بشریٰ بی بی کی طلاق کا ریکارڈ طلب کرنیکی درخواست پر اعتراض کالعدم قرار

لاہور: (دنیا نیوز) لاہور ہائیکورٹ نے بشریٰ بی بی اور خاورمانیکا کے درمیان طلاق کا ریکارڈ طلب کرنے کے لیے درخواست پر رجسٹرار آفس کا اعتراض کالعدم قرار دیدیا۔

لاہور ہائیکورٹ میں سابق خاتون اول بشریٰ بی بی اور خاور مانیکا کی طلاق کا ریکارڈ طلب کرنے کے لیے اعتراضی درخواست پر سماعت ہوئی، جسٹس عاصم حفیظ نے آفاق احمد ایڈووکیٹ کی درخواست پر سماعت کی۔

عدالت عالیہ نے طلاق کا ریکارڈ طلب کرنے کی درخواست پر رجسٹرار آفس کے اعتراض کو کالعدم قرار دیتے ہوئے رجسٹرار آفس کو درخواست پر نمبر لگا کر سماعت کے لیے مقرر کرنے کا حکم دیدیا۔

قبل ازیں رجسٹرار آفس نے درخواست پر درخواست گزار کے متاثرہ فریق نہ ہونے کا اعتراض عائد کیا تھا۔

واضح رہے کہ لاہور ہائیکورٹ میں دائر درخواست میں درخواست گزار کی جانب سے مؤقف اختیار کیا گیا کہ قانون کے مطابق طلاق یونین کونسل میں رجسٹرڈ ہونے کے بعد مؤثر ہوتی ہے، طلاق کی دستاویزات متعلقہ یو سی میں جمع ہونے کے بعد عدت کا دورانیہ شروع ہوتا ہے۔

درخواست گزار نے عدالت سے استدعا کی تھی کہ لاہور ہائیکورٹ یونین کونسل کا ریکارڈ اور خاور مانیکا کو وضاحت کیلئے طلب کرے۔ 

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں