نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- ڈی جی آئی ایس پی آرکانائیک سیف علی جنجوعہ شہیدکے 73ویں یوم شہادت پر ٹویٹ
  • بریکنگ :- قوم نائیک سیف علی کی بہادری کوخراج تحسین پیش کرتی ہے،ڈی جی آئی ایس پی آر
  • بریکنگ :- شہیدنے 1948 میں بڑی بہادری سےپیرکلیوارج کادفاع کیا،ڈی جی آئی ایس پی آر
Coronavirus Updates

عوام پر حکومت نے ایک اور بم گرا دیا، پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ

تجارت

اسلام آباد: (دنیا نیوز) مہنگائی کی ماری عوام پر وفاقی حکومت نے ایک اور بم گرا دیا، پٹرولیم مصنوعات کی قیمت میں اضافہ کر دیا گیا جس کا نوٹیفکیشن وزارت خزانہ نے جاری کر دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز اوگرا کی جانب سے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ساڑھے 10 روپے اضافے کی سمری پٹرولیم ڈویژن کو ارسال کی گئی تھی۔

اوگرا کی طرف سے وزارت خزانہ کو بھیجی گئی سمری کے برعکس آئندہ پندرہ روز کے لیے وفاقی حکومت نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کر دیا ہے، پٹرول کی قیمت میں 5 روپے فی لٹر اضافہ کیا گیا جس کے بعد نئی قیمت پٹرول کی نئی قیمت 123 روپے 30 پیسے ہو گئی ہے۔

وزارت خزانہ کے جاری کردہ نوٹیفکیشن کے مطابق ہائی سپیڈ ڈیزل کی قیمت میں 5 روپے 1 پیسے فی لٹر اضافہ کیا گیا ہے اور نئی قیمت ہائی سپیڈ ڈیزل کی نئی قیمت 120روپے 4 پیسےفی لٹر ہو گئی ہے۔

نوٹیفکیشن کے مطابق لائٹ ڈیزل آئل کی قیمت میں 5روپے 92 پیسے فی لیٹر اضافہ ہوا ہے۔ جس کے بعد لائٹ ڈیزل کی نئی قیمت 90 روپے 69 پیسے ہو گئی ہے۔

نوٹیفکیشن کے مطابق مٹی کے تیل کی قیمت میں 5 روپے 42 پیسے فی لٹر اضافہ کیا گیا اور مٹی کے تیل کی نئی قیمت 92 روپے 26 پیسے فی لٹر ہو گئی۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز وزارت خزانہ کو سمری بھیجی گئی تھی جس میں تجویز دی گئی تھی کہ ہائی سپیڈ ڈیزل کی قیمت میں ساڑھے دس روپے اضافے کی تجویز ہے۔ پٹرول کی قیمت میں ایک روپیہ فی لٹر اضافے کی تجویز ہے، مٹی کے تیل کی قیمت میں ساڑھے 5 روپے فی لٹر اضافے کی تجویز ہے۔ لائٹ ڈیزل آئل کی قیمت میں بھی ساڑھے پانچ روپے فی لٹر اضافے کی تجویز ہے۔

 

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں