگی بدستور قائم ہے، وزیراعلی کو مزید وقت دینے کی تجویز بھی زیرغور ہے مگر اپوزیشن تحریک عدم اعتماد پر ڈٹی ہوئی ہے۔ بلوچستان میں جاری سیاسی بحران دن بدن گھمبیر ہو رہا ہے، وزیراعلی بلوچستان کے خلاف اسمبلی سیکرٹریٹ میں جمع کرائی جانے والی اپوزیشن کی عدم اعتماد کی درخواست کے بعد پارلیمانی جماعتوں کے درمیان جوڑ توڑ کا سلسلہ جاری ہے۔

وزیراعلی سے ناراض اراکین کو منانے کے لئے چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی بھی مذاکرات میں مصروف ہیں تاہم اب تک ساتھیوں کو منانے میں ناکام ہی ہیں، ذرائع کے مطابق رات گئے ہونے والےاجلاس میں جو فارمولا پیش کیا گیا ہے اس کے مطابق وزیراعلی جام کمال کو مزید 15 دن کا وقت دیا جائے اور بی اے پی کے ارکان اپوزیشن کی جانب سے لائی جانے والی عدم اعتماد کی تحریک کی حمایت نہ کریں۔ 15 دنوں میں وزیراعلی ازخود مستعفی ہو جائیں گے، اس تجویز کو بی اے پی کے ناراض اراکین اپوزیشن کے سامنے رکھیں گے اور انہیں بھی راضی کرنے کی کوشش کریں گے۔

دوسری جانب بی اے پی کی جانب سے اپوزیشن سے بھی رات گئے ملاقات کی گئی تاکہ وہ تحریک عدم اعتماد واپس لے لیں تاہم اب تک انھیں بھی منانے میں ناکامی کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ ذرائع کے مطابق 21 ستمبر کو بلایا گیا اسمبلی اجلاس بھی تکنیکی وجوہات کی بناء پر نہ ہونے کی بھی باز گشت سنائی دے رہی ہے۔

 

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں