امریکی خاتون نے غلطی سے لاکھوں روپے ٹپ میں دے دیئے

نیویارک: (ویب ڈیسک) امریکی خاتون نے ریسٹورنٹ والوں کو ٹپ کی مد میں غلطی سے 20 لاکھ روپے دے دیئے۔

ویرا کونر نامی خاتون نے ’سب وے‘ سے سینڈوچ آرڈر کیا تھا جب وہ اس کی ادائیگی کرنے لگیں تو حادثاتی طور پر 7 ہزار ڈالرز ( پاکستانی 19 لاکھ 67 ہزار روپے سے زائد) کی ٹپ دے ڈالی۔

انہوں نے میڈیا کو بتایا کہ 23 اکتوبر کو مقامی سب وے کو سینڈ وچ آرڈر دیا تھا جس کی قیمت 7.54 ڈالر تھی لیکن انہوں نے بے خیالی میں 7,105.44 ڈالرز کی ٹپ دے دی۔

ویرا کونر نے یہ رقم بینک آف امریکا کے کریڈٹ کارڈ سے ادا کی، بل ادا کرتے ہوئے غلطی سے اپنے فون کے آخری چھ نمبر ڈال دیئے کیونکہ اُنہیں لگا کہ وہ سب وے کے ’لائلٹی‘ پوائنٹس خرید رہی ہیں۔

خاتون کا کہنا ہے کہ اس دوران سکرین ضرور تبدیل ہوئی ہوگی اور اس نمبر کو ٹِپ میں تبدیل کر دیا گیا ہوگا، انہوں نے بینک آف امریکا پر پیسے لینے کا الزام بھی لگایا لیکن بینک نے اسے مسترد کر دیا۔

امریکی خاتون جب سب وے کی برانچ گئیں تو منیجر نے بتایا کہ یہ مسئلہ بینک ہی حل کر سکتا ہے، انہوں نے کہا کہ مجھے تو بینک پر غصہ ہے کیونکہ اُنہیں ایسا کیوں نہیں لگا کہ سب وے پر اتنی بڑی رقم دینا مشکوک ہے۔

بینک کے ترجمان کا کہنا ہے کہ ہم نے سب وے سے درخواست کی ہے کہ وہ خاتون کو پیسے واپس دے دیں اور وہ رقم واپس کرنے پر رضا مند ہوگئے ہیں۔

 

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں