اے این پی نے بھی انتخابی دھاندلی کی جوڈیشل انکوائری کا مطالبہ کر دیا

پشاور: (دنیا نیوز) عوامی نیشنل پارٹی (اے این پی) نے بھی انتخابی دھاندلی کی جوڈیشل انکوائری کا مطالبہ کر دیا۔

اے این پی رہنما ایمل ولی خان نے کہا ہے کہ چیف جسٹس اپنا اختیاراستعمال کرتے ہوئے جوڈیشل کمیشن بنائیں، ان افراد کو پیش کیا جائے جن سے پیسے مانگے گئے اور لئے گئے تھے۔

انہوں نے کہا کہ میں 8 فروری کے الیکشن میں ناکامی پر مایوس نہیں، ہم 100 سال سے اپنے حقوق کی جدوجہد کر رہے ہیں، یہاں ایک تھپڑ پر لوگ وفاداریاں بدلتے ہیں، ہم آج بھی دہشت گرد کو دہشت گرد کہتے ہیں، پاکستان میں جنگ وسائل اور اختیار کی ہے۔

ایمل ولی خان کا کہنا تھا کہ ہمیں گونگے بہرے، لنگڑے نہیں چاہئیں، ہمیں وہ نہیں چاہئیں جو نمائندگی کے بجائےغلامی کریں، قوم کا حق پارلیمان کے راستے سے جیتنا چاہتے ہیں، ذاتی لالچ کیلئے پارلیمان میں جانا نہیں چاہتے۔

انہوں نے کہا کہ مصیبتیں اور مشکلات قوم کی خاطر برداشت کرتا ہوں، اگر کوئی گرفتار کرنا چاہتا ہے تو ٹیلی فون کرے ہم خود حاضر ہوں گے، لیکن رات کو گھروں پر چھاپے مت ماریں، ہم گرفتاری سے ڈرنے یا بھاگنے والے نہیں۔

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں