فیٹف نے متحدہ عرب امارات کو گرے لسٹ سے نکال دیا

ابو ظبی: (ویب ڈیسک) منی لانڈرنگ اور دہشتگردوں کی مالی معاونت روکنے کے حوالے سے سخت اقدامات کے بعد فنانشل ایکشن ٹاسک فورس نے متحدہ عرب امارات کو گرے لسٹ سے نکال دیا۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق فیٹف کی جانب سے پیرس میں 3 روزہ اجلاس کے اختتام پر متحدہ عرب امارات کو گرے لسٹ سے نکالنے کا فیصلہ ایک جامع جائزہ کے بعد کیا گیا، یو اے ای کو 2022ء میں فیٹف کی گرے لسٹ میں شامل کیا گیا تھا تاہم اب اصلاحاتی پیشرفت کے بعد گرے لسٹ سے نکالا گیا۔

جائزہ رپورٹ کے مطابق متحدہ عرب امارات نے منی لانڈرنگ کی روک تھام کیلئے سخت قوانین بنائے اور انسداد دہشتگری کیلئے ادارہ قائم کیا، دہشتگردوں کی مالی معاونت اور ہتھیاروں کے پھیلاؤ کو روکنے کیلئے بھی اقدامات کیے، مالی جرائم کو روکنے کیلئے نئے ضوابط مرتب کیے گئے۔

علاوہ ازیں فنانشل ایکشن ٹاسک فورس نے متحدہ عرب امارات کے علاوہ بارباڈوس، گبرالٹر اور یوگنڈا کو بھی گرے لسٹ سے نکال دیا ہے جبکہ کینیا اور نمیبیا کو رسک قرار دیتے ہوئے گرے لسٹ میں شامل کیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ فیٹف کی گرے لسٹ کا مطلب ہے کہ ایف اے ٹی ایف نے اس فہرست میں شامل ممالک پر منی لانڈرنگ اور دہشت گردی کی مالی معاونت کے خلاف اقدامات پر پیشرفت کو جانچنے کیلئے نگرانی میں اضافہ کیا ہے۔
 

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں