معروف گلوکار ڈاکٹر امجد پرویز انتقال کر گئے

لاہور: (ویب ڈیسک) پاکستان کے معروف گلوکار ڈاکٹر امجد پرویز ایک ماہ تک علیل رہنے کے بعد انتقال کر گئے۔

تفصیلات کے مطابق ڈاکٹر امجد پرویز ایک ماہ سے علیل ہونے کی وجہ سے زیر علاج تھے، گزشتہ روز گردے فیل ہونے کے باعث دم توڑ گئے، ان کی نمازجنازہ آج بعد نماز ظہر جامعہ مسجد شادمان چوک لاہور میں ادا کی جائے گی۔

واضح رہے کہ ڈاکٹر امجد پرویز پیشے کے اعتبار سے انجینئر، کئی اردو اور انگریزی کتابوں کے مصنف تھے، انہوں نے 1954ء میں ریڈیو پاکستان کے لاہور مرکز سے پروگرام ” ہونہار“ میں بطور چائلڈ آرٹسٹ پہلی مرتبہ شرکت کی اور زندگی بھر ریڈیو کے ساتھ منسلک رہے۔

ڈاکٹر امجد پرویز آج کل ریڈیو پاکستان لاہور کے پروگرام فن اور فنکار میں ملکہ ترنم نورجہاں کے فن اور شخصیت پر اپنا تجزیہ پیش کر رہے تھے، انہوں نے استاد نزاکت علی خان سے باقاعدہ کلاسیکل موسیقی کی تربیت حاصل کی، 1970 کی دہائی میں ریڈیو پاکستان لاہور مرکز سے ڈاکٹر امجد پرویز کی گائی ہوئی 100ء سے زائد غزلیں اور گیت نشر ہوئے۔

ڈاکٹرامجد پرویز نے میلوڈی سنگرز کے نام سے دو کتابیں لکھیں جبکہ rainbow of reflections ان کی آخری انگریزی کتاب تھی، ڈاکٹرامجد پرویز کو 1977ء میں بہترین ٹیکنیکل پیپر لکھنے پر صدر مملکت کی جانب سے گولڈ میڈل، 2009ء میں ڈاکٹر اے کیو خان لائف ٹائم اچیومنٹ ایوار ڈ اور 2000ء میں صدارتی تمغہ برائے حسن کارکردگی پرائیڈ آف پرفارمنس سے نوازا گیا۔
 

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں