ذرامسکرائیے

تحریر : روزنامہ دنیا


استاد( اسلم سے): ’’ ہوا سے باتیں کرنا، اس محاورے کو جملے میں استعمال کرو‘‘ اسلم: ’’کل میرے دو دوست سیر کو گئے، ان کے واپس آنے تک میں ہوا سے باتیں کرتا رہا‘‘۔٭٭٭

باپ(بیٹے سے) : ’’بیٹاٖ فیل ہونا تمہاری قسمت میں لکھا تھا، اس لئے تم فیل ہو گئے، پریشان نہ ہو‘‘

بیٹا: ’’ابو میں تو خوش ہوں، اچھا ہوا کہ زیادہ محنت نہیں کی، ورنہ ساری محنت ضائع ہو جاتی‘‘۔

٭٭٭

دوست(عامر سے): نعمان ہمیشہ انگلش میں بات کرتا ہے پھر وہ انگلش کے پرچے میں فیل کیوں ہو جاتا ہے‘‘؟

عامر: ’’کوئی خاص وجہ تو نہیں، بس جس طرح کی انگلش وہ بولتا ہے،اسی طرح پرچے میں بھی لکھ آتا ہے‘‘

٭٭٭

استاد(کلاس روم سے شاگرد سے): بچوں بتائو ذرا چلتی گاڑی سے کب اترنا چاہئے‘‘؟

شاگرد’’جناب! جب گاڑی ہسپتال کے قریب ہو‘‘

………

ایک آدمی(پہلوان سے)’’ تم ایک بار میں کتنے آدمی اٹھا سکتے ہو؟‘‘

پہلوان: ’’کم از کم دس‘‘

آدمی: ’’تم سے اچھا تو میرا مرغا ہے، جو صبح صبح پورے محلے کو اٹھا دیتا ہے‘‘۔

 

 

 

 

 

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں
Advertisement

شوخیوں میں حجاب کا عالمہ!

ہمارے ہاں بہت سی خواتین عبایا پہننا یا حجاب لینا پسند کرتی ہیں۔ بلاشبہ پردہ کرنے کا ہمارے دین میں حکم دیا گیا ہے، جس کی بنا پر خواتین ایسا کرتی ہیں۔ پردہ کرنا اصل میں اپنے آپ کو چھپانا، اپنی اصل خوبصورتی کو غیر مردوں سے بچانا ہے۔

سبزیوں کو کیسے محفوظ کیا جائے؟

کچھ موسمی پھل یا سبزیاں ایسی ہوتی ہیں جنہیںہم زیادہ دیر کیلئے محفوظ نہیں رکھ پاتے اور وہ فریج میں رکھنے کے باوجود خراب ہو جاتی ہیں ۔سبزیوں اور پھلوں کو دیر تک تازہ اور محفوظ رکھنے کیلئے چند طریقے پیش خدمت ہیں۔

گھرکا بجٹ خواتین کی آزمائش

بجٹ سے مراد نقد آمدنی اور اخراجات کا تخمینہ لگانا ہے تاکہ آمدنی اور اخراجات میں توازن پیدا کیا جا سکے۔ بجٹ دراصل انتظام کا پہلا عمل ہے جو مستقبل کے اخراجات کیلئے آمدنی کی منصوبہ بندی پر مشتمل ہوتا ہے۔ یہ کنبے کو رقم خرچ کرنے کا ایسا رہنما خاکہ یا نمونہ مہیاکرتا ہے جس پر کاربند رہ کر متعلقہ کنبہ یا افراد اپنے مقاصد میں کامیابی حاصل کر لیتے ہیں۔

آج کا پکوان

ٹٹ بٹ اسنیکس :اجزا:میدہ تین پیالی، نمک حسب ذائقہ، پسی ہوئی چینی آدھی پیالی، سفید زیرہ آدھا چائے کا چمچ، کلونجی آدھا چائے کا چمچ، کاٹج چیز آدھی پیالی، انڈا ایک عدد، گھی حسب ضرورت۔

یادرفتگاں:جوش ملیح آبادی شاعر حریت و فطرت

پاکستان ہجرت کرکے آئے تو برصغیر کے طول و عرض میں ان کے نام کا ڈنکا بجتا تھا انہوںنے تخلص جوش بلاوجہ اختیار نہ کیا ہو گا، غالباً اپنی فطرت کے ہیجان انگیز عناصر کا انہیں شروع ہی سے شدید احساس تھا

یادرفتگاں:جہان سخن میں ممتاز : صہبا اختر

غزل گو ئی کے ساتھ نغمہ نگاری کے میدان میں بھی اپنے فن کے نقوش چھوڑے صہبا الفاظ کاچنائو بڑا سوچ سمجھ کر کرتے، ان کے ہاں تراکیب کا استعمال بھی بڑی عمدگی سے ہوا ہے