اسرائیلی بمباری، غزہ میں ممتازسائنسدان بھی اہل خانہ سمیت شہید

غزہ : (ویب ڈیسک ) عارضی جنگ بندی کے خاتمے کے بعد غزہ پر اسرائیلی بمباری کی از سرنو شروعات کے اگلے روز ممتاز فلسطینی سائنسدان سفیان طائیح بھی اپنے اہل خانہ سمیت شہید ہو گئے۔

ہفتے کے روز ممتازسائنسدان کے گھر کو اسرائیلی طیاروں نے الفلوجہ میں بمباری کا نشانہ بنایا، یہ الفلوجہ نامی فلسطینی آبادی شمالی غزہ سے 30 کلو میٹر کے فاصلے پر واقع ہے۔

سائنسدان سفیان طائیح کی شہادت کا اعلان غزہ میں اعلیٰ تعلیم کی وزارت نے بھی کیا ہے، وہ غزہ کی اسلامی یونیورسٹی کے صدر تھے اور طبیعات اور اطلاقی ریاضی کے محققین میں نمایاں تھے۔

اس سے پہلے کئی علما اور دوسرے شعبوں کے ممتاز پروفیشنلز بھی اسرائیلی بمباری کا نشانہ بن چکے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں :مذاکرات معطل : اسرائیل کے غزہ پرحملے جاری، 300 سے زائد فلسطینی شہید

ذرائع ابلاغ سے وابستہ درجنوں کارکنوں کے علاوہ انجینئرز اور ڈاکٹروں کی بھی بڑی تعداد بھی شہداء میں شامل ہے۔

واضح رہے کہ غزہ میں حماس اور اسرائیل کے درمیان جاری لڑائی کے دوران عارضی جنگ بندی ختم ہونے کے بعد گزشتہ 2 روز میں اسرائیلی فوج نے 400 سے زائد حملے کرکے 300 سے زائد فلسطینیوں کو شہید کر دیا۔
 

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں