نیپرا کی بجلی مہنگی کرنیکی درخواست پر سماعت،بڑا فیصلہ لے لیا

اسلام آباد (ویب ڈیسک) نیپرا نے سی پی پی اے اور این ٹی ڈی سی سے متعلق انکوائری پر سماعت مکمل کرکے فیصلہ محفوظ کرلیا۔

تفصیلات کےمطابق چیئرمین نیپرا وسیم مختارنے کہاکہ بجلی کی قیمت میں اضافے کی درخواست پر تشویش ہے، ہم نے بھی اپنے ضمیر کا سامنا کرنا ہے، اتھارٹی کو ربڑ سٹمپ نہ سمجھا جائے، اس نے صارفین کا تحفظ کرنا ہے، صارفین کی شکایات سے متعلق ایپ رواں ماہ لانچ کی جائے گی۔

سی پی پی حکام نے بتایا جنوری کا فیول پرائس 7 روپے 13 پیسے بنتا ہے، این ٹی ڈی سی حکام نے کہاکہ ملک میں بجلی کی پیداوار رواں سیزن میں مجموعی طور پرکم رہی، ممبر نیپرا نے کہاکہ ساؤتھ نارتھ پر سسٹم کے باعث تقریباً 50 فیصد 26 ارب روپے ایف سی اے صارفین پرپڑے گا، ڈیپارٹمنٹس کے درمیان مسئلے صارفین بوجھ کی صورت میں ادا کر رہے ہیں۔

نیپرا نے کے الیکٹرک اور ڈسکوز کی بلنگ میں پائی جانے والی بے ضابطگیوں پر تسلی بخش جواب موصول نہ ہونے پر انکوائری رپورٹ میں کی جانے والی سفارشات پر عمل درآمد کرنے کا حکم جاری کر دیا، اتھارٹی نے تقسیم کار کمپنیوں کو 2 ماہ سے خراب میٹرز کو فوراً تبدیل کرنے اور ان میٹرز پر اصل میٹر ریڈنگ کے حساب سے بل وصول کرنیکا حکم دیا۔

اتھارٹی نے کہا جون 2023 سے جن صارفین کی کیٹیگری 30 دن سے زائد بلنگ کی وجہ سے پروٹیکٹڈ سے نان پروٹیکٹڈ میں تبدیل ہوئی ہے اسے ٹھیک کریں۔

 

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں