کھیرا۔۔۔۔حسن نکھارے

تحریر : تحریم نیازی


کھیرے کو تربوز اور میٹھے کدو کے خاندان سے جوڑا جاتا ہے۔ دنیا بھر میں اس سبزی کا استعمال ویسے تو ہر موسم میں لیکن زیادہ تر گرمیوں میں کیا جاتا ہے۔ اس کی ایک بہت بڑی وجہ یہ ہے کہ گرم موسم سے پیدا ہونے والے مسائل کو دور کرنے میں کھیرے کا استعمال بہترین مانا جاتا ہے۔

یہ جسم سے گرمی کا اثر کم کرتا اور سوزش بھی دور کرتا ہے۔ اسے دیسی دوائوں میں بھی کثرت سے استعمال کیا جاتا ہے۔ کھیرا وٹامن سی کے حصول کا بہت بڑا ذریعہ ہے۔ اسے جلد کی شادابی، صفائی اور ٹھنڈک کیلئے بیرونی طور پر بھی استعمال کیا جاتا ہے۔ کھیرے کا استعمال نہ صرف آپ کو جسمانی طور پر فائدہ پہنچاتا ہے بلکہ آپ کا حسن بھی نکھارتا ہے۔ درج ذیل مضمون میں ہم آپ کو کھیرا استعمال کرنے کے دو طریقے بتا رہے ہیں جو آپ کو جسمانی طور پر صحت مند بنانے کے ساتھ جلد میں بھی نکھار پیدا کرے گا۔

خصوصیات: کھیرا جسم کو اندرونی طور پر ٹھنڈک اور تازگی پہنچاتا ہے۔ یہ جلد کے داغ دھبے دور کرکے اسے پرکشش اور جاذب نظر بناتا ہے۔ اس سے جھریاں غائب ہوتی ہیں۔ کھیرے کو گٹھیا اور جوڑوں کے درد کے علاج کے لئے بھی اتعمال کیا جاتا ہے۔ یہ دافع سوزش بھی ہے، گرمیوں میں جلد کی سرخی کم کرتا ہے، اس کے علاوہ پھیپھڑوں اور سینے کے امراض میں بھی مفید ہے۔ کھیرے سے کھانا ہضم کرنے اور وزن کم کرنے میں مدد ملتی ہے، چونکہ اس میں پانی بہت زیادہ مقدار میں ہوتا ہے اور حرارے نہ ہونے کے برابر پائے جاتے ہیں اس لئے کھیرا ان لوگوں کے لئے آئیڈیل غذا ہے جو اپنا وزن کم کرنا چاہتے ہیں جسم سے چربی پگھلانے کی خواہشمند خواتین کو چاہئے کہ سوپ اور سلاد میں کھیرے کا استعمال زیادہ کریں۔

اگر سادا کھیرا کھانا آپ کو پسند نہیں تو اسے دہی میں شامل کرکے بھی کھایا جا سکتا ہے۔ کھیرا چبانے سے آپ کے جبڑوں کی بھی ورزش ہو جاتی ہے اور اس کا کھانے کے ساتھ استعمال کھانے کو جلدی ہضم کرنے میں مدد دیتا ہے، جن لوگوں کو اکثر قبض کی شکایت رہتی ہے انہیں چاہئے کہ روزانہ کھیرا کھائیں اس سے مسئلے پر قابو پانے میں مدد ملے گی۔

کھیرے کے دیگر استعمالات: سینے میں جلن اور معدے میں تیزابیت دور کرنے کے لئے تازہ کھیرے کا جوس نکال کر پئیں یا چھلکے سمیت کھائیں، دونوں صورتوں میں آپ کو فائدہ ہوگا۔ ماہرین حسن کے مطابق کھیرے کو چھلکے سمیت کھانا آپ کی جلد کے لئے بہترین ہے۔

معدے اور چھوٹی آنت میں اگر زخم یا السر ہو تو دن میں ہر دو گھنٹے بعد سو ملی لیٹر کھیرے کا جوس پئیں۔

آنکھیں اگر سرخ ہو رہی ہوں، جل رہی ہوں یا بہت تھکی ہوئی ہوں تو ان کو آرام پہنچانے کے لئے کھیرے کے قتلے کاٹ کر ایک ایک ٹکڑا دونوں آنکھوں پر رکھ لیں اور دس سے پندرہ منٹ تک آرام سے لیٹے رہیں۔ آنکھوں کی سوزش دور کرنے کے لئے بھی روزانہ آنکھوں پرکھیرے کے قتلے کو ٹھنڈا کرکے پانچ سے دس منٹ کے لئے رکھیں۔

تیز دھوپ یا لو لگنے کی وجہ سے اگر جلد سرخ ہو گئی ہو تو اسے ٹھنڈک اور سکون پہنچانے کے لئے کھیرے کے ٹھنڈے قتل کو جلد پر رگڑیں۔

پیٹ کے کیڑے مارنے کے لئے کھیرے کے خشک بیجوں کو پیس کر کھانا مفید رہتا ہے۔

اگر آپ کی جلد کشش کھونے لگی ہے اور اس پر جھریاں نمودار ہو رہی ہیں تو تازہ کھیرے کو روزانہ اپنی غذا میں شامل کر لیں۔

 

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں

عید کے بعد حکومت کے تین امتحان

وطنِ عزیز کے سیاسی منظر نامے پرآئندہ چند ماہ میں تین عوامل اثر انداز ہو تے دکھائی دیتے ہیں۔ ان میں سے ایک معاشی، ایک عدالتی جبکہ ایک عالمی سطح پر ہونے والی تبدیلی ہے۔ سب سے پہلے معاشی معاملے کی بات کرلیتے ہیں۔آئندہ چند روز میں وفاقی بجٹ منظور کر لیا جائے گا اور یکم جولائی سے نئے بجٹ کا باقاعدہ اطلاق ہو گا۔

مفاہمت کی سیاست کا ایجنڈا

پاکستان کی قومی سیاست کو موجودہ حالات میں جو چیلنجز درپیش ہیں ان کی نوعیت سنگین ہے اور اس بحران سے نکلنے کا راستہ کسی ایک کے پاس نہیں ۔جب تک تمام سیاسی قوتیں، جن میں حکومت اور اپوزیشن جماعتیں شامل ہیں، باہمی اختلافات کو ختم نہیں کرتیںاور حالات سے نمٹنے کے لیے مشترکہ حکمت عملی اختیار نہیں کی جاتی مسائل کا حل ممکن نظر نہیں آتا۔

اونٹنی پر سیاست،وڈیرے کی طاقت

سندھ کی سیاست اس وقت صرف ایک چیز کے گرد گھوم رہی ہے اور وہ ہے اونٹنی کی ٹانگ کاٹے جانے کا واقعہ۔ یہ واقعہ گزشتہ ہفتے سانگھڑ کے علاقے منگلی میں پیش آیا جہاں ایک وڈیرے نے اپنے کھیت میں گھسنے والی اونٹنی کو غیظ و غضب کا نشانہ بناڈالا۔ وڈیرے کو غصہ تھا کہ اونٹنی کی یہ ہمت کہ وڈیرے کے مال پر منہ مارے اور وہ بھی سرعام۔ وڈیرے نے اونٹنی کو مثالِ عبرت بنا ڈالا کہ آئندہ کوئی اس کی یا اس کے مال کی طرف آنکھ اٹھا کر دیکھنے کی جرأت نہ کرے۔

لوڈ شیڈنگ کا سیاسی ہتھکنڈا

بجلی صرف عام صارفین کو ہی نہیں تڑپارہی بلکہ یہ پاکستان کا ایک بڑا سیاسی مسئلہ بن گیا ہے۔ ہرسال موسم گرما میں جوں جوں شدت آتی ہے بجلی کی لوڈشیڈنگ بڑھتی چلی جاتی ہے، ساتھ ہی صوبائی حکومتوں کا پارہ بھی چڑھنا شروع ہوجاتا ہے۔ خیبرپختونخوا اپنی ضرورت سے زیادہ بجلی پیدا کرتا ہے لیکن پھر بھی اسے پوری بجلی نہیں ملتی۔ یہی وہ موقف ہے۔

بلوچستان کا بجٹ،صحت اور تعلیم ترجیح

بلو چستان کاآئندہ مالی سال کا بجٹ 22جون کو پیش کیا جائے گا ۔اس حوالے سے بلوچستان حکومت نے اپنی تیار یاں مکمل کر لی ہیں۔ گزشتہ دنوں صوبائی وزرامیر ظہوراحمد بلیدی اورمیر شعیب نوشیروانی نے اس حوالے سے پریس کانفرنس کے دوران بتایا کہ بلوچستان حکومت 22جون کو 850ارب روپے سے زائد کا سرپلس اور عوام دوست بجٹ پیش کرنے جارہی ہے۔

کیا اتحادی جماعتوں میں پھوٹ پڑچکی؟

آزاد جموں و کشمیر میں اتحادی جماعتوں کے ارکان وزیر اعظم چوہدری انوار الحق کی کارکردگی پر مایوسی کا اظہار کررہے ہیں، لیکن انفرادی طور پر یہ اراکین حکومت سے نہ صرف ترقیاتی فنڈز وصول کررہے ہیں بلکہ اپنے انتخابی حلقوں میں من پسند تعیناتیاں اور تبادلے بھی کروارہے ہیں۔ اس سے بظاہر یوں لگتا ہے کہ اتحادی جماعتوں میں پھوٹ پڑ چکی ہے۔