عورت آگے کیسے بڑھے!

تحریر : سارہ خان


ایسے موقع بہت کم ہوتے ہیں،جب ہمیں اپنے جذبات اور احساسات کی بات کرنے کی آذادی ملے،جب ہم کھل کر یہ اظہار کرسکیں کہ ہم کیا سوچتے ہیں،کیا چاہتے ہیں اور آگے بڑھنے میں کن مشکلات اور مسائل کا شکار ہیں،

بہت سی خواتین صرف اس لیے آگے بڑھنے اور ترقی کے امکان سے دور ہوجاتی ہیں کہ ان میں حوصلہ نہیں ہوتا لیکن کیا زندگی کا مقصد صرف انفرادی ترقی اور کامیابی حاصل کرنا ہے؟بامقصد زندگی کے موضوع پر تعلیم وتربیت فراہم کرنے والے ماہرین کی رائے کا مطالعہ کیا جائے تو معلوم ہوتا ہے کہ زندگی کا مقصد صرف دولت اور رتبہ حاصل کرنا نہیں کیونکہ اگر ایسا ہوتا تو دنیا کے امیر ترین افراد اپنی دولت کا فلاحی کام کیلئے مخصوص نہ کرتے۔ آج ہم سب دولت، شہرت کی تلاش میں دن رات مصروف عمل ہیں تاکہ زندگی کو پر تعیش بناسکیںتوکیا ہمارا مقصد غلط ہے۔

خواتین اس پریشانی کا زیادہ شکار ہوتی ہیں کہ آگے بڑھنے کے طریقے کیاہیں لیکن یہ سمجھنا ضروری ہے کہ زندگی میں ترقی اور کامیابی صرف دولت اور بڑے عہدے تک محدود نہیں۔خوشی اور مطمئن رہنے کیلئے ترقی کے بجائے دل کا سکون ضروری ہے جو اپنے دل کی سچی لگن پہچان لینے سے حاصل ہوتا ہے۔زندگی سب سے دلچسپ تب ہوتی ہے،جب ہم منصوبے کے ساتھ نہیں بلکہ دلچسپ حالات واقعات کے ساتھ،اس کے ہر لمحے سے لطف اندوز ہوتے ہیں۔زندگی ایک ایڈونچر ہے،ہم عمر بھر اسے آرام دہ بنانے کی کوشش کرتے ہیں جبکہ اس کی اصل تازگی پل پل بدلتے لمحات میں ہے۔ ایک بار ہر فکر ترک کرکے دیکھئے،کبھی کبھی بے پروائی بھی دلکش لگتی ہے،ہر لمحے مشکل سے لڑنے کیلئے تیار رہنا،جیسے کسی ڈیوٹی پر ہوں،آپ کی زندگی سے خوشی چھین لیتی ہے۔اپنے اردگرد موجود چیزوں کے بجائے کچھ لمحے صرف خود پر توجہ دیجئے کہ آپ کی خوشی کیا ہے؟اگر آپ ہمت کریں تو سب کچھ ہوسکتا ہے،آپ کیلئے کوئی رہنما بن جائیں، ہر مشکل،ہر پریشانی آسان ہوجائے گی۔

دنیا کے امیر ترین لوگ اپنی دولت فلاحی کاموں کیلئے محصوص کیوں کر دیتے ہیں؟ دراصل وہ جان چکے ہوتے ہیں کہ دولت کمانا آسان ہے،مگر مشکل میں مبتلا انسانی زندگی میں تبدیلی لانا، دنیا سے بیماری اور پریشانی ختم کرنا مشکل ہے،اس لئے ان کا مقصد بھی انفرادی نہیں بلکہ اجتماعی ہوتا ہے۔

ہم اکثر بہترین خیالات پر عمل اس لیے نہیں کرتے کہ اس کے ساتھ آنے والی مشکلات سے خوفزدہ ہوتے ہیں،کام شروع کرنے سے پہلے ٹال مٹول اور گھبراہٹ کو فطری سمجھ کر آگے بڑھ جائیے،یہ دونوں چیزیں ہمت توڑنے اور مقصد کمزور کرنے کا سبب بن سکتی ہیں جو فیصلہ کر لیا ہے اس میں کامیابی حاصل کرنے کیلئے عمل سب سے ضروری مرحلہ ہے۔کام سے لطف اندوز ہونا ضروری ہے۔

آپ کی زندگی کا مقصد خوش رہنا ہو،مان لیں ہرلمحہ،قدرت کا تحفہ ہے،زندگی کی خوبصورتی بڑی کامیابی کے انتظار میں نہیں،ہر لمحے میں خوشی ڈھونڈنے لینے میں ہے۔

 

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں

T-20 کرکٹ کا سنسنی خیز فارمیٹ

آئی سی سی ٹی 20 ورلڈکپ 2024ء کے آغاز میں 6 روز باقی رہ گئے،انٹرنیشنل کرکٹ کونسل یکم جون2024ء سے کیریبین اور ریاست ہائے متحدہ امریکہ میں مردوں کے ٹی 20 ورلڈ کپ کے نویں ایڈیشن کی میزبانی کر رہی ہے۔ٹی 20، کرکٹ کا سب سے دلچسپ اور سنسنی خیز فارمیٹ ہے، قارئین کیلئے ٹی 20ورلڈکپ کی مختصر تاریخ پیش خدمت ہے۔

بھیڑ اور بھیڑیا

بھیڑیا اپنے گھر میں بیٹھا آرام کر رہا تھا جب اسے باہر سے اونچی ،اونچی آوازیں آئیں۔پہلے تو وہ آنکھیں موندے لیٹا رہا لیکن جب شور مسلسل بڑھنے لگا تو اس نے سوچا باہر نکل کر دیکھناتو چاہیے کہ آخر ہو کیا رہا ہے۔گھر سے باہر جا کر دیکھا تو سامنے 2 بھیڑیں کھڑی آپس میں لڑ رہی تھیں۔

سچی توبہ

خالد بہت شرارتی بچہ تھا۔ سکول اور محلے کا ہر چھوٹا بڑا اس کی شرارتوں سے تنگ تھا۔ وہ جانوروں کو بھی تنگ کرتا رہتا ، امی ابو اسے سمجھاتے مگر خالد باز نہ آتا۔

ذرامسکرائیے

اُستاد(شاگرد سے) انڈے اور ڈنڈے میں کیا فرق ہے؟ شاگرد: ’’کوئی فرق نہیں‘‘۔ اُستاد: ’’وہ کیسے‘‘؟شاگرد: ’’دونوں ہی کھانے کی چیزیں ہیں‘‘۔٭٭٭٭

پہیلیاں

مٹی سے نکلی اک گوری سر پر لیے پتوں کی بوری جواب :مولی٭٭٭٭

ادائیگی حقوق پڑوسی ایمان کا حصہ

اسلام کی تعلیمات کا خلاصہ دو باتیں ہیں۔اللہ تعالیٰ کی اطاعت و بندگی اور اللہ تعالیٰ کے بندوں کے ساتھ حسن سلوک۔ اسی لیے جیسے شریعت میں ہمیں اللہ تعالیٰ کے حقوق ملتے ہیں، اسی طرح ایک انسان کے دوسرے انسان پر بھی حقوق رکھے گئے ہیں۔