افغانی مسلم پلائو

تحریر : منیرا کرن


اجزاء :چکن ایک کلو، چاول تین پیالی، نمک حسب ذائقہ، ادرک لہسن پسا ہوا دو کھانے کے چمچ، فرائی پیاز ایک پیالی، ٹماٹر پانچ عدد، سرکہ دو کھانے کے چمچ، سفید مرچ پسی ہوئی ایک چائے کا چچ، پسی ہوئی لال مرچ ایک کھانے کا چمچ، آلو دو عدد درمیانے، تیز پات ایک پتہ، ہری مرچیں 11 عدد، تیل حسب ضرورت۔

ترکیب:چکن کے بڑے ٹکڑے کر کے صاف دھولیں، پھر انہیں نمک، سرکہ اور چار سے چھ پسی ہوئی ہری مرچیں لگا کر رکھ دیں۔ کچھ دیر بعد انہیں تیل میں ڈیپ فرائی کر کے نکال لیں۔ بڑے پین میں چار سے چھ کھانے کے چمچ تیل میں تیز پات ڈال کر گرم کریں اور اس میں ادرک لہسن ڈال کر ایک سے دو منٹ فرائی کریں۔ پھراس میں پیاز اور ٹماٹر کو بلینڈ کرکے ڈالیں اور ساتھ ہی نمک، لال مرچ اور سفید مرچ ڈال کر تیل علیحدہ ہونے تک بھونیں۔ آخر میں فرائی کرکے رکھی ہوئی چکن ڈال کر اچھی طرح ملا لیں۔ چاولوں کو نمک اور ہری مرچیں ڈال کر ایک کنی ابال لیں اور ان کے درمیان میں چکن کا مصالحہ رکھ دیں، کناروںپر چکن اور فرائی کیے ہوئے آلوؤں کے ٹکڑے رکھ کر اوپر سے اچار ڈال دیں۔ ڈھک کر ہلکی آنچ پر 10 سے 12 کیلئے دم پر رکھ دیں۔ ڈش میں نکالتے ہوئے اچھی طرح ملا کر نکالیں اور پیش کریں۔ 

 

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں
Advertisement

پاکستان تحریک انصاف کا مستقبل!

پاکستان تحریک انصاف اپنے قیام سے اب تک کی کمزور ترین حالت میں پہنچ چکی ہے اور ایک بحرانی کیفیت کا شکار ہے۔ تحریک انصاف کو 8 فروری کو عوام کی جانب سے بے پناہ حمایت ملی مگر وہ اقتدار میں تبدیل نہ ہو سکی۔

مریم نواز کی حکومت کے لئے چیلنجز

مسلم لیگ(ن) کی چیف آرگنائزر مریم نواز پنجاب کی وزارت اعلیٰ کی ذمہ داریاں سنبھالنے کے بعد حکومتی محاذ پر سرگرم عمل ہیں۔ نو منتخب وزیر اعلیٰ کی مسلسل میٹنگز کا عمل ظاہر کر تا ہے کہ تعلیم، صحت، صفائی نوجوانوں کے امور اور گورننس کے مسائل پر بہت سا ہوم ورک جو انہوں نے کر رکھاہے اب اس پر عمل درآمد کیلئے اقدامات کرتی دکھائی دے رہی ہیں ۔

سندھ سرکار میں عوام کہاں ہیں؟

سندھ میں چند روز پہلے احتجاج اور مار دھاڑ سے بھرپور نمائش ہوئی۔ گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس ( جی ڈی اے)نے حیدرآباد بائی پاس پر بڑا مجمع اکٹھا کیا، پھر سندھ اسمبلی کے اجلاس کے موقع پر کراچی میں بھی جی ڈی اے، جمعیت علمائے اسلام اور جماعت اسلامی کی جانب سے احتجاج کیا گیا۔اس دوران کئی سڑکیں بند ہوئیں، مظاہرین کو لاٹھی چارج اور آنسو گیس کی شیلنگ کا سامنا بھی کرنا پڑا، کچھ پکڑے بھی گئے۔

کیسا ہو گا علی امین گنڈا پور کا دور؟

پاکستان تحریک انصاف خیبرپختونخوا میں تیسری بار حکومت بنانے جارہی ہے لیکن تکنیکی طورپر یہ پی ٹی آئی کی حکومت نہیں ہوگی بلکہ سنی اتحاد کونسل کی حکومت ہوگی ۔

وزارت اعلیٰ کا تاج کس کے سر سجے گا ؟

بلوچستان میں حکومت سازی کا مرحلہ اب آخری مرحلے میں ہے۔ نو منتخب اراکین صوبائی اسمبلی کی حلف برداری کیلئے بلوچستان اسمبلی کا اجلاس گزشتہ روز طلب کیا گیا۔اسمبلی اجلاس میں مجموی طور پر 65 میں سے 57 نومنتخب اراکین نے حلف لیا۔بلوچستان اسمبلی میں ارکان کی کل تعداد 65 ہے، انتخابات کے بعد الیکشن کمیشن کی جانب سے 48 ارکان اسمبلی کی کامیابی کے نوٹیفکیشن جاری کئے گئے ہیں۔

آزادکشمیر میں تبدیلی کی سرگوشیاں!

آزاد جموں و کشمیر مسلم لیگ( ن) کے صدر شاہ غلام قادر نے گزشتہ ہفتے اس خیال کا اظہار کیاتھا کہ پنجاب اور وفاق میں مسلم لیگ( ن) کی حکومت کے قیام کے بعد ان کی جماعت گلگت بلتستان اور آزاد جموں و کشمیر میں بھی حکومتیں بنائے گی۔ شاہ غلام قادر کے اس بیان سے پاکستان پیپلزپارٹی آزاد جموں وکشمیر کے بعض لیڈروں کے اس بیان کی نفی ہوتی ہے