نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- بھارت نےمقبوضہ علاقہ میں آبادی کاتناسب بدلنےکی کوشش کی،صدرمملکت
  • بریکنگ :- بھارتی اقدام کی عالمی میڈیا،انسانی حقوق کی تنظیموں نےمذمت کی،عارف علوی
  • بریکنگ :- بھارتی اقدام چوتھےجنیواکنونشن،عالمی قوانین کی خلاف ورزی ہے،صدرمملکت
  • بریکنگ :- بھارت کامقصدکشمیریوں کوحق خودارادیت سےمحروم کرناہے،عارف علوی
  • بریکنگ :- بی جےپی حکومت نےکشمیرمیں خوف وہراس کاماحول پیداکیا،صدرمملکت
  • بریکنگ :- مقبوضہ فورسزکےہاتھوں کشمیریوں کےحقوق کی خلاف ورزیاں کی گئیں،صدرمملکت
  • بریکنگ :- بھارت نے 5 اگست 2019 کومقبوضہ کشمیرمیں یکطرفہ کارروائی کی،صدرمملکت
Coronavirus Updates

اپوزیشن کے رویے سے کوئی خاتون رکن پارلیمنٹ محفوظ نہیں: ملیکہ بخاری

پاکستان

اسلام آباد: (دنیا نیوز) ملیکہ بخاری نے کہا ہے کہ نون لیگ قبضہ گروپس اور غنڈوں کی جماعت بن چکی، اپوزیشن کے رویے سے کوئی خاتون رکن پارلیمنٹ محفوظ نہیں، ایسے لوگوں کے پارلیمنٹ میں آنے پر پابندی لگائی جائے۔

پاکستان تحریک انصاف کی خواتین ایم این اے ملیکہ بخاری نے زرتاج گل اور دیگر کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کل جو ہوا وہ پارلیمان کیلئے سیاہ دن تھا، کل میری ذاتی طور پر تضحیک و تذلیل ہوئی، پارلیمان میں خاتون ممبران کے بارے میں نازیبا الفاظ استعمال کیے جاتے ہیں اور کتابیں پھینکی جاتی ہیں، آپ اس پارٹی سے تعلق رکھتے ہیں جس نے ماڈل ٹاؤن میں حاملہ خواتین پر گولیاں چلائیں۔

ملیکہ بخاری کا کہنا تھا کہ ہم جانتے ہیں شہید بی بی بینظیر بھٹو ایوان میں آتی تھیں تو ن لیگ کن القابات سے نوازتی تھی، ن لیگ نے ماڈل ٹاؤن میں خواتین کی تضحیک کی، قوم جانتی ہے کہ ن لیگ کا خواتین سے رویہ انتہائی غیر اخلاقی ہے، خواتین سے غیر اخلاقی رویہ اختیار کرنا ن لیگ کی تاریخ ہے، پارلیمان کو چلانے کے قواعد و ضوابط ہیں۔

پی ٹی آئی رہنما نے کہا کہ صرف آپ جمہوریت نہیں ہم بھی جمہوریت کا حصہ ہیں، یہ تربیت ہے مریم نواز کی جو خود ایک خاتون ہیں، ہم دلائل سے پارلیمان میں بات کریں گے اور آپ کو بے نقاب کریں گے، خواتین پارلیمان میں دلائل کےساتھ اپناموقف پیش کرتی ہیں۔

زرتاج گل کا کہنا تھا کہ اپوزیشن کے رویے سے کوئی خاتون رکن پارلیمنٹ محفوظ نہیں، پارلیمنٹ میں قانون سازی کے حوالے سے خواتین کا اہم کردار ہے، ن لیگ قبضہ گروپس اور غنڈوں کی سرپرستی کرتی ہے، ن لیگ نے سیاسی جماعت ہونے کا لبادہ اوڑھ رکھا ہے، رات 3 بجے تنظیم سازی کرنیوالے کو ترجمان بنا دیا گیا، ایسے لوگوں پر پارلیمنٹ ہاؤس میں آنے پر پابندی لگائی جائے، بجٹ میں ہر طبقے کے لوگوں کی فلاح اپوزیشن سے برداشت نہیں ہوئی۔
 

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں