نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- کراچی:کشمیرروڈپرڈکیتی کےدوران نوجوان کےقتل کامعاملہ
  • بریکنگ :- کراچی:ایس آئی یوپولیس کاگلشن اقبال میں چھاپہ
  • بریکنگ :- کراچی:گرفتاری کےڈرسےملزم نےخودکشی کرلی
  • بریکنگ :- کراچی:ہلاک ملزم علی فرزندپولیس اہلکارتھا،پولیس
  • بریکنگ :- کراچی:ملزم نےڈکیتی مزاحمت پرفائرنگ کرکےشاہ رخ کوقتل کردیاتھا
Coronavirus Updates

پردے گھروں کی سجاوٹ کا اہم جزو

تحریر : سائرہ جبین


کھڑکیاں ہر گھر کی ضرورت ہیں کوئی فن تعمیر ہو در بچوں کی اہمیت یکساں رہتی ہے۔ ہوا کا گزر روشنی کا نکاس اور آرائشی نقطہ نظر سے ان دریچوں کی انفرادیت پردوں کی بدولت اور بھی بڑھ جاتی ہے۔ پچھلے 10 برسوں سے پردوں کی سلائی، کپڑے آرائشی زاویے اور دیوار کی سطح کے استعمال میں اسلوبیاتی انقلاب آ چکا ہے۔

اب جب آپ جدید طرز کے آرائشی پردوں والے کسی کمرے میں قدم رکھتی ہیں تو طبیعت تازہ دم ہو جاتی ہیں۔ نفاست اور سلیقہ کا یہ امتزاج آپ کو خوشی دیتا ہے مگر یہ سب کچھ اتنا آسان نہیں ہے۔ ذیل میں ہم خواتین کی رہنمائی کیلئے جدید طرز کے پردوں سے متعلق کچھ ٹپس دے رہے ہیں جو یقیناً آپ کیلئے کار آمد ہوں گے۔

ڈوریاں: پردوں کی ایسی قسمیں جس میں جوڑے فیتے یا پتلی ڈوری کے ساتھ ایک یا آدھے پردے کو تسمے کی مانند باندھ کر کھڑکی کو نیم دار دریچے کی شکل دی جائے آپ ایسے پردوں کو روشنی کی ضرورت اور مقدار کے حساب سے اکٹھا کرکے علیحدہ سے ڈوری لگا دیں اور آدھے حصے کے پردے کو کھلا رہنے دیں۔

لوہے یا لکڑی کا ڈنڈا:اب بیشتر ڈیزائنرز دھاتی میٹریل کے راڈ استعمال کرنے کو ترجیح دیتے ہیں۔پردوں کی دکانوں پر ہمہ اقسام کے راڈ دستیاب ہیں۔ ان کی وجہ سے پردوں کی ظاہری وضع قطع خوبصورت نظر آتی ہے۔

پلیٹیں یا شکنیں:ان سے مراد لی جاتی ہے کہ آپ نے پردے کی آرائشی زاویے سے کیسی پلیٹیں یا شکنیں ڈال کر ان کی جاذبیت بڑھائی ہے۔ اب پلیٹیں بھی ہمہ اقسام کی نظر آ رہی ہیں۔ باریک، درمیانی، زیادہ جگہ گھیرنے والی یا پنسل پلیٹ، کچھ خواتین پردوں کے ’’ہیڈر‘‘ یعنی چھوٹے پردوں کی اوپر والی سطح کو ابھارنے والے پردے پسند کرتی ہیں۔ یہ شاہانہ انداز کے پردے ہوتے ہیں۔ بڑے ڈرائنگ رومز میں خوب جچتے ہیں۔ 

پردے کا ٹیپ :یہ پردوں کو تین مختلف سمتوں سے کنڈے میں اٹکاتا ہے۔ اس کے ساتھ چھلوں کی حرکت یقینی ہو جاتی ہے۔ اگر آپ راڈ کو ڈھکنے والے پردے پسند کرتی ہیں تو اس کیلئے زائد کپڑا درکار ہوگا جو بلاشبہ دیکھنے میں بے حد پرکشش اور جاذب نظر ہوتے ہیں۔

 لہریئے دار:پردوں کی یہ شکل ان دنوں مارکیٹ میں زیادہ نظر آتی ہے۔ یہ بے حد آرائشی نہیں ہوتے سادہ سے فریم یا ٹریک پر بڑے بڑے سوراخوں میں پروئے ہوئے لہر کی شکل کے یہ پردے ہر کمرے کیلئے موزوں ہوتے ہیں۔ بڑے بڑے رنگوں میں آرام سے کپڑے کے ہر طرح کے میٹریل کا گزر ہوتا ہے۔ یہ پردے کھلے ہوں یا بند دونوں زاویوں سے پرکشش اور جاذب ہوتے ہیں۔

پردوں کا کیسے رکھنا ہے خیال:اگر آپ کے گھر میں ویکیوم کلینر ہے تو اس کی مدد سے پردوں کی صفائی روزانہ کا معمول بنا لیں۔ اگر آپ نے صفائی کی یہ عادت اپنا لی تو جان لیجئے کہ ڈرائی کلینر اور دھلائی کے اخراجات پر قابو پا لیں گی۔

پردوں کے راڈ گرد آلود اور ٹیڑھے ہو سکتے ہیں چنانچہ ان کی صفائی بھی بہت ضروری ہے۔ کبھی گیلے کپڑے سے راڈ صاف نہ کریں۔

پردوں کی لائننگ جالی دار کپڑے کی ہو یا نائلون مکس کئے ہوئے کسی میٹریل سے دونوں ہی اضافی روشنی اور گردو غبار کو پردے تک منتقل کرنے میں رکاوٹ بنتی ہے۔ یہ آپ کے قیمتی پردے کی محافظ بھی ہیں۔

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں
Advertisement

چار ملکی کرکٹ سیریز کی پاکستانی تجویز، ایشیا کپ اور چمئینز ٹرافی کا میزبان پاکستان، بھارت پریشان

کیا مودی حکومت میں پاک بھارت کرکٹ ممکن ہے؟،آئی سی سی کے آئندہ اجلاس میں پی سی بی پاکستان ، بھارت ، آسٹریلیا اور انگلینڈ کے درمیان سیریز کی تجویز پیش کرے گا

73ویں پنجاب گیمز:نئے ٹیلنٹ کی تلاش

منتخب کھلاڑی لاہور میں ہونیوالے کھیلوں میں حصہ لیں گے،سپورٹس ڈیپارٹمنٹ اور ایسوسی ایشنز شفاف ٹرائلز کے ذریعے کھلاڑیوں اور ٹیموں کاانتخاب کرنے میں مصروف

پیاز کی کہانی ڈاکٹر بینگن کی زبانی

دورکسی جگہ ایک سر سبز اور زرخیز میدان میں مختلف سبزیوں کی حکمرانی تھی یہاں کسی انسان کا گزر نہیں تھا۔ وہ آزادی سے کھیلتی کودتی تھیں۔ سب میں بڑا اتحاد تھا صرف ایک پیاز ہی تھی جس سے سب دور رہتے تھے۔

اور اعتبار ٹوٹ گیا

اسد علی کو اللہ تعالیٰ نے دولت، جائیداد، اولاد، صحت غرض سب نعمتیں عطا کی ہوئی تھیں۔ وہ بہت خوش حال زندگی گزار رہے تھے۔ گائوں کا نمبردار وڈیرہ ہونے کے باوجود اس میں غرور و تکبر نام کی کوئی چیز نہ تھی۔

بچوں کا انسائیکلو پیڈیا

برف پر پھسلنابرف کی سطح بہت چکنی ہوتی ہے جب آپ کے جوتے کا چکنا تلا اس پر لگتا ہے تو آپ کو آسانی سے پھسلنے سے کوئی چیز نہیں روک سکتی۔ برفانی کھڑائوں (skates)سے پھسلنا اور زیادہ آسان ہو جاتا ہے۔ آپ کا وزن کھڑائوں کے نیچے برف کو پگھلا کر پانی کی تہہ بنا دیتا ہے۔ اس لئے کھڑائوں کے تلے پر لگے بلیڈ بہت پھسلواں ہو جاتے ہیں۔

ذرا مسکرائیے

استاد کلاس میں ایک ڈبہ لے کر آئے۔ لڑکوں نے پوچھا ،’’ استاد جی ! اس ڈبے میں کیا ہے ؟‘‘استاد نے کہا ، ’’ جو درست بتائے گا ، اسے اس ڈبے سے دو پنسلیں ملیں گی۔‘‘٭٭٭