سموگ تدارک کیس: خلاف ورزی کرنیوالے ریسٹورنٹس کو سیل و جرمانے کرنے کا حکم

لاہور: (دنیا نیوز) لاہور ہائیکورٹ نے سموگ تدارک اقدامات کی خلاف ورزی کرنے والے ریسٹورنٹس کو سیل اور جرمانے کرنے کا حکم دے دیا۔

لاہور ہائیکورٹ میں سموگ کے تدارک کے لیے دائر درخواستوں پر سماعت ہوئی، جسٹس شاہد کریم نے درخواستوں پر سماعت کی۔

عدالت نے خلاف ورزی کرنے والے جوہر ٹاؤن کے کیفے کو فوری سیل کرنے کا حکم دے دیا اور سموگ تدارک اقدامات کی خلاف وزری کرنے والے ریسٹورنٹس کو 50، 50 ہزار روپے جرمانہ کرنے کا بھی حکم دیا ہے۔

دوران سماعت ایل ڈی اے کے وکیل نے کہا کہ لاہور کے انڈر پاسز کی تزئین و آرائش کی تعمیر 25 دسمبر تک مکمل ہو گی جس پر عدالت نے کہا کہ اس کو جلدی مکمل کریں، 25 دسمبر بہت دور ہے، 9 انڈر پاسز کی تعمیر کے باعث ٹریفک جام رہتی ہے۔

جسٹس شاہد کریم نے ریمارکس دیئے کہ پیر تک آپ مشاورت کر کے عدالت کو بتائیں کب تک انڈر پاسز کی تعمیر مکمل ہو سکتی ہے، اگر میں دن میں بھی انڈر پاسز کی تزئین و آرائش کرنے کی اجازت دیتا ہوں تو پھر کتنے دن لگیں گے، اس پر مشاورت کریں اور انڈر پاسز کی تزئین و آرائش جلد مکمل کرنے کی حتمی تاریخ دیں۔

عدالت نے استفسار کیا کہ کیا سی بی ڈی نے کوئی ایک گرین پروجیکٹ شروع کیا ہے؟ یہ بلند وبالا عمارتیں کھڑی کر رہے ہیں مگر گرین پروجیکٹ کوئی شروع نہیں کیا۔

جوڈیشل واٹر کمیشن نے موقف اپنایا کہ سی بی ڈی سے جب پہلی میٹنگ ہوئی تھی تو انہوں نے کہا تھا گرین پروجیکٹ شروع کریں گے۔

بعدازاں لاہور ہائی کورٹ نے سی بی ڈی سے آئندہ سماعت پر گرین پروجیکٹ سے متعلق رپورٹ طلب کرتے ہوئے درخواستوں پر مزید سماعت پیر تک کے لیے ملتوی کر دی۔ 

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں