رنگوں کا درست انتخاب خواتین کیلئے کسی امتحان سے کم نہیں

تحریر : سارہ خان


رنگوں کا انتخاب خواتین کیلئے کبھی کبھار مشکل بھی ہو جاتا ہے۔ بعض خواتین اپنے لباس کے بارے میں مخمصے کا شکار نظر آتی ہیں وہ کسی ایک رنگ کو اپنے لئے مخصوص کر لیتی ہیں۔ اگر سیاہ پسند ہے تو بس ہر لباس میں سیاہ رنگ ہی ڈھونڈتی ہیں۔ کسی ایک رنگ کو اپنے لئے مخصوص مت کیجئے۔

لباس کے رنگ کا انتخاب دوسروں کی پسند کے ساتھ اپنی جسامت، چہرے کی رنگت، فٹنس اور اپنی عمر کے لحاظ سے کیجئے۔ ہلکے سانولے چہرے اور پرکشش نقوش والی خواتین پر ہر طرح کا رنگ کھل جاتا ہے۔ موسم سردی کا ہے تو آپ تیز رنگوں کے لباس زیب تن کریں، لیکن اگر گرمی کا موسم ہے تو ہلکے اور لائٹ رنگوں کے لباس مناسب ہوں گے، لیکن یہ بھی ضروری ہے کہ وہ رنگ آپ کی شخصیت کے عین مطابق لگے۔ رنگوں کے چند خصوصیات ہم قارئین کو بتا رہے ہیں۔

سفید رنگ کی تاثیر ٹھنڈی ہوتی ہے۔ اس میں سورج کی تیز شعاعوں کو منعکس کرنے کی صلاحیت ہوتی ہے۔یہ سورج کی بالائے بنفشی شعاعوں کو جسم میں جذب ہونے سے روکتا ہے۔

آسمانی رنگ چونکہ نیلے رنگ میں سفید رنگ کی آمیزش سے بنتا ہے، اس لئے اس کی تاثیر بھی ٹھنڈی ہوتی ہے۔ ملازمت پیشہ خواتین اور یونیورسٹی کی طالبات دن کے اوقات میں ایسے کپڑوں کا انتخاب کر سکتی ہیں جن میں آسمانی رنگ نمایاں ہو۔نو عمر اور نوجوان لڑکیوں کو اکثریت گلابی رنگ پسند کرتی ہے۔ اس رنگ کا مزاج بھی ٹھنڈا ہوتا ہے۔ گلابی رنگ ہر عمر کی خواتین پر جچتا ہے۔ اس رنگ کی یہ خوبی ہے کہ یہ ہر قسم کی تقریبات میں پہنا جا سکتا ہے۔ نیلا رنگ کی تاثیر بھی ٹھنڈی ہوتی ہے یہ رنگ گہرا ہوتا ہے، اس لئے گرمیوں کے موسم میں رات کی تقریبات میں پہننے کیلئے انتہائی موزوں رہتا ہے۔ گرمیوں میں رات کی تقریبات میں پہننے کیلئے نیلے رنگ پر سلور رنگ کی کڑھائی یا کام دانی آپ کی شخصیت میں چار چاند لگا دے گی۔ تاثیر کے لحاظ سے سبز رنگ بھی ٹھنڈے رنگوں میں شامل ہے اس رنگ میں بھی یہ خاصیت پائی جاتی ہے کہ اسے دن اور رات کے اوقات میں یکساں طور پر پہنا جا سکتا ہے۔

فیروزی رنگ بھی نیلے اور سفید رنگ کی آمیزش سے بنتا ہے، اس لئے اس کی تاثیر بھی ٹھنڈی ہوتی ہے۔ گرمیوں میں دن کے وقت پہننے کیلئے یہ موزوں رنگ ہے۔ ملازمت پیشہ خواتین اور طالبات کو یہ رنگ پہننا چاہئے نو عمر لڑکیاں سمجھتی ہیں کہ سرمئی رنگ صرف عمر رسیدہ خواتین کیلئے مخصوص ہے۔ اس رنگ کی تاثیر بھی ٹھنڈی ہوتی ہے، اس لئے اگر آپ چاہئیں تو اسے اپنی پسند کے کسی دوسرے رنگ کے ساتھ کمبی نیشن بنا کر پہن سکتی ہیں۔

کالا یا سیاہ رنگ مزاج کے اعتبار سے انتہائی گرم رنگ ہے۔ یہ سورج کی بالائے بنفشی شعاعوں کو تیزی سے اپنے اندر جذب کرتا ہے جس کی وجہ سے یہ رنگ پہن کر اگر ہم دن کے وقت باہر نکل جائیں تو ہمیں شدید گرمی کا احساس ہوتا ہے گرمی کے موسم میں سیاہ سکارف یا دوپٹہ اوڑھ کر دھوپ میں نکالنے سے گریز کرنا چاہئے۔ البتہ رات کی تقریبات کیلئے آپ چاہئیں تو سلور کام کے ساتھ پہن سکتی ہیں۔

نارنجی رنگ اور پیلا یا زرد رنگ بھی مزاج کے لحاظ سے گرم ہوتا ہے۔ گرمیوں میں دن کے وقت پہننے کیلئے یہ بالکل موزوں نہیں۔ البتہ رات کی تقریبات میں سلور کام کے ساتھ پہنا جا سکتا ہے۔

لال یا سرخ رنگ بھی مزاج کے اعتبار سے ایک گرم رنگ ہے۔ اسی وجہ سے یہ رنگ گرمی کے موسم میں دن کے وقت پہننے کیلئے موزوں نہیں ہے، لیکن رات کے وقت پہنا جا سکتا ہے۔

ایک بات کا خیال رکھیں کہ گرمیوں میں شادی بیاہ کی تقریبات کیلئے کام بنواتے وقت سلور رنگ کا انتخاب کریں، کیوں کہ یہ ٹھنڈک کا احساس دلاتا ہے، گرمی کے موسم میں کپڑے خریدتے وقت یہ بات بھی پیش نظر رکھیں کہ ہلکے  رنگوں کی تاثیر ٹھنڈی ہوتی ہے ان رنگوں کے علاوہ کاسنی، انگوری، بادامی، پیچ، فان، بسکٹی، وہ رنگ ہیں جنہیں آپ اپنی عمر کے لحاظ اور موقع محل کی مناسبت سے پہن سکتی ہیں جو نہ صرف موسم کی شدت سے مقابلہ کرنے میں آپ کی مدد کریں گے بلکہ آپ کی شخصیات کو بھی جاذب نظر بنائیں گے۔

 

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں

پیرس اولمپکس:پاکستانی دستہ فائنل

کھیلوں کا مقبول ترین میگا ایونٹ سجنے کو تیار، پاکستان نے بھی اپنے دستے کو حتمی شکل دے دی۔ اولمپک کھیلوں کو دنیا کا اہم ترین مقابلہ تصور کیا جاتا ہے۔ اولمپک کھیلوں میں موسم سرما اور موسم گرما کے مقابلے ہر چار سال بعد منعقد ہوتے ہیں، یعنی دو اولمپک مقابلوں کے درمیان دو سال کا وقفہ ہوتا ہے۔ان مقابلوں میں دنیا بھر سے ہزاروں کھلاڑی شرکت کرتے ہیں۔

یورو کپ:فائنل معرکہ آج

15جون سے جاری فٹ بال کا دوسرا بڑا ایونٹ ’’یورو کپ‘‘ آج اپنے اختتام کو پہنچ جائے گا۔ ٹورنامنٹ کے فائنل میں سپین اور انگلینڈ کی ٹیمیں مدمقابل ہوں گی۔ فائنل آج پاکستانی وقت کے مطابق رات 12 بجے جرمنی کے شہر برلن میں کھیلا جائے گا۔

مالینگ اور جادو کا برش

یہ ایک چینی کہانی ہے ۔ مالینگ ایک غریب لڑکا تھا۔ اس کے ماں باپ بھی اب دنیا میں نہیں تھے۔ مالینگ کے پاس اتنے پیسے بھی نہیں تھے کہ وہ ٹھیک سے کھانا کھا سکتا یا سکول میں تعلیم حاصل کر سکتا۔

سورج کی شعاعیں

سورج جو کہ نظامِ شمسی کا مرکز ہے اتنا روشن ہے کہ ہم اس کی جانب چند لمحوں کیلئے بھی دیکھ نہیں سکتے۔اس کا قطر زمین کے قطر سے سو گنا زیادہ ہے اور اس کی سطح اُبلتے ہوئے پانی سے بھی ساٹھ گنا زیادہ گرم ہے۔

چھوٹا پھول

ایک باغ میں بہت سے پودے اور درخت تھے، جن پر ہر طرح کے پھول اور پھل لگے ہوئے تھے۔ درختوں پر پرندوں کی چہچہاٹ اور پھولوں کی خوشبو باغ کو خوبصورت بنائے ہوئے تھی۔ ایک دفعہ گلاب کے بہت سے پھول کرکٹ کھیل رہے تھے کہ ایک چھوٹا سا پھول آیا اور کہنے لگا ’’کیا میں آپ کے ساتھ کرکٹ کھیل سکتا ہوں‘‘۔

پہیلیاں

(1)ہے اک ایسا بھی گھڑیال جس کی سوئیاں بے مثال وقت بتائے نہ دن بتائےسب کچھ بس دکھلاتا جائے٭٭٭