نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- پشاور:17 اضلاع میں بلدیاتی انتخابات،37 ہزار 752 امیدواروں میں مقابلہ ہوگا
  • بریکنگ :- پشاور: 2 ہزار 544 امیدواروں نے کاغذات واپس لیے،ترجمان
  • بریکنگ :- پشاور:اپیلوں پر فیصلہ 19 نومبر تک کیا جائےگا،ترجمان
  • بریکنگ :- پشاور:تحصیل چیئرمین ،میئرکیلئے 689 امیدواروں میں مقابلہ ہوگا،ترجمان
  • بریکنگ :- ویلج ونیبرہڈ کونسل کیلئے 19ہزار 282 امیدوارمیدان میں ہیں،ترجمان
  • بریکنگ :- پشاور:خواتین کی نشستوں پر 3 ہزار 905 امیدواروں میں مقابلہ ہوگا،ترجمان
  • بریکنگ :- پشاور:مزدور کسان نشستوں پر7 ہزار 513 امیدوارمدمقابل ہوں گے،ترجمان
Coronavirus Updates

پنجاب یونیورسٹی: سموگ سمیت فضائی آلودگی جانچنے کا سستا اور معیاری سینسر تیار

ٹیکنالوجی

لاہور: (دنیا نیوز) پنجاب یونیورسٹی کے ماہرین پر مشتمل تحقیقاتی ٹیم نے سموگ سمیت فضائی آلودگی جانچنے کا سستا اور معیاری سینسر بنا لیا۔ سربراہ تحقیقاتی ٹیم ڈاکٹر ذوالفقار کہتے ہیں ان آلات سے جمع ہونے والا ڈیٹا امریکی سیٹلائٹ سے بھی معتبر ہے۔

فضائی آلودگی کے زمینی حقائق جانچنے کیلئے پنجاب یونیورسٹی کا اہم اقدام، لاہور میں پہلی بار 10 سینسرز نصب کردئیے۔ اس سے پہلے فضائی آلودگی جانچنے کا واحد ذریعہ صرف سیٹلائٹ تھا۔

سربراہ تحقیقاتی ٹیم ڈاکٹر ذوالفقار علی کے مطابق برٹش کونسل کی مالی مدد سے تیار کیے گئے ان آلات سے آلودگی کا صیح انداز ہوسکے گا۔ سموگ کو سمجھنے میں یہ سینسرز زمینی حقائق کے ساتھ ڈیٹا بھجیں گے۔ عام آدمی بھی صورتحال کا جائزہ لے سکتا ہے۔

ڈاکٹر ذوالفقار علی نے مزید بتایا کہ سموگ سینسرز کی مالیت تقریباً 7 کروڑ روپے ہے لیکن پنجاب یونیورسٹی کی جانب سے تیار کیے جانے والے سینسر کی لاگت ایک لاکھ روپے اور لائف پیریڈ 15 سال ہے۔

جامعہ پنجاب کی ریسرچ ٹیم نے کرین فیلڈ یونیورسٹی برطانیہ کے تعاون سے زمینی حقائق پر مبنی سینسرز بنائے ہیں جو امریکہ میں اسمبل ہوئے۔
 

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں