نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- آئی ایم ایف کی شرائط پرپٹرولیم مصنوعات پرلیوی بڑھادی گئی
  • بریکنگ :- حکومت کاپٹرول اورہائی اسپیڈڈیزل پرلیوی میں فی لٹر 4روپےاضافہ
  • بریکنگ :- پٹرول پرسیلزٹیکس صفرسے 2 روپے 34 پیسےفی لٹرکردیاگیا
  • بریکنگ :- ہائی اسپیڈڈیزل پرسیلزٹیکس 7.20 سے 7.37 فیصدفی لٹرکردیاگیا
  • بریکنگ :- پٹرول پر لیوی 13روپے 62 پیسےفی لٹر کردی گئی
  • بریکنگ :- ہائی اسپیڈڈیزل پرلیوی 13 روپے 14 پیسےفی لٹر مقرر
  • بریکنگ :- پٹرول پر 9 روپے 62 پیسےفی لٹرپٹرولیم لیوی عائدتھی
  • بریکنگ :- ہائی اسپیڈڈیزل پر پٹرولیم لیوی 9روپے 14 پیسے فی لٹرتھی
Coronavirus Updates

ادارے اپنے پاؤں پر کھڑے ہوں گے تو ملک اور عوام خوشحال ہوں گے: فواد چودھری

پاکستان

اسلام آباد: (دنیا نیوز) وفاقی وزیر اطلاعات فواد چودھری نے کہا ہے کہ جب ادارے اپنے پاؤں پر کھڑے ہوں گے تو ملک اور اس کے عوام خوشحال ہوں گے۔

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے ہر جگہ میرٹ پر تقرر کی کوشش کی ہے جس کی وجہ سے ادارے بہتر ہونا شروع ہوئے ہیں۔ ہم چیزیں باہر سے منگوا رہے ہیں اور جب چیزیں زیادہ مہنگی ہوں گی تو ظاہر ہے کہ ہمیں اس کی قیمت زیادہ دینی پڑے گی۔ اگر ہمارے پاس پیسے ہوں اور ہم لوگوں کو سبسڈی دے سکیں تو ہم لوگوں کو بچا سکتے ہیں لیکن ایسا نہیں ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ 1947 سے 2006 تک پاکستان نے کُل قرضہ 6ہزار ارب روپے کا لیا تھا، اس میں ہم نے موٹر وے بنا لیں، گوادر کا شہر خرید لیا، اسلام آباد کا شہر بنا لیا، پاکستان کی فوج، فضائیہ اور بحریہ کھڑی کر لی، ہم نے تمام ادارے ان ہی 6ہزار ارب روپے میں بنا لیے۔

فواد چودھری نے کہا کہ 2008 میں جب آصف علی زرداری صدر بنے اور 2018 میں جب مسلم لیگ(ن) کی حکومت گئی تو ان 10سالوں میں ہم نے 23ہزار ارب روپے کا قرض لیا، اس کی وجہ سے پچھلے سال ہم نے 10ارب ڈالر واپس کیے، اس سال ہمیں 12ارب ڈالر واپس کرنے ہیں۔ ملکوں میں اگر اخراجات زیادہ ہوں اور آمدن کم ہو تو ملک غریب ہوگا اور اگر اخراجات کم ہوں اور اخراجات زیادہ ہوں تو آپ خوشحال ہوں گے لیکن جب 10ارب ڈالر پچھلے سال دے دیے، 12ارب ڈالر اس سال دے رہے ہیں تو عوام کو ریلیف کیسے دیں گے، یہ وہ چیلنج ہے جس کا حکومت اس وقت سامنا کر رہی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ماضی کی حکومتوں میں جس طرح سے اداروں کا بیڑا غرق کیا گیا، پی ٹی وی، سٹیل مل، ریڈو سمیت تمام ادارے تنزلی کا شکار ہوئے، ہم نے آ کر 88 کے قریب چیف ایگزیکٹو آفیسر لگائے ہیں اور ایک بھی تقرر میرٹ سے ہٹ کر نہیں کیا، ہر جگہ میرٹ پر تقرر کی کوشش کی ہے جس کی وجہ سے ادارے بہتر ہونا شروع ہوئے ہیں۔

وزیر اطلاعات نے مزید کہا کہ جب ادارے اپنے پاؤں پر کھڑے ہوں گے تو ملک اور اس کے عوام خوشحال ہوں گے، یہ نہیں ہو سکتا کہ ادارے تنزلی کا شکار ہوں اور اس کے لوگ خوشحال ہوں گے۔
 

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں