رہنمائے گھر داری

تحریر : ڈاکٹر بلقیس


جلد میں جلن اکثر خواتین جلد میں جلن کی شکایت کرتی ہیں، ایسے محسوس ہوتا ہے جیسے جلد جھلس گئی ہو، وہ کسی بھی قسم کی کریم بھی استعمال نہیں کر سکتیں۔ ایسی خواتین کیلئے ایک انتہائی مفید نسخہ بتانے جا رہی ہوں۔امرود پکا ہوا ایک عدد، دہی 2چمچ، Coca powerایک کھانے کا چمچہ، انڈا ایک عدد۔ امرود کو اچھی طرح میش کر لیں، پھر اس میں باقی اجزاء ملا کر پیسٹ بنا لیں۔ اگر جلد میں زیادہ جلن ہو تو اس میں پودینہ یا کافور بھی مکس کر سکتی ہیں۔ اس پیسٹ کو 1گھنٹہ لگا کر سادہ پانی سے واش کر لیں۔

جوڑوں کا درد

اکثر خواتین کو ڈلیوری کے بعد جوڑوں میں درد رہنے لگتی ہے،ایسی خواتین درج ذیل نسخہ استعمال کریں، انشااللہ بہت آفاقہ ہو گا۔

اجزاء : گائے کا دیسی گھی1کپ، جائفل پیس کر  15سے 20عدد۔

طریقہ استعمال: دیسی گھی کو گرم کر لیں، پھر اس میں جائفل پائوڈر ڈال کر بھون لیں، دھیان رہے کہ جائفل جلے نہیں۔ ایک گلاس گرم دودھ میں 4چاول کے دانے کے برابر جائفل مکس کرکے پئیں۔

منہ کے چھالے

اکثر خواتین منہ میں چھالے نکل آنے کی شکایت کرتی ہیں، جس کی وجہ سے ان سے کھانا بھی نہیں کھایا جاتا، ان کیلئے ایک گھریلو نسخہ بتا رہی ہوں۔منہ میں چھالوں کی ایک بڑی وجہ قبض ہے، اگر آپ کو قبض رہتا ہے تو آپ پہلے اسے دور کریں، منہ کے چھالوں کے لئے میں ایک مفید نسخہ بتا رہی ہوں۔گیندے کے پھول4عدد، سوئف ایک چمچ، شہد ایک چمچ، گیندے کے پھول اور سونف کو ایک کپ پانی میں ابالیں پھر اس میں شہد مکس کرکے غرارے کریں۔

 

 

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں

عید کے بعد حکومت کے تین امتحان

وطنِ عزیز کے سیاسی منظر نامے پرآئندہ چند ماہ میں تین عوامل اثر انداز ہو تے دکھائی دیتے ہیں۔ ان میں سے ایک معاشی، ایک عدالتی جبکہ ایک عالمی سطح پر ہونے والی تبدیلی ہے۔ سب سے پہلے معاشی معاملے کی بات کرلیتے ہیں۔آئندہ چند روز میں وفاقی بجٹ منظور کر لیا جائے گا اور یکم جولائی سے نئے بجٹ کا باقاعدہ اطلاق ہو گا۔

مفاہمت کی سیاست کا ایجنڈا

پاکستان کی قومی سیاست کو موجودہ حالات میں جو چیلنجز درپیش ہیں ان کی نوعیت سنگین ہے اور اس بحران سے نکلنے کا راستہ کسی ایک کے پاس نہیں ۔جب تک تمام سیاسی قوتیں، جن میں حکومت اور اپوزیشن جماعتیں شامل ہیں، باہمی اختلافات کو ختم نہیں کرتیںاور حالات سے نمٹنے کے لیے مشترکہ حکمت عملی اختیار نہیں کی جاتی مسائل کا حل ممکن نظر نہیں آتا۔

اونٹنی پر سیاست،وڈیرے کی طاقت

سندھ کی سیاست اس وقت صرف ایک چیز کے گرد گھوم رہی ہے اور وہ ہے اونٹنی کی ٹانگ کاٹے جانے کا واقعہ۔ یہ واقعہ گزشتہ ہفتے سانگھڑ کے علاقے منگلی میں پیش آیا جہاں ایک وڈیرے نے اپنے کھیت میں گھسنے والی اونٹنی کو غیظ و غضب کا نشانہ بناڈالا۔ وڈیرے کو غصہ تھا کہ اونٹنی کی یہ ہمت کہ وڈیرے کے مال پر منہ مارے اور وہ بھی سرعام۔ وڈیرے نے اونٹنی کو مثالِ عبرت بنا ڈالا کہ آئندہ کوئی اس کی یا اس کے مال کی طرف آنکھ اٹھا کر دیکھنے کی جرأت نہ کرے۔

لوڈ شیڈنگ کا سیاسی ہتھکنڈا

بجلی صرف عام صارفین کو ہی نہیں تڑپارہی بلکہ یہ پاکستان کا ایک بڑا سیاسی مسئلہ بن گیا ہے۔ ہرسال موسم گرما میں جوں جوں شدت آتی ہے بجلی کی لوڈشیڈنگ بڑھتی چلی جاتی ہے، ساتھ ہی صوبائی حکومتوں کا پارہ بھی چڑھنا شروع ہوجاتا ہے۔ خیبرپختونخوا اپنی ضرورت سے زیادہ بجلی پیدا کرتا ہے لیکن پھر بھی اسے پوری بجلی نہیں ملتی۔ یہی وہ موقف ہے۔

بلوچستان کا بجٹ،صحت اور تعلیم ترجیح

بلو چستان کاآئندہ مالی سال کا بجٹ 22جون کو پیش کیا جائے گا ۔اس حوالے سے بلوچستان حکومت نے اپنی تیار یاں مکمل کر لی ہیں۔ گزشتہ دنوں صوبائی وزرامیر ظہوراحمد بلیدی اورمیر شعیب نوشیروانی نے اس حوالے سے پریس کانفرنس کے دوران بتایا کہ بلوچستان حکومت 22جون کو 850ارب روپے سے زائد کا سرپلس اور عوام دوست بجٹ پیش کرنے جارہی ہے۔

کیا اتحادی جماعتوں میں پھوٹ پڑچکی؟

آزاد جموں و کشمیر میں اتحادی جماعتوں کے ارکان وزیر اعظم چوہدری انوار الحق کی کارکردگی پر مایوسی کا اظہار کررہے ہیں، لیکن انفرادی طور پر یہ اراکین حکومت سے نہ صرف ترقیاتی فنڈز وصول کررہے ہیں بلکہ اپنے انتخابی حلقوں میں من پسند تعیناتیاں اور تبادلے بھی کروارہے ہیں۔ اس سے بظاہر یوں لگتا ہے کہ اتحادی جماعتوں میں پھوٹ پڑ چکی ہے۔