نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- پاکستان افغانستان کےمعاملات میں مداخلت نہیں کررہا،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- افغانستان میں بدامنی پھیلی توپاکستان کونقصان ہوگا،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- افغانستان کامعاملہ مذاکرات سےہی حل ہوگا،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- پاکستان کاامریکاکوہوائی اڈےدینےکاکوئی ارادہ نہیں،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- پاکستان کےامت مسلمہ کےساتھ بہترین تعلقات ہیں،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- قطر،یمن اورایران کےساتھ تعلقات میں بہتری آرہی ہے،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- پاکستان اورسعودی عرب کےتاریخی تعلقات ہیں،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- کچھ لوگوں نےپاک سعودی عرب تعلقات سےمتعلق پروپیگنڈاکیا،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- عیدکےبعدسعودی عرب کاوفدپاکستان آئےگا،وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- سعودی وزیرخارجہ بھی پاکستان کادورہ کریں گے،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- سعودی عرب کاکشمیرکےحوالےسےکردارڈھکاچھپانہیں،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- وزیراعظم نےاپنانقطہ نظرسعودی قیادت کوسمجھایا،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- مسئلہ کشمیرپرثالثی سےبھارت نےہمیشہ انکارکیا،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- 2ایٹمی قوتیں جنگ نہیں کرسکتیں،واحدراستہ بات چیت ہے،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- پاکستان اپنےمعاملات طےکرنےکیلئےتیارہے،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- پاکستان نےنہیں بھارت نےمعاملات کوبگاڑاہے،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- مسئلہ کشمیریواین قراردادوں کےمطابق حل کیاجاسکتاہے،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- پاکستان اپنےاصولی موقف پرقائم ہے،وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- آرٹیکل 370کومقبوضہ کشمیرکی جماعتوں نےمستردکیا،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- مسلم لیگ(ن)کےکچھ لوگ مسئلہ کشمیرپرسیاست نہ کریں،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- مقبوضہ کشمیرکےتمام معاملات بھارت کااندرونی معاملہ نہیں،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- سعودی عرب میں افغانستان کےمعاملات پربھی گفتگوہوئی،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- سعودی عرب نےافغان امن کیلئےپاکستان کی کوششوں کوسراہا،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- افغانستان میں امن سےپاکستان سمیت خطےکوفائدہ ہوگا،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- سعودی عرب بھی افغانستان میں امن چاہتاہے،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- چاہتےہیں افغانستان اپنےمستقبل کافیصلہ بات چیت سےکرے،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- پاکستان اورچین کےدرمیان تاریخی تعلقات ہیں اوررہیں گے،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- پاک امریکاتعلقات میں اتارچڑھاؤرہا،وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی
  • بریکنگ :- پاکستان نئی امریکی انتظامیہ سےبہترتعلقات چاہتاہے،شاہ محمود قریشی
  • بریکنگ :- امریکانےافغانستان میں پاکستان کےکردارکوسراہا،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- پاکستان چاہتاہےبرادرممالک میں غلط فہمیاں پیدانہ ہوں،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- مسجداقصیٰ میں فلسطینیوں پرمظالم کی مذمت کرتےہیں،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- سعودی عرب میں اسرائیل کےحوالےسےگفتگونہیں ہوئی،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- پاکستان پراسرائیل کےحوالےسےکوئی دباؤنہیں،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- سعودی عرب نےدباؤکےباوجوداسرائیل پرموقف نہیں بدلا،وزیرخارجہ

حیدرکرارؓ۔۔۔۔پیکر ہمت و شجاعت

خصوصی ایڈیشن

تحریر : حاجی محمد حنیف طیب


حیدرکرارحضرت علی رضی اﷲتعالیٰ عنہ، نجیب الطرفین ہاشمی، اور رسول اﷲﷺ کے سگے چچا زاد بھائی ہیں ،آپؓ کی جملہ خصوصیات میں سے ایک خصوصیت یہ بھی ہے کہ آپؓ ’’عقد مواخاۃ ‘‘میں بھی آپ ﷺکے ’’بھائی ‘‘ہیں ۔حضرت عبد اﷲؓبن عمر بیان کرتے ہیں کہ جب اﷲکے رسول ﷺنے صحابہ کرامؓ کے درمیان ’’بھائی چارہ ‘‘ قائم فرمایااور ایک صحابیؓ کو دوسرے صحابی ؓ کا دینی واسلامی بھائی بنا دیا تو حضرت علیؓ آبدیدہ ہوکر بارگاہ رسالت ﷺمیں حاضر ہوئے اور عرض کیا’’یارسول اﷲﷺآپ نے تمام صحابہ کرام ؓ کو ایک دوسرے کا بھائی بنا دیا لیکن مجھے کسی کا بھائی نہیں بنایا ‘‘ اس پر رسول اﷲﷺنے نہایت پیا راور محبت سے فرمایا ’’اے علی !تم دنیا وآخرت دونو ں میں میرے بھائی ہو ۔‘‘

حضرت علیؓ ابھی بہت چھوٹے تھے ،جب حضرت محمد ﷺکو بارگاہ خداوند ی سے نبوت ورسالت ﷺکا عظیم الشان منصب عطا کیا گیا۔حضرت علیؓ بچپن سے ہی حضور اکرم ﷺکے ساتھ رہتے آرہے تھے ،اس لئے آپؓ کو اسلام کے مذہبی مناظر سب سے پہلے نظر آئے۔ایک روزحضور سید عالم ﷺاور ام المومنین حضرت خدیجۃ ُالکبریٰ  ؓکو اﷲکی عبا دت میں مصروف دیکھا تو پو چھنے لگے کہ یہ آپ دونو ں کیا کر رہے ہیں ؟حضور نبی اکرم ﷺنے اپنے نبوت ورسالت کے منصب گرامی کی خبر دی اور ساتھ ہی کفرو شرک کی مذمت کرکے آپ ؓ کو توحیداوررسالت نبوی ﷺپر ایمان لانے کی دعوت دی ۔چنانچہ حضرت علی ؓنے فوراًہی اسلام وایمان کی دولت حاصل کی ۔

حضور سرکاردوعالم ﷺکی جو ہر شناس نگاہوں نے حضرت علیؓ کی خداداد قابلیت واستعداد کا پہلے ہی اندازہ کرلیا تھا اور آپ ﷺکی زبان سے حضرت علیؓ کو ’’باب العلم ‘‘ کی سند مل چکی تھی ۔حضرت علیؓ نے نبی کریم ﷺسے تقریباًپانچ سو چھیاسی احادیث روایت کی ہیں ۔ آپ ؓ کمال علم وفضل ،جمال وفصاحت وبلا غت ،پر تاثیر مواعظ وخطابت بے مثال فیاضی وسخاوت ،بے نظیر جرأت وشجا عت اور قرابت رسول ﷺمیں ممتاز اور منفرد فضیلت کے مالک ہیں ۔

حضرت علی رضی اﷲتعالیٰ عنہ کی بے مثا ل ہمت وشجا عت اور جرأت وبہا دری کی لازوال داستانوں کے ساتھ سارے عرب وعجم میں آپؓ کی قوت بازوکے چرچے تھے ۔آپؓ کے رعب ودبدبہ سے بڑے بڑے پہلوانوں کے دل کانپ جاتے تھے ۔جنگ تبو ک کے موقع پر سرکا ر دوعالم ﷺنے آپؓ کو مدینہ منورہ میں اپنا جا نشین مقررفرمایا تھا ،اس لئے اس غزوہ میں آپؓ شریک نہ ہوسکے۔اس کے علاوہ باقی تما م غزوات وسرایا میں آپؓ شریک ہوئے اور بڑے بڑے بہا دروں اور شہسواروں کو’’ذوالفقار حیدری ‘‘سے موت کے گھاٹ اُتارا ۔حضور سید عالم ﷺنے جب اﷲتعالیٰ کے حکم کے مطابق مکہ مکرمہ سے مدینہ منو رہ کی طرف ہجرت کرنے کا ارادہ کیا تو آپ ﷺنے حضرت علیؓ سے فرمایا ’’مجھے اﷲتعالیٰ کی طرف سے ہجرت مدینے کا حکم ہوچکا ہے اور میں آج ہی مدینہ منورہ روانہ ہو جاؤں گا ، لہٰذا تم میرے بستر پر میری چادر اُوڑھ کر سوجانا اور صبح قریش مکہ کی ساری امانتیں اور وصیتیں جو میرے پاس رکھی ہوئی ہیں ،وہ ان کے مالکو ں کے سپرد کرکے تم بھی مدینہ منورہ چلے آنا ‘‘حضرت علی حید رکرار رضی اﷲتعالیٰ عنہ کو کسی خوف وخطر کے بغیر حضور اقدسﷺ کے بستر مبارک پر سوگئے ۔صبح ہوئی تو کفارِ مکہ جو رات بھر کاشانہ نبوی ﷺکا سخت محاصرہ کئے ہوئے تھے۔برہنہ تلواریں لے کر اندر داخل ہوگئے لیکن جب یہ دیکھا کہ بستر نبوی ﷺ پر حضرت علیرضی اﷲتعالیٰ عنہ سو رہے ہیں تو ناکام ونامراد ہوکر واپس چلے گئے۔ حضرت علی رضی اﷲتعالیٰ عنہ فرماتے ہیں کہ میں رات بھر آرام وسکون کیساتھ سویا اور صبح اُٹھ کر لوگوں کی امانتیں اور وصیتیں ان کے مالکو ں کے حوالے کیں۔اور پھرمیں نے بھی مدینہ منورہ کی طرف ہجرت کی۔

 آغازطفولیت ہی سے حضرت علی رضی اﷲتعالیٰ عنہ ،حضور خاتم الانبیاء ﷺکی آغوش پرورش میں رہے ۔اس لئے آپؓ قدرتاً محاسن اخلاق اور حسن تربیت کا بہترین نمونہ تھے ،گویا حضرت علی رضی اﷲتعالیٰ عنہ ،حضرت محمد مصطفی ﷺکے اخلا ق حسنہ کے چمن کے باغ وبہا ر ہیں ،حضرت علی ؓ کو بچپن سے ہی درس گاہ نبوت ﷺمیں تعلیم وتربیت حاصل کرنے کا موقع ملا جس کا سلسلہ ہمیشہ قائم ودوائم رہا ۔ آپ رضی اﷲتعالیٰ عنہ اس پر فخر ونا زکرتے ہوئے فرماتے ہیں کہ میں روزانہ صبح کو آپ ﷺکی خدمت اقدس میں حاضر ہوا کرتا تھا اور تقرب کا یہ درجہ میرے علاوہ کسی کو حاصل نہ تھا۔چنانچہ اسی وجہ سے آپ کو حضور اکرم ﷺکے تحریری کام کرنے کی سعادت بھی حاصل تھی ۔کاتبان وحی میں آپ ؓکا اسم گرامی سرفہر ست ہے۔’’صلح حدیبیہ ‘‘کا صلح نامہ آپؓ نے ہی لکھا تھا ۔

21رمضان المبارک بروزجمعۃ ُالمبارک 40ہجری کوفجر کی نماز میں عین حالت سجدہ میں حضرت علی رضی اﷲتعالیٰ عنہ شہادت کے عظیم منصب پر فائز ہوئے اور یوں علم وفضل ، زہد و تقویٰ ، فیاضی و سخاوت ، جرأت و بہادری، شجاعت وبسالت اور رشد وہدایت کا روشن وتابان آفتاب غروب ہو گیا ۔

 

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں
Advertisement

اردو شاعری میں طنزو مزاح کی روایت

جس طرح خوشی اور غم کا عمل دخل تمام حیاتِ انسانی میں جاری وساری رہتا ہے، اسی طرح طنز و مزاح کو بھی زندگی میں بنیادی حیثیت حاصل ہے۔بچہ اپنی پیدائش ہی سے رونے کے بعد جو کام سیکھتا ہے، وہ رونا اور ہنسی ہے۔اس وقت وہ کسی بھی جذبے سے آگاہی کے بغیر صرف گدگدانے پر خوشی کا اظہار کر کے اپنی جبلت کا احساس دلاتا ہے ۔ انسان کے علاوہ کوئی بھی جاندار اس عمل پر قادر نہیں اور مولانا حالی نے اسی لیے غالب کو حیوانِ ظریف قرار دیا تھا۔ صرف غالب ہی نہیں بلکہ تمام انسان اس جذبے کے حامل ہوتے ہیں :

عید پر منفرد نظر آنے کی خواہش

رمضان اور عید کی تیاریاں ساتھ ساتھ شروع ہوتی ہیں ،جوں جوں رمضان المبارک کا آخری عشرہ قریب آنے لگتا ہے ،ویسے ویسے عید کی تیاریوں میں بھی شدت آجاتی ہے،کہیں ٹیلر ماسٹر کے نخرے اور کہیں وقت پر جوڑا سی کر نہ دینے پر جھگڑے ۔ اگر سی دیا تو وہ ڈیزائن نہیں بنایاجو کہا گہا تھا۔ مکان پر رنگ روغن ہونے لگتا ہے تو مالکن کو گھر کی ڈیکوریشن کی فکر لاحق ہوتی ہے، پردے صاف کرائے جاتے ہیں، کچن آئٹمز کے لئے ایک لمبی فہرست لے کر صاحب خانہ گھومتے پھرتے نظر آتے ہیں ، لیکن اس مرتبہ کورونا نے عید کی خوشیوں کو بڑھانے والی یہ چہل پہل بھی روک دی ہے۔

تمازت آفتاب اور جلد کی حفاظت

گرمی کی شدت میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے، اور دنیابھر کے ماہرین جلد اس بات پر متفق ہیں کہ جلد کی سب سے بڑی دشمن دھوپ ہے۔ گوری رنگت والی جلد کی نسبت گہری رنگت والی جلد کو قدرت نے کئی لحاظ سے زیادہ خوبیاں عطا کی ہیں۔ میلانین کی زیادتی کی مدد سے گہری رنگت والی جلد میں قوت مدافعت بہت زیادہ ہوتی ہے۔ دھوپ میں زیادہ وقت رہنے کی بنا پر چہرے پرچھائیاں، جھریاں اور بڑھاپے کے جلد آنے جیسے مسائل پیدا ہو جاتے ہیں۔ اگر جلدی مسائل گمبھیر صورت اختیار کر جائیں تو خدانخواستہ کینسر جیسے مسائل بھی پیدا ہو جاتے ہیں۔ دھوپ اپنی تمازت کے سبب جلد کی نمی کو چوس لیتی ہے جس کے سبب جلد خشک اور کھردری ہو جاتی ہے۔

آج کے پکوان

تہہ بہ تہہ یخنی پلائواجزاء : ایک کلو چاول، تین کلو گوشت، آدھا کلو کوکنگ آئل ، زعفران، لونگ، الائچی، دارچینی10 ،10 گرام، کیوڑہ 50 گرام، دہی 250 گرام، پیاز، دھنیا ادرک 30 ، 30 گرام، سیاہ مرچ ، زیرہ آدھا آدھا چائے کا چمچہ، نمک ،سرخ مرچ حسب ذائقہ۔

لیلتہ القدر کی فضیلت یہ محبت بانٹنے اور ایک دوسرے کو معاف کرنے کی رات ہے

کینہ پرور اور بغض رکھنے والے اللہ تعالیٰ کی رحمت میں آنے کے لئے آج کی رات معافی مانگ لیں ورنہ بخشش نہیں ہو گی آج کی رات بچے والدین سے اور والدین بچوں سے پیار و محبت کے رشتے قائم کرنے کا عہد کریں اس مبارک رات میں اتنے فرشتے دعامانگنے والوں کے ساتھ آمین کہنے کے لئے اترتے ہیں کہ زمین تنگ پڑ جاتی ہے

شب قدر ، عبادت کی رات رمضان کے آخری عشرے کی طاق راتیں اللہ کا بہت بڑا انعام ہیں

گھر کی خواتین کو بھی عبادت کرنے کی ترغیب دینی چاہیے اور گھر میں بھی عبادت کا ماحول بنانا چاہیے