نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- برطانوی حکومت سےپاکستان کوریڈلسٹ ممالک کی فہرست سےنکالنےکامطالبہ
  • بریکنگ :- برطانوی پارلیمنٹ کی ویب سائٹ پر60 ہزارسےزائدشہریوں کےپٹیشن پردستخط
  • بریکنگ :- ایک لاکھ دستخط ہونےپربرطانوی پارلیمنٹ میں ایشوزیربحث آئےگا
  • بریکنگ :- وزیراطلاعات فوادچودھری کی پٹیشن پردستخط کرنےکی اپیل
Coronavirus Updates

نیب نے خورشید شاہ کے بیٹے ایم پی اے فرخ شاہ کو گرفتار کر لیا

سکھر: (دنیا نیوز) پیپلزپارٹی رہنماخورشید شاہ کے صاحبزادے ایم پی اے فرخ شاہ نے سپریم کورٹ کے حکم پر خود کو عدالت کے سامنے سرنڈر کردیا ، عدالت نے نیب کو دو روزہ جسمانی ریمانڈ پر پی پی ایم پی اے کو حراست میں لینے کے احکامات جاری کردیئے۔ احتساب عدالت کے جج کے رخصت پر ہونے کی وجہ سے کاروائی سیشن کورٹ میں ہوئی نیب نے فرخ شاہ کو حراست میں لے لیا۔

ایم پی اے فرخ شاہ انکے والد پیپلزپارٹی رہنما خورشید شاہ ،بھائی زیرک شاہ ، بہنوئی صوبائی وزیر اویس شاہ سمیت 18 افراد کے خلاف سکھر کی احتساب عدالت میں ایک ارب 23 کروڑ روپے سے زائد کے اثاثے بنانے کے الزام میں نیب ریفرنس زیر سماعت ہے جس میں ضمانت کے لیے ایم پی اے فرخ شاہ نے سپریم کورٹ میں درخواست دائر کررکھی تھی ۔

گذشتہ دنوں سماعت کے موقع پر سپریم کورٹ نے ان کو تین دن کے اندر خود کو احتساب عدالت کے سامنے سرنڈر کرنے کا حکم دیا تھا اور آج 3 دن پورے ہونے پر انہوں نے احتساب عدالت کے جج کے رخصت ہونے کی وجہ سے خود کو تھرڈ ایڈیشنل سیشن جج کی عدالت میں پیش ہوکر خودکو سرنڈر کردیا۔

دالت میں پیشی کےموقع پرپیپلزپارٹی کے کارکنوں نے ان کا آمد پر شاندار استقبال کیا اور ان پر پھولوں کی پتیاں نچھاور کیں۔

اس موقع پر سندھ کے صوبائی وزیر ٹرانسپورٹ سندھ سید اویس قادر شاہ بھی ان کے ہمراہ تھے عدالت میں سماعت کے دوران نیب حکام کے پیش نہ ہونے پر عدالت نے انہیں طلب کرلیا اور بعدازاں سماعت کی۔ سماعت کے دوران وکلاء کے دلائل کے بعد عدالت نے فیصلہ محفوظ کرلیا جو بعد میں سناتے ہوئے عدالت کےجج نےدو روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کو فرخ شاہ کو حراست میں لینے کے احکامات جاری کردیئے۔ نیب نے فرخ شاہ کو حراست میں لے لیا اور 14 جون پیر کے روز احتساب عدالت میں پش کرنے کے احکامات جاری کیے۔

واضح رہے کہ فرخ شاہ کے والد اور پیپلزپارٹی کے مرکزی رہنما سید خورشید احمد شاہ بھی نیب کی حراست میں ہیں۔
 

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں