لاہور ہائیکورٹ: پسند کی شادی کرنیوالی لڑکی کے بیان پر والد کی حالت غیر ہوگئی

لاہور: (دنیا نیوز) پسند کی شادی کرنے والی خاتون نے لاہور ہائی کورٹ میں شوہر کے ساتھ جانے کا بیان دے دیا جسے سن کر والد کی حالت بگڑ گئی۔

لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس ملک شہزاد نے ولید احمد نامی شہری کی درخواست پر سماعت کی۔

درخواست گزار نے مؤقف اپنایا کہ اوکاڑہ میں بیٹی کو بااثر افراد نے اغوا کر لیا ہے لہٰذا عدالت بیٹی کو بازیاب کروا کے حوالے کرنے کا حکم دے۔

پسند کی شادی کرنے والی خاتون نے عدالت میں بیان دیا کہ میری شادی ہو چکی ہے، اس لئے شوہر کے ساتھ جانا چاہتی ہوں۔

دوران سماعت بیٹی کا بیان سن کر والد کو غشی کے دورے پڑ گئے جس کے باعث ریسکیو کو عدالت بلا کر ولید احمد کو ہسپتال منتقل کر دیا گیا۔

عدالت نے خاتون کے بیان پر اسے شوہر کے ہمراہ جانے کی اجازت دے دی۔

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں