نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- رنگ روڈراولپنڈی منصوبہ،فیکٹ فائنڈنگ کمیٹی کی رپورٹ مکمل
  • بریکنگ :- چیف سیکرٹری پنجاب نےرپورٹ وزیراعلیٰ عثمان بزدارکوبھجوادی،ذرائع
  • بریکنگ :- وزیراعلیٰ پنجاب کی تحقیقاتی رپورٹ پبلک کرنےکی منظوری،ذرائع
  • بریکنگ :- وزیراعلیٰ عثمان بزدار کاذمہ داران کیخلاف بلاامتیازکارروائی کاحکم،ذرائع
Coronavirus Updates
کالم نگار آج کے کالمز
"MIK" (space) message & send to 7575
ہوش میں نہ آنے کی وبا 2021-05-12 غیر روایتی معیشت کی طرف 2021-05-10 ایک اور نشانی 2021-05-06 اچھا بولے بغیر چارہ نہیں 2021-05-05 یونہی نہیں مل جاتی کامیابی 2021-05-04 خوف سے بچ کے رہنا ہے 2021-04-30 فہم، مقصد اور زندگی 2021-04-28 جانتے تو ہم بھی ہیں، مگر… 2021-04-21 ڈھلتی عمر کا فسانہ 2021-04-19 ’’خندۂ بے جا‘‘ کا عذاب 2021-04-15 گیم چینجر 2021-04-13 افکارِ پریشاں کا جنتر منتر 2021-04-12 نالج انڈسٹری 2021-04-11 دوست ’’جیتنے‘‘ پڑتے ہیں 2021-04-10 یہ آگ بجھانا ہی پڑے گی! 2021-04-09 بھیڑ ہے قیامت کی پھر بھی ہم اکیلے ہیں 2021-04-08 اندھیرے میں دِیا 2021-04-07 صلاحیت سے کئی قدم آگے 2021-04-06 Money Pakistan 2021-04-05 پیار جھوٹا نہ ہو‘ پیار کم ہی سہی 2021-04-04 زمانۂ غار کی واپسی 2021-04-03 ہر جن بوتل سے باہر 2021-04-02 اِک نئے دور کا آغاز ہوا چاہتا ہے 2021-04-01 فرار کی کوئی راہ نہیں 2021-03-31 دل کی لگام تھامے رہیے 2021-03-30 جلد از جلد جاگنا ہے 2021-03-29 یہ نہ تھی ہماری قسمت … 2021-03-28 ٹال مٹول، ڈبّا گول 2021-03-27 اِک اور دریا کا سامنا ہے… 2021-03-26 آپ، تم، وہ، مگر … 2021-03-25 زبردستی کی بے عملی 2021-03-24 مگر جو کھو گئی وہ چیز کیا تھی؟ 2021-03-23 جمہوریت کا منجن 2021-03-22 ہمیں تو اپنے مسائل کی فکر ہے صاحب 2021-03-21 خواتین دو راہے پر؟ 2021-03-20 جیسے سگنل پہ رُک گئی ہو ریل 2021-03-19 فرق دکھائی دینا چاہیے 2021-03-18 کیا آپ دلیپ کمار ہیں؟ 2021-03-17 ’قلم برداشتہ‘ سوچ سے گریز 2021-03-16 خلوص کے بندوں کی خامی 2021-03-15 ’’غیر متعلقات‘‘ کا سمندر 2021-03-14 کائنات کا مطالبہ 2021-03-13 ترقی… کیوں مذاق کرتے ہیں جناب! 2021-03-12 یہی تو عمر ہوتی ہے 2021-03-11 یہ کھیل سمجھنا کھیل نہیں 2021-03-10 کراچی پھر ’’معلّق‘‘ رہ گیا 2021-03-09 اب ناکامی کی گنجائش نہیں! 2021-03-08 قصہ اک عمر کی ریاضت کا 2021-03-07 معیار سے بھی ایک قدم آگے 2021-03-06 ذہن کو کام کرنے دیجیے 2021-03-05 محض سیاسی بصیرت کا آپشن 2021-03-04 ذہن کہاں رہ گیا ؟ 2021-03-03 کب جاگے گا امریکا؟ 2021-03-02 امریکا، یورپ اور چین 2021-03-01 ہماری باتیں ہی باتیں ہیں … 2021-02-28 معاشرے یونہی نہیں بدلتے 2021-02-27 اُلجھنستان 2021-02-26 بدحواسی سے بدعنوانی تک 2021-02-25 جمہوریت توجہ چاہتی ہے 2021-02-24 معاشی سوچ کا المیہ 2021-02-23 ہم بھی وہاں موجود تھے… 2021-02-22 نئی زندگی کی طرف؟ 2021-02-21 بھوسے میں سُوئی 2021-02-20 فکر ہو تو صرف وہاں کی 2021-02-19 یہ سب اِتنا آسان نہیں 2021-02-18 تماشے کی تلاش 2021-02-17 تم آسماں کی بلندی سے جلد لوٹ آنا 2021-02-16 بیلنسنگ ایکٹ کا مرحلہ 2021-02-15 جو بڑھ کر اٹھالے یہ ساغر اُسی کا 2021-02-14 اِک ذرا چھیڑیے … 2021-02-13 بے حسی کی چوکھٹ ہے … 2021-02-12 سبھی کچھ مشروط ہے مطالعے سے 2021-02-11 مان نہ مان، میں ہوں ’’جانکار‘‘ 2021-02-10 جادو کا کھلونا 2021-02-09 بیچ کے بے چارے 2021-02-08 بھارت کی نئی کھیتی 2021-02-07 بڑوں پر یہ وقت بھی آنا تھا ؟ 2021-02-06 یہ کمبل اُتار پھینکیے 2021-02-05 اِس حسیں راہ سے گاتے گاتے گزر جائیے 2021-02-04 … ہمیں یاد بھی نہیں اب تو 2021-02-03 انکار سے گریز لازم ہے نہ بہتر 2021-02-02 وہ دنیا ہاتھ سے جانے نہ پائے 2021-02-01 میرج لکی سرکس 2021-01-31 یہ کہاں آگئے ہم؟ 2021-01-30 معذرت بھی سوچ سمجھ کر 2021-01-29 مودی شاید بھول گئے تھے 2021-01-28 بچے ہمارے عہد کے… 2021-01-27 اب دل کو کسی کروٹ آرام نہیں ملتا 2021-01-26 وہاں بھی ملبہ ہی رہ جاتا ہے 2021-01-25 سوکھے ٹکڑے‘ ٹوٹی کھاٹ 2021-01-24 ’’شیر‘‘ کا شکریہ 2021-01-23 ’’قولِ فیصل‘‘ کی تلاش 2021-01-22 دیکھو یہ کون آ گیا! 2021-01-21 دم توڑتی جمہوریت؟ 2021-01-20 مزا تو جاچکا ہے 2021-01-19 کئی کشتیوں کے مسافر 2021-01-18 سادہ کاغذ پر ’’اصلاح‘‘ 2021-01-17 چھینٹے 2021-01-16 روٹھنا منع ہے 2021-01-15 زبردستی کا ’’ضبط ِ نفس‘‘ 2021-01-14 پورا وجود درکار ہے 2021-01-13 اور اب ’’گائے سائنس‘‘ 2021-01-12 بُری عادتوں کا جنجال پورہ 2021-01-11 جلدی کس بات کی ہے؟ 2021-01-10 شعلہ سا ’’بھڑک‘‘ جائے، آواز تو دیکھو! 2021-01-09 اب اِس قدر بھی نہ چاہو کہ … 2021-01-08 ماہرین کا سبز باغ 2021-01-07 ہم ایسے گئے گزرے ہرگز نہیں 2021-01-06 ٹوکری اور انڈے 2021-01-05 ’’ہیرو‘‘ کی تلاش 2021-01-04 بے ذہنی کا اندھا کنواں 2021-01-03 بیڑیاں 2021-01-02 وقت کو سمجھے بنا چارہ نہیں 2021-01-01 کاروباری جنگ میں اصل فتح 2020-12-31 مزا جینے کا لینا ہے 2020-12-30 … آرام بہت ہے 2020-12-29 … ذرا آہستہ چل! 2020-12-28 لوگ بھی تو اپنے حصے کا کام کریں 2020-12-27 قدم بڑھتے رہیں، رُکنے نہ پائیں 2020-12-26 اپنا وجود بالائے طاق نہ رہے 2020-12-25 یقینا آپ دیوانے ہوئے ہیں 2020-12-24 کتاب پیچھے رہ گئی 2020-12-23 ناکامی کے اسباق 2020-12-22 سمارٹ زندگی 2020-12-21 ’’میں‘‘ سے ’’ہم‘‘ تک 2020-12-20 تادیر رہنے کی عادت 2020-12-19 ہچکولے 2020-12-18 گھر گھر کی کہانی 2020-12-17 خون خشک کرنے والا معاملہ 2020-12-16 کیوں مذاق کرتے ہیں صاحب! 2020-12-15 جو ٹھہرا وہی سکندر 2020-12-14 بدحواسی سے دامن بچاتے ہوئے 2020-12-13 سَند نہیں، شخصیت 2020-12-12 سمارٹ ہونا پڑے گا 2020-12-11 ادب کی ’’خدمت‘‘ 2020-12-10 یونہی نہیں مٹ پائے گی کرپشن 2020-12-09 جو کام کا نہیں وہ آپ کا نہیں 2020-12-08 بڑا جادو 2020-12-07 کراچی منتظر ہے 2020-12-06 وقت کا جادو 2020-12-05 اِسے کہتے ہیں ڈٹ جانا 2020-12-04 قوتِ ارادی کے کمالات 2020-12-03 شادمانی کا پہلا نمبر 2020-12-02 لوگ آسانی سے نہیں مانتے 2020-12-01 بلا ٹالنے کا ہنر 2020-11-30 ’’پکانا‘‘ سیکھئے 2020-11-29 تخلیقی جوہر اور اعتماد 2020-11-28 اچھی زندگی کی تلاش 2020-11-27 بے باکی چاہیے‘ بے باکی! 2020-11-26 ’’کچہری‘‘ 2020-11-25 مینڈک نگلنے کا مرحلہ 2020-11-24 وہ آ تو جائے مگر انتظار ہی کم ہے 2020-11-23 نِوالوں کی لڑائی 2020-11-22 ’’راز‘‘ کی بات 2020-11-21 خطروں سے کھیلنا تو پڑے گا 2020-11-20 بے خاک کے چھانے ہوئے زر کس کو ملا ہے؟ 2020-11-19 منصوبہ سازی کا جادو 2020-11-18 … آنکھیں رہ گئی ہیں 2020-11-17 کام وہی جو من بھائے 2020-11-16 اب کچھ تو ہونا چاہیے 2020-11-15 کچھ بھی اچانک نہیں ہوتا 2020-11-14 یہ لُوٹ مار درست نہیں 2020-11-13 شکایات سے پاک زندگی 2020-11-12 کامیابی کی شاہ کلید 2020-11-11 کی اُن کی آرزو بھی‘ رہے بے قرار بھی 2020-11-10 گفتگو بچوں کا کھیل نہیں 2020-11-09 ترکی مغرب کو کیوں برا لگ رہا ہے؟ 2020-11-07 … جھجکنے کی ضرورت کیا ہے؟ 2020-11-06 امریکا سے سیکھئے 2020-11-05 انتقالِ علم و فن 2020-11-04 کڑوی گولی 2020-11-03 کبھی کبھی یہ کام بھی کرلینا چاہیے 2020-11-02 ’’زر فہمی‘‘ 2020-11-01 مہنگائی اور غربت کے باوجود 2020-10-30 غلطی ہی سکھاتی ہے 2020-10-29 دن کی پہلی خوراک 2020-10-28 جی ہاں! مائنڈ سیٹ! 2020-10-26 مفہوم و مقصد کی تلاش 2020-10-25 زرخیز ذہن‘ زرخیز نتائج 2020-10-24 شیر اور بکری 2020-10-23 انسانیت کو ڈکارتا غذائی بحران 2020-10-22 وہ گانے کے لیے آئے تھے 2020-10-21 اپنے آنگن کی فکر 2020-10-20 منقسم ذہن 2020-10-19 سیکھنا ایسا آسان نہیں 2020-10-18 امکان کی نفسیات 2020-10-17 بڑے کردار کی تیاری 2020-10-16 نہ سوچنے کی گنجائش نہیں 2020-10-15 دل کو یوں آگ لگاؤں کہ دھواں بھی نہ ملے! 2020-10-14 جھیلتے رہنے کی عادت 2020-10-13 بے ہنگم زندگی اور بدگوئی کا عذاب 2020-10-12 افغانستان میں پھر آگ بھڑکانے کی تیاری؟ 2020-10-11 کیا وہ وقت آ پہنچا ہے؟ 2020-10-10 نئی قیادت‘ نیا کراچی 2020-10-09 … کھجور میں اٹکا 2020-10-08 پوچھنے والے جیتے 2020-10-07 بے یقینی سے نجات 2020-10-06 ہڈی نہ چھچھوندر 2020-10-05 مثبت فکر کے تین بنیادی ستون 2020-10-04 اقرار و انکار کا بکھیڑا 2020-10-03 کیسے دعوے‘ کہاں کا موازنہ؟ 2020-10-02 جو آکے نہ جائے… 2020-10-01 چار دشمن 2020-09-30 بگڑتے دیر نہیں لگتی 2020-09-29 جتیندر بمقابلہ سجاد حسین 2020-09-28 مٹی سے سونا نکالنے کا ہنر 2020-09-27 پردے کے پیچھے 2020-09-26 وہی ہے دشمن جو بھٹکائے 2020-09-25 پیر کے مُرید 2020-09-24 سمندر میں کودنے سے پہلے 2020-09-23 اوسط درجے کی زندگی 2020-09-22 تعمیل لازم ہے 2020-09-21 نیا امریکی منجن 2020-09-20 یہ کھیل ہے ذمہ داری کا 2020-09-19 شکستہ پائی نے اپنی ہمیں سنبھال لیا 2020-09-17 قیمت چکانے کی تیاری 2020-09-16 رونا پیٹنا کوئی آپشن نہیں 2020-09-15 جامعیت کا پھندا 2020-09-14 ناکام ہونے کا بہترین طریقہ 2020-09-12 غصے سے جنون تک 2020-09-11 خود کو آزمائے بغیر چارہ نہیں 2020-09-10 … یہ تین برس کتنے سال کے ہوں گے! 2020-09-09 خود پسندی کا زہر 2020-09-08 ہار کو جیت میں بدلنا ناممکن نہیں 2020-09-07 ایک کتاب‘ دس اسباق 2020-09-05 کیا اب بھی نہ جاگیں گے؟ 2020-09-04 طویل المیعاد منصوبہ 2020-09-03 لیپا پوتی 2020-09-02 لوگ کیا کہیں گے؟ 2020-09-01 سنجیدگی شرطِ اوّل ہے 2020-08-30 زمانہ بعد از کورونا 2020-08-28 …جس نے سیکھا وہی سکندر 2020-08-27 گریس مارکس 2020-08-26 حساب کون دے گا؟ 2020-08-25 کیا خاک جئیں … 2020-08-24 نالے پھر اُبل پڑے 2020-08-23 سوچنا ووچنا کیا؟ 2020-08-22 پرانے پاپی 2020-08-21 پچاس دشمنوں کا تریاق 2020-08-20 چوٹی کی بات 2020-08-19 تماشا کب تک دیکھا جائے؟ 2020-08-18 … اُن کو ’’پیار‘‘ آہی گیا! 2020-08-17 اب ’’دِلّی‘‘ دور نہیں؟ 2020-08-16 دنیا ختم نہیں ہوگئی 2020-08-15 طوفان کو نہ دیکھ، ستم ناخدا کے دیکھ 2020-08-14 ہائے بس چلتا نہیں، کیا مفت جاتی ہے بہار 2020-08-13 اپنے آپ کچھ ہونے والا نہیں 2020-08-12 اُن کو مِرے مرنے پر آئی تو ہنسی آئی 2020-08-11 ناکامی کے خوف سے ایک قدم آگے 2020-08-10 کہاں کے دانا ہیں‘ کس ہنر میں یکتا ہیں 2020-08-09 مذمت نہیں‘ مرمت 2020-08-08 … آستانے بہت ہیں 2020-08-07 جو آشیاں میں ہے اپنے وہ باغ بھر میں نہیں 2020-08-06 یہ کھیل ہے ہمت کا 2020-08-05 ’’لین دین‘‘ اور واپسی 2020-08-04 عادی مجرم 2020-07-31 سامنے آفتاب ہے اور کہیں روشنی نہیں 2020-07-30 گزر چکی ہے یہ فصلِ بہار ہم پر بھی 2020-07-29 اب دنیا کو تبدیل ہونا پڑے گا 2020-07-28 جس سے کسی کو رنج ہو ایسا بیاں نہ چھیڑ 2020-07-27 کیا دن تھے جب کہ دل میں محبت کا جوش تھا 2020-07-25 … بارش کی مہربانی سے 2020-07-24 بے مزا رہتے ہیں ہم کچھ تو مزا ہے اِس میں 2020-07-23 صبر طلب 2020-07-22 ترے قتیل بتاتے نہیں تجھے قاتل 2020-07-20 اب وہ صحرا ہی نہیں 2020-07-19 تہیہ کرنے کی دیر ہے بس! 2020-07-17 زندگی ہے نام لطف ِ صحبت ِ احباب کا؟ 2020-07-16 ادب برائے زندگی 2020-07-15 زندگی بھر کی تعلیم 2020-07-14 ناکام کون نہیں؟ 2020-07-13 ’’غریبانہ‘‘ آئے، صدا کر چلے! 2020-07-12 ڈرنے کی ضرورت تو ہے 2020-07-09 بیمار ترے جاں سے گزر جائیں تو...! 2020-07-07 ظاہر ہے کہ منہ پھیر لیا ہم سے خُدا نے 2020-07-06 … بدتر ڈوب کر مرنے سے ہے جینا سہارے کا 2020-07-04 فکرِ معاش ‘یعنی غم ِ زیست …! 2020-07-03 اب ‘دیکھیے کیا حال ہمارا ہو … ! 2020-07-02 پہلے ’’کاٹھ کباڑ‘‘ ٹھکانے لگایا جائے 2020-07-01 گزریے گا بچتے بچاتے! 2020-06-30 … جذبات میں کیا رکھا ہے! 2020-06-29 زندہ دِلی بڑی چیز ہے 2020-06-25 ’’جا بیل‘ اُسے مار!‘‘ 2020-06-24 یہ تو غضب ہوگیا 2020-06-23 ہر رنگ میں راضی بہ رضا ہو تو مزا دیکھ 2020-06-22 کچھ دے کر جانا ہے ! 2020-06-21 عمر کی تو کوئی قید نہیں 2020-06-20 ’’ویلیو ایڈیشن‘‘ 2020-06-19 کل نہیں‘ آج! 2020-06-18 ’’اٹھو بیٹا‘ آنکھیں کھولو! ‘‘ 2020-06-17 سنجیدگی اور محنت 2020-06-16 ایک نئی تحریک کی ضرورت 2020-06-15 نَفس کا جھگڑا 2020-06-14 راتوں رات … مگر کیوں؟ 2020-06-13 ذاتی مفاد تو مقدم رکھا جانا چاہیے 2020-06-11 ’’ٹارزنز‘‘ کی واپسی 2020-06-10 مزاج اور کردار 2020-06-09 مقصد سے محرومی کا عذاب 2020-06-08 ذہن کو بچانا ہے ! 2020-06-07 غلطی کا تسلسل… 2020-06-06 بدحواسی کا پھیلتا دائرہ 2020-06-05 سمجھ میں کیوں نہیں آتا؟ 2020-06-04 ’’غیر شخصی‘‘ زندگی 2020-06-03 وہ جو تاریک راہوں میں مارے گئے 2020-06-02 اب‘ یہ تماشا ختم ہونا چاہیے ! 2020-06-01 معمول نہیں ’’نیا معمول‘‘ 2020-05-31 خطرے کا گھنٹا 2020-05-30 ایک غلطی … اور کھیل تمام! 2020-05-28 تیار تو رہنا پڑے گا 2020-05-27 جنابِ شیخ کا نقشِ قدم … 2020-05-23 مکھن اور چُونا 2020-05-22 یہ تو ہوگا 2020-05-19 کوئی سبق نہیں سیکھا جارہا 2020-05-18 پریشانی میں کوئی کام جی سے ہو نہیں سکتا 2020-05-13 گزر تو جائے گی‘ مگر … 2020-05-12 مان لینے سے قد نہیں گھٹتا 2020-05-11 نظم و ضبط اب لازم ٹھہرا 2020-05-10 کسی اور آزمائش کا انتظار؟ 2020-05-09 بہانوں کو ’’قرنطینہ‘‘ کیجیے ! 2020-05-08 ہم جانتے ہیں ! 2020-05-06 کنزیومر اِزم کا اندھا کنواں 2020-05-04 قصہ مرزا کی ’’زباں بندی‘‘ کا 2020-05-02 ’’لوگ ڈاؤن‘‘ 2020-04-30 فیصلہ کن لمحات 2020-04-29 آپ اپنے دام میں صیّاد آگیا؟ 2020-04-24 کوئی کسی اور دُنیا کا نہیں 2020-03-31 ’’حاضر جناب!‘‘ 2020-03-11 … تو کدھر جائیں گے؟ 2020-03-10 غیرت کے جاگنے کا وقت یہی ہے 2020-03-09 پورس کا نیا ہاتھی 2020-03-03 آرام سے ہیں وہ کہ جو محنت نہیں کرتے 2020-02-28 اچھی خبر 2020-02-26 زندگی کا بیانیہ ! 2020-02-24 کسی کی بس نہیں چلتی، کسی کا بس نہیں چلتا! 2020-02-23 سوچتے رہنے کا وقت گیا 2020-02-22 سب سے پہلے : آپ اور کون؟ 2020-02-18 چیزیں نہیں‘ ہم بدلتے ہیں 2020-02-15 چھوٹی چھوٹی خرابیوں کا جال 2020-02-13 نعمت بن جائیے ! 2020-02-11 کتاب کی حکومت 2020-02-10 افلاس اور جرم پسندی 2020-02-08 ذرا سی تو یہ زندگی ہے! 2020-02-07 خود غرضی بُری نہیں‘ مگر 2020-02-06 دریافت سے ایجاد تک! 2020-02-04 محض صلاحیت کافی نہیں 2020-02-03 غریب اور تبدیلی ! 2020-02-02 ہے بھیڑ اتنی‘ پر دل اکیلا …! 2020-01-31 بیزاری سے ہوشیار ! 2020-01-30 بے ذہنی کا چڑھتا دریا 2020-01-29 موزونیت کی تلاش 2020-01-24 گزارا ہو تو کیسے ہو؟ 2020-01-23 سیکھنا تو پڑے گا 2020-01-22 طاقتور کون؟ 2020-01-20 آپ ہیں‘ پائلٹ ! 2020-01-19 کوئی ویرانی سی ویرانی ہے 2020-01-18 ذہنی سطح کا بکھیڑا 2020-01-17 مزا تو جب ہے کہ … 2020-01-14 وہ وقت یاد کیجیے ! 2020-01-13 ناکامی کی کہانیاں 2020-01-11 غیر جانب دار ذہن 2020-01-10 اپنی ذات میں سِمٹنے کی وباء 2020-01-08 ایک غلامی یہ بھی تو ہے 2020-01-07 کمرے کا درجۂ حرارت 2020-01-04 رُکی رُکی سی زندگی ‘ مگر کیوں؟ 2020-01-02 لَت کی چوکھٹ 2020-01-01 پیش رفت درکار ہے 2019-12-31 اپنی مرضی کی زندگی 2019-12-30 آرزوؤں اور اُمیدوں کے گڑھے 2019-12-28 اپنی دریافت کا سفر 2019-12-26 بھٹکتے ذہن کا فسانہ 2019-12-25 اب‘ کس کا انتظار ہے ؟ 2019-12-24 ’’احتجاجستان‘‘ 2019-12-23 شُتر مرغ کی پیروی کیوں؟ 2019-12-21 خالی برتن 2019-12-19 بولنے اور سُننے کی ہمت 2019-12-17 اپنے اپنے ’’گول دائرے‘‘ 2019-12-15 ’’غلامانِ شب‘‘ 2019-12-13 ’’عالمی دارالحکومت‘‘ 2019-12-12 پیاز‘ ٹماٹر اور بالا دستی 2019-12-10 بِلّی دُور، چُوہے مسرور! 2019-12-08 عدم برداشت بھی لازم ٹھہری 2019-12-07 نئی زبان‘ نئی دنیا 2019-12-05 معلومات‘ علم اور دانش 2019-12-04 مثالی زندگی 2019-12-03 کچھ نہیں رُکتا 2019-12-02 سٹیو جابز کی دانش 2019-12-01 کام اور زندگی 2019-11-30 دباؤ ٹالنا نہیں‘ جھیلنا ہے 2019-11-29 خوف کو خیرباد کہہ دیجیے ! 2019-11-27 خواہشات کا آئینہ 2019-11-26 دُم پر پاؤں 2019-11-25 ہر بے وفا کا شکریہ 2019-11-21 … ٹَڈی دَل اور ٹڈی دِل 2019-11-20 وہی … گزارے کی سطح! 2019-11-19 سمجھتے کیوں نہیں؟ 2019-11-16 ایک موقع ہی کافی ہے 2019-11-15 سب سے بڑھ کر … اظہار 2019-11-12 پہلے دروازہ یقینی بنائیے 2019-11-09 مہا راج ڈرے ہوئے ہیں 2019-11-08 فریب ِ ذات سے آگے کی دنیا 2019-11-06 ہنسنے پہ کبھی رو دیتا ہوں… ! 2019-11-05 بولنا ہی پڑتا ہے 2019-11-02 گٹکے نے پھر میدان مار لیا 2019-10-31 للکار سے پیار 2019-10-28 کام سے کام رکھنا ہے ‘کام آپ کا 2019-10-25 بی جے پی کا سرکس 2019-10-24 یہ پارٹی ہے‘ جناب! 2019-10-23 اہداف ’’ڈراؤنے‘‘ ہونے چاہئیں 2019-10-22 ’تادیب‘‘ کا شوق 2019-10-21 چلنا جیون کی کہانی … 2019-10-19 اپنا اپنا اندھیرا 2019-10-17 مور کے پاؤں 2019-10-16 … چند ہی قدموں پہ تھک کے بیٹھ گئے! 2019-10-15 لیموں نچوڑنے سے بنے گی نہ کوئی بات 2019-10-14 غلامی ہو تو ایسی ہو! 2019-10-11 مَرے تھے جن کے لیے … ! 2019-10-09 دل بڑا ہونا چاہیے ! 2019-10-08 مرضی نہیں چلے گی… ! 2019-10-07 تذبذب کی دلدل سے اب تو نکلیے 2019-10-05 بیانیے 2019-10-03 اپنی چال ہی بھول نہ جانا 2019-10-02 … یہ کیا تماشا ہے! 2019-10-01 … ابتداء تو اب ہوئی ہے! 2019-09-30 ’’صِفر‘‘ سے دور رہنا ہے 2019-09-29 کوئی تو حد ہو بے حِسی کی بھی 2019-09-28 ’’جو ہو گا دیکھا جائے گا ‘‘ 2019-09-25 آؤ‘ ہم جھوٹی اناؤں سے کنارا کرلیں ! 2019-09-23 نہ بولنا منع ہے! 2019-09-21 کسی کو کیا پڑی ہے؟ 2019-09-19 واحد آپشن : قبولیت! 2019-09-17 سہاروں کی تلاش 2019-09-15 جو کھوگئی وہ چیز کیا تھی! 2019-09-14 اتنی کہانیاں کیوں ہیں؟ 2019-09-12 آلۂ کار اور دشمن 2019-09-10 زندگی مسئلہ نہیں ! 2019-09-09 ماضی کے بعد، مستقبل سے پہلے 2019-09-08 شاپنگ پوائنٹ 2019-09-07 آپ کیا جانتے ہیں؟ 2019-09-06 تکلیف سے بچنا ہر بار درست نہیں 2019-09-05 بند گلی کا عذاب 2019-09-04 اچھے اور بُرے نہیں‘ اچھائی اور بُرائی! 2019-09-03 دماغ کی اب ضرورت کیا ہے؟ 2019-09-02 کوئی بازار میں یوسف کا خریدار نہیں ! 2019-09-01 تصور اور حقیقت 2019-08-31 دوست کی تلاش 2019-08-30 ’’کہانیوں‘‘ کا دیس! 2019-08-28 زمانے کی تفہیم 2019-08-27 قصور کسی کا نہیں 2019-08-26 مزا نہ آئے تو پیسے واپس! 2019-08-24 ہچکچاہٹ نہیں چلے گی ! 2019-08-23 ’’شارٹ کٹ‘‘ 2019-08-22 یہ کھیل انتخاب کا ہے 2019-08-21 نصیب نہیں محنت! 2019-08-20 یہ دنیا بھی بدل جائے گی 2019-08-19 نمونہ ہوں تو صرف آپ 2019-08-16 ’’میں بھی‘‘ اور ’’میں ہی‘‘ 2019-08-15 جو ڈوبے وہ ذمہ دار 2019-08-14 بارات واپس نہیں جائے گی! 2019-08-11 تنہائی اور اکیلا پن 2019-08-10 ایموشنل‘ پریکٹیکل اور پروفیشنل 2019-08-08 اُس پار تو جانا ہے 2019-08-07 ہم کہ ٹھہرے … آدمی! 2019-08-05 کردار‘ مستقبل اور ہم 2019-08-04 شکر ہے پتھر نہیں برس رہے! 2019-08-03 جھوٹی اُمید کا دائرہ 2019-08-01 نظامِ زندگی؟ … ہاہاہا! 2019-07-31 عرفانِ ذات سے قبولِ عام تک 2019-07-30 رات ہوگئی جواں 2019-07-29 توپ سے چڑیا کا شکار! 2019-07-27 بچ کر تو گزرنا ہے‘ مگر …! 2019-07-26 جو ہم سا نہیں ہے ‘وہ اپنا نہیں ! 2019-07-25 اعتماد کا مقتل 2019-07-24 روس کی ’’عقل ِ سلیم‘‘ 2019-07-23 … قصور اپنا نکل آیا! 2019-07-22 جنریشن گیپ 2019-07-20 آغاز ’’دھانسو‘‘ ہونا چاہیے ! 2019-07-19 نالج انڈسٹری ہماری منتظر ہے 2019-07-18 مشق‘ مہارت اور زندگی 2019-07-17 اچھے دنوں کی تلاش 2019-07-16 فراغت کا دھندا 2019-07-15 ہوگئی شام‘ گرگئے دام! 2019-07-13 ’’غزل‘‘ کہی ہے … 2019-07-11 جوابدہ تو ہمی ہیں … ! 2019-07-10 جینا تو سیکھنا پڑے گا 2019-07-09 اپ ڈیٹ رہنے کا عارضہ 2019-07-08 فراغ زادے 2019-07-06 سَودا کچھ خاص بُرا بھی نہیں رہا 2019-07-05 ٹیکس نیٹ … ڈرنا کِسے چاہیے؟ 2019-07-04 وہ تو‘ ڈسے گا … ! 2019-07-02 بہت ’’گند‘‘ کی مہرباں جاتے جاتے! 2019-07-01 اُنہی کو مبارک رہے‘ ڈائٹنگ! 2019-06-30 اعادے سے گریز‘ جناب! 2019-06-29 کچھ ہم ہی جانتے ہیں … 2019-06-28 … اے نا اُمیدی! کیا قیامت ہے؟ 2019-06-27 ’’نفسیاتی‘‘ 2019-06-26 تحلیل ِ نفسی لازم ٹھہری! 2019-06-25 یہ تھکن ہے کہ ابتلائے شدید 2019-06-24 دلدل سے نکلنا تو ہے 2019-06-22 ’’مارو یا مر جاؤ‘‘ کی منزل 2019-06-21 … نظر کچھ بھی نہیں ہے! 2019-06-20 محدود ہوتے جانے کا شوق 2019-06-19 ’’راتوں رات‘‘ کی ذہنیت ! 2019-06-18 ’’جھاڑو پِھرائی‘‘ نہیں‘ باٹم لائن! 2019-06-17 سورج کی راتیں 2019-06-15 بیک فُٹ پر رہنا ہے 2019-06-14 ڈرنے کی ضرورت نہیں ! 2019-06-12 … بات ہے خزانے کی ! 2019-06-10 تفنّن برطرف‘ یہ زندگی ہے! 2019-06-09 سب سے بڑا مائنس پوائنٹ 2019-06-08 تودا …ہل رہا ہے 2019-06-05 … اُمتوں کے مرضِ کہن کا چارہ 2019-06-03 یہ سب ہوگا کیسے؟ 2019-06-01 اُف رے ڈالر، ہائے ری گرمی 2019-05-30 … عالم دوبارہ نیست! 2019-05-29 لیجیے‘ پھر آگئی عید شاپنگ ! 2019-05-28 تاج‘ تلوار اور دل 2019-05-24 ملتے ہیں‘ بریک کے بعد! 2019-05-23 اللہ جانے کیا ہوگا آگے ! 2019-05-22 یہ کھیل ہے ’’تعلق‘‘ کا 2019-05-19 جھوٹ … کب تک اور کیوں؟ 2019-05-18 ’’گلا کاٹ‘‘ مقابلہ 2019-05-15 ’’پیار‘‘ زیادہ ہے‘ زندگی کم ہے 2019-05-14 ناظرین کی تربیت لازم ٹھہری 2019-05-12 ایثار کی کہانی 2019-05-11 انکار سے انکار تک 2019-05-10 حواس برقرار رہنے چاہئیں ! 2019-05-09 … ڈوب کے جانا ہے ! 2019-05-08 دیکھا دیکھی 2019-05-07 اُڑ گئے بامِ تمنّا سے کبوتر کتنے! 2019-05-06 ’’قنّات پسندی‘‘ 2019-05-04 ’’شخصی ارتقائ‘‘ کی بیماری 2019-05-03 گرمی اور گرما گرمی 2019-05-02 … کوئی پوچھا نہیں 2019-05-01 ’’پرسنٹیج‘‘ کا ٹنٹا 2019-04-30 رہا کھٹکا نہ چوری کا … 2019-04-29 یہ وقت ڈائیلاگ بازی کا نہیں 2019-04-28 The Unpaid Extra 2019-04-27 دنیا میری جیب میں! 2019-04-25 ’’کابل‘‘ کی دُعائیں لیتا جا … 2019-04-24 اب … بہت سوچ سمجھ کر 2019-04-23 سوچنے سے نفرت‘مگر کیوں؟ 2019-04-21 زندہ رہنے کے لیے مرنا پڑے گا 2019-04-20 کوئی کب تک یہ تماشا دیکھے؟ 2019-04-18 فوری نتائج پانے کی ذہنیت 2019-04-17 لوگ تیار بیٹھے ہیں! 2019-04-16 بڑے اور بڑپّن 2019-04-14 ارے اب بس بھی کرو! 2019-04-11 جینے کا بھی حق چھین لیا جائے گا ہم سے؟ 2019-04-10 اُڑتا ہوا وقت تھام لو 2019-04-09 چیخیں‘ لات اور کڑوے گھونٹ 2019-04-07 مچھر اور سنگیت 2019-04-06 آپ خوش رہیے … ساڈی خیر اے! 2019-04-05 اُدھر بھی کوّا ہی جان سے گیا! 2019-04-04 ’’رونقیں‘‘ ہیں اُدھار کے دم سے! 2019-04-02 تعویذ چاہیے، تعویذ! 2019-04-01 تیل تو پہلے نکالا جاچکا ہے 2019-03-30 مہم جوئی کی گنجائش نہیں 2019-03-29 مذاکرات اور پیٹ کا مروڑ 2019-03-28 بھارت کہاں کھڑا ہے؟ 2019-03-27 ہنستے گاتے نہ جیے تو پھر کیا کِیا؟ 2019-03-26 … چپ رہنے کی لذّت کیا جانو! 2019-03-24 اپنے بھی خفا ’’تجھ‘‘ سے ہیں‘ بیگانے بھی ناخوش! 2019-03-22 نیا جُنون‘ نیا محاذ 2019-03-21 کچھ کچھ ہوتا ہے! 2019-03-20 بے ضمیری … اور وہ بھی اس انتہا کی…! 2019-03-19 اندرونی محاذ نظر انداز نہ کیا جائے 2019-03-18 ذِلّت کا سفر جاری ہے 2019-03-15 چُھری کے لیے گردن پیش کرنے والے 2019-03-14 حالات کی مہربانی 2019-03-13 آنکھ جھپکی اور کام تمام 2019-03-12 … چند ہی قدموں پہ تھک کے بیٹھ گئے ! 2019-03-11 کیسے رات میں دِن سمجھوں … 2019-03-10 مہا راج کو گھیرا جارہا ہے 2019-03-08 ’’پاکستان اُس طرف ہے!‘‘ 2019-03-07 عزت بچانے کا مقابلہ 2019-03-06 سوال اٹھارہ کروڑ کا 2019-03-05 ’’چودھری صاحب‘‘ کے زخم 2019-03-04 معاملہ دکان داری کا ہے 2019-03-02 اور کوّا مارا گیا…! 2019-03-01 کچھ نہ کیا تو پھر کیا جیا؟ 2019-02-28 پھر وہی فیصلے کی گھڑی 2019-02-27 آپ مینیجر بھی تو ہیں 2019-02-26 دو راہے کے بعد اب ’’تِراہا‘‘ 2019-02-25 فُل ٹائم کامیڈی 2019-02-22 ’’تھپّڑ‘‘ اور ’’تپّڑ‘‘ 2019-02-21 کیوں دیکھیں زندگی کو کسی کی نظر سے ہم؟ 2019-02-20 الزامی سیاست سے آگے 2019-02-19 اعتدال کہاں منہ چھپائے بیٹھا ہے؟ 2019-02-18 ’’میلے کی سیر‘‘ 2019-02-17 محض صلاحیت کافی نہیں ! 2019-02-15 گراف گِرنے نہ پائے 2019-02-14 کوئی مجبوری سی مجبوری ہے 2019-02-13 شادمانی … کسی سبب کے بغیر! 2019-02-12 ویک اپ، شٹ اپ، پیک اپ 2019-02-11 میٹرک کی سرحد پر 2019-02-10 دُودھ نہیں‘ بالائی! 2019-02-09 کیچڑ میں کنول 2019-02-08 ’’پھر وہی دِل لایا ہوں!‘‘ 2019-02-07 پسپائی اور جَست 2019-02-06 پپّو اور چپّو کی کہانی‘ گپّو کی زبانی 2019-02-05 زندہ رہنا ہے اور اِسی ماحول میں! 2019-02-04 نقل نہیں، استفادہ! 2019-02-03 کون کون بنے گا غدار؟ 2019-02-01 بادام اور دَھکّے 2019-01-31 بات رکی ہے دل کی توفیق پر! 2019-01-30 زندگی اک سفر ہے سہانا 2019-01-29 یہی تو ہے سُنہرا دور 2019-01-28 نئے خیالات، نئے امکانات 2019-01-27 … رہنما چاہیے! 2019-01-26 موازنے کا مرض 2019-01-25 مائنڈ سیٹ کا مسئلہ 2019-01-24 ’’کاش‘‘ کا دائرہ 2019-01-23 نئی سوچ سے ڈرنا منع ہے 2019-01-22 امریکا کا مخمصہ 2019-01-21 … اب ایسی بھی کیا جلدی ہے؟ 2019-01-20 جاگتی آنکھوں کے خواب 2019-01-19 پوچھا نہیں تو جانا نہیں 2019-01-18 … کوئی دل لگی نہیں 2019-01-16 وینٹی لیٹر اور سکتہ 2019-01-15 مہارت اور وجود 2019-01-14 پہلا پڑاؤ … قبولیت! 2019-01-13 مان لو یا ٹھان لو 2019-01-12 چلے تو چاند تک … ورنہ شام تک! 2019-01-10 اور اب … خوابوں کا تصادم! 2019-01-09 چلتی پھرتی کچرا کنڈیاں 2019-01-08 دل اُن کو ڈھونڈتا ہے‘ ہم دل کو ڈھونڈتے ہیں 2019-01-07 اب فُل سٹاپ آنا ہی چاہیے 2019-01-06 ہنی مُون پیریڈ ختم ہوا! 2019-01-05 بھلا یہ بھی کوئی بات ہوئی … 2019-01-04 لو ’’شمع ‘‘ہوئی روشن…! 2019-01-03 حکومت گِرانے کا نُسخہ 2019-01-02 ’’ونس اِن اے لائف ٹائم‘‘ 2019-01-01 احتساب کا کَدّو 2018-12-31 کون یادوں کو زنجیر پہنائے گا؟ 2018-12-30 خوف کی واپسی نامنظور 2018-12-29 منفی تاثر کا انسداد بھی لازم ہے 2018-12-26 ’’عالمگیریت‘‘ کا سراب 2018-12-25 اب بھاگتے ہیں سایۂ عشقِ بُتاں سے ہم 2018-12-24 انفرادی معیشت کا مسئلہ 2018-12-23 تحریک و تحرّک سے محرومی 2018-12-21 یہ ’’کاندھا‘‘ کب جاگے گا؟ 2018-12-19 کتب بینی کا مستقبل 2018-12-18 جاڑا دُھوم مچاتا آیا 2018-12-17 مرغی اور انڈے کی سیاست 2018-12-15 وہ عزم وہ تڑپ‘ وہ ارادہ کہاں سے لائیں؟ 2018-12-13 ہم نے تو دِل جلاکے سرِعام رکھ دیا 2018-12-12 مظلومیت کی نفسیات 2018-12-11 تعلیم کا ہدف 2018-12-10 قسمت کے اندھے موڑ پر 2018-12-09 وقت نے وَختا ڈالا ہوا ہے 2018-12-08 دنیا کا کیا ہے‘ اُس نے صدا بار بار دی 2018-12-06 … توجہ صرف کام پر رہے‘ بس ! 2018-12-05 ’’بھینس کی بچی‘‘ 2018-12-04 تِرے ’’جانے‘‘ کی خوشی میں … 2018-12-03 یہ سب تو ٹھیک ہے، مگر 2018-12-01 منصب لازم نہیں 2018-11-30 … دیدۂ دل وا کرے کوئی 2018-11-29 مار دوگے ہنسا ہنساکے ہمیں! 2018-11-28 باتوں سے بہت آگے جاکر 2018-11-27 ’دماغوں‘ میں روشنی نہ رہی! 2018-11-26 … عشق کے امتحاں اور بھی ہیں 2018-11-25 کوئی نشانی چھوڑ، پھر دُنیا سے ڈول 2018-11-24 آنے دو‘ جانے دو! 2018-11-23 جذبِ باہم، ربطِ پیہم 2018-11-20 یو ٹرن تو اچھے ہوتے ہیں! 2018-11-19 کچھ ہے تو پیش کیجیے 2018-11-18 الفاظ … پُل بھی‘ سیلاب بھی! 2018-11-17 سب سے بڑھ کر … انسان، اور کون! 2018-11-16 باتوں کے چراغ چل رہے ہیں 2018-11-15 صحت کی سرگم کا آٹھواں سُر 2018-11-14 صرف کام نہیں، معاونت بھی! 2018-11-13 کہکشاں اور ستارے 2018-11-12 … اور گوشۂ تنہائی ہو! 2018-11-11 خرگوش ہار جاتے ہیں 2018-11-10 ٹال مٹول کا چڑھتا دریا 2018-11-09 ستائش اور صِلے سے ایک قدم آگے 2018-11-08 دم غنیمت ہے شاہ سائیں کا 2018-11-07 روح زخمی ہوگئی ہے 2018-11-06 سوچے، سمجھے بغیر 2018-11-05 ’’ناشکرے‘‘ 2018-11-04 خود روزگاری کی دنیا 2018-11-03 بات تو اچھی کی جائے ! 2018-11-02 نہ بدلنے کی ضِد نہیں اچّھی 2018-11-01 سُدھرنے کا موسم کب آئے گا؟ 2018-10-31 ذہنی پیچیدگیوں کے بھڑکتے شعلے 2018-10-30 منزلِ جاں سے گزرنے کا مرحلہ 2018-10-29 مطابقت کہاں مرگئی؟ 2018-10-28 نفع کشید کرنے کی ذہنیت 2018-10-27 ’’بِنداس‘‘ 2018-10-26 بالکل سامنے کی بات! 2018-10-25 روبوٹ نہیں‘ انسان! 2018-10-23 سوال ہے سوال کا 2018-10-22 ٹائمنگ اور سانپ سیڑھی 2018-10-21 ’’اداکاری‘‘ بہ شرطِ اُستواری 2018-10-20 وہی کام اور آرام کا جھگڑا 2018-10-19 یہ بغلیں بجانے کا موسم نہیں 2018-10-18 جناب‘ یہ زندگی ہے…! 2018-10-17 … ہم جاں سے گزر جائیں گے 2018-10-16 جب مَت ماری جائے 2018-10-15 گھریلو معیشت کا نیا پیراڈائم 2018-10-14 خطرے کے گھنٹے بج رہے ہیں 2018-10-13 ’’گاہک‘‘ ہاتھ سے نہ جائے! 2018-10-12 کٹتی نہیں ہے غم کی رات … 2018-10-11 اس بار ’’کیو ٹرن‘‘ 2018-10-10 خود پرستی کا زہر 2018-10-09 … دل بھی جل گیا ہوگا! 2018-10-08 ’’میں ہی تو اُستاد ہوں!‘‘ 2018-10-07 نفرت کی دکان 2018-10-06 قرضوں سے دامن بچاتے ہوئے 2018-10-05 کچھ تو سیکھے یہ زمانہ ہم سے 2018-10-04 نئے دوستوں کی تلاش 2018-10-03 ملنے کا آپشن بچا ہے 2018-10-02 دماغ کہاں رہ گیا؟ 2018-10-01 راکھ کے ڈھیر میں شعلہ ہے نہ چنگاری ہے 2018-09-30 جی ہاں‘ ’’تحریک‘‘ لازم ہے! 2018-09-29 … نازک ہے بہت کام! 2018-09-28 آپ کے لب پہ … اور وفا کی قسم! 2018-09-27 … اور چمچ کھڑا ہوگیا! 2018-09-26 دل ہی قابو میں نہیں، ہم کیا کریں! 2018-09-25 ہوس کا بازار 2018-09-24 ایسی بھی کیا بے اعتمادی! 2018-09-23 ایڈجسٹمنٹ 2018-09-20 باتوں سے کسی کا پیٹ بھرتا نہیں 2018-09-19 سی پیک : کس کے گلے کی ہڈّی؟ 2018-09-18 چراغ لے کے کہاں سامنے ہوا کے چلے! 2018-09-16 ذہن سازی کا کوہِ گراں 2018-09-15 انتہا پسندی اور کیا ہے؟ 2018-09-14 ’’اسٹریٹجک ڈیپتھ‘‘ 2018-09-11 ’’بھرتی‘‘ کا جادو 2018-09-10 ’’عوام کا خادم‘‘ 2018-09-09 میلے کی رونق 2018-09-08 ماڈرن انڈین جرنلزم 2018-09-07 کیا جانیے کیا ہوگیا اربابِ جُنوں کو 2018-09-06 امریکا کی ’’گڈز بک‘‘ 2018-09-05 سوچنا تو پڑے گا …! 2018-09-04 یہ محفل جو آج سجی ہے … 2018-09-03 نئے، پُرجوش پاکستان کو تحریر ہونا ہے 2018-09-02 ’’قاتلوں کو کچھ نہ کہا جائے‘‘ 2018-09-01 … تقریر نہیں ہوتی تھی! 2018-08-30 ’’غیر روایتی‘‘ گوشت کی انٹری 2018-08-29 پہلا پڑاؤ : ’’نیا کراچی‘‘ 2018-08-28 پہلا ’’دنگل‘‘ 2018-08-27 نفرت کا بازار 2018-08-25 جاٹ کو مَرا تب جانیے … 2018-08-22 سب سے پہلے … اُمید! 2018-08-21 ہانکا لگانے والوں سے ہوشیار 2018-08-20 … کوئی چُوک ہوئی ہے 2018-08-19 ’’وائلڈ کارڈ انٹری‘‘ 2018-08-17 ہاں مگر حوصلہ نہیں ہوتا 2018-08-16 ایک نئی سرد جنگ؟ 2018-08-15 پڑوس کا ’’روہنگیا‘‘ 2018-08-14 نظر پھیرنے کا موسم 2018-08-12 تلواریں نیام میں رکھی جائیں 2018-08-11 … ابھی دامن سنبھالا ہے 2018-08-10 ’’عوامی راج‘‘ 2018-08-08 لہریں گِننے والوں سے ہوشیار 2018-08-07 اندھے کی لاٹھی 2018-08-05 مراد علی شاہ کی ’’بحالی‘‘ 2018-08-03 … تازہ ہوا چلی ہے ابھی ! 2018-08-02 اپنی ’’چُھٹی‘‘ آپ پیدا کر … ! 2018-08-01 نئے ’’سٹیک ہولڈرز‘‘ اور امیدوں کی گرم بازاری 2018-07-30 جاں سے ہم گزرے ہیں … ! 2018-07-29 کام وہ آن پڑا ہے … 2018-07-28 لات مارنا لازم تو نہیں! 2018-07-27 ’’عوامی غنڈہ گردی‘‘ 2018-07-26 قوم کا ’سوا مہینہ‘ 2018-07-25 ایک بار پھر قوم کی آزمائش 2018-07-23 ’’بیچ کے بے چارے‘‘ 2018-07-22 میڈیا کے دو پاٹ 2018-07-21 اکڑ کس بات کی پیارے؟ 2018-07-20 ’’چاند ماری‘‘ 2018-07-19 جوان بیٹا 2018-07-18 بچ گئے سارے! 2018-07-17 کون سی چڑیا بنیں گے‘ آپ؟ 2018-07-16 بھارت : اقلیتوں کامعاملہ پھرسر اٹھانے لگا 2018-07-15 ’’پیّاں پَروں، توری بِنتی کروں!‘‘ 2018-07-14 اب آئینے میں کس کو ڈھونڈتے ہو؟ 2018-07-13 ترقی کی قیمت 2018-07-12 انتخابی شربت … ٹھنڈا ٹھار! 2018-07-11 چراغ تلے اندھیرا 2018-07-10 اعداد و شمار کا گورکھ دھندا 2018-07-07 چَن میرے ’’مکھناطیس‘‘ 2018-07-06 ایک ذرا بادل برسے ہیں !! 2018-07-05 دل کو مرنے سے بچانا ہوگا 2018-07-04 شکر ہے‘ گھنٹی بجی تو سہی! 2018-07-03 غزل اُس نے چھیڑی ...! 2018-07-02 … کسی ہم دمِ دیرینہ کا ملنا 2018-06-30 ٹنڈے اور چٹائی 2018-06-29 رقص بھول بیٹھا تھا … 2018-06-28 کارکردگی پہلے نمبر پر 2018-06-26 الیکشن کی ’’سائنس‘‘ 2018-06-25 آگ نہیں تو خاک نہیں 2018-06-24 گنتی اور ترازو 2018-06-23 نئی نسل کی ڈبکیاں 2018-06-19 فضول محنت نہیں چلے گی 2018-06-15 پانی پانی کرگیا پانی ہمیں 2018-06-12 ’’جاب‘‘ سے کچھ آگے جاکر 2018-06-11 شائستگی کی گرم بازاری 2018-06-09 وہی دانا ہے کہا جس نے نہ مانا دل کا 2018-06-05 مسکراؤ کہ بات بن جائے ! 2018-06-04 … پرندے کے دِل سے پنجرہ نکالنا ہے! 2018-06-02 مقصد ِ حیات 2018-05-31 قطرہ قطرہ دریا بنتا ہے 2018-05-30 مان نہ مان‘ میں ہوں بھگوان 2018-05-29 ..... بازار دیکھو ! 2018-05-27 ’’ڈھیٹ‘‘ ویو 2018-05-24 گرمی کہے میرا کام 2018-05-23 اپنا وجود پہلے نمبر پر 2018-05-18 جَوت سے جَوت جگاتے چلو 2018-05-17 جمہوریت پر پھر بُرا اور کڑا وقت 2018-05-15 بُرا تو پھر کوئی بھی نہیں 2018-05-13 ’’وہ‘‘ کہیں پیچھے نہ رہ جائیں! 2018-05-12 کام لینا ہی تو ہے قائد کا کام 2018-05-11 انحصار کی بیماری 2018-05-10 گوبر نیتی 2018-05-09 جا … میں تَو سے ناہی بولوں! 2018-05-08 گرمی، گرما گرمی اور سرگرمی 2018-05-07 بڑا خواب، بڑے تقاضے 2018-05-06 مجبوری کے سَودے 2018-05-04 تنقیص و تنقید نہیں، تعمیر! 2018-05-03 ڈرنا … اور مرنا لازم ہے نہ سُود مند! 2018-05-02 اہمیت فرق پیدا کرنے کی ہے 2018-05-01 گرتے ہیں شہسوار ہی… 2018-04-30 ’’اندھے‘‘ 2018-04-29 نظر ہٹی … اور کام تمام! 2018-04-28 ’’انسان‘‘ بننے کا عمل 2018-04-27 دوسروں سے چند قدم آگے 2018-04-26 لکھنا اب لازمی ضرورت ٹھہرا 2018-04-25 حافظے کی بحالی کا مرحلہ 2018-04-24 ناپید بجلی کے جھٹکے 2018-04-23 ہم جو چلتے ہیں … 2018-04-22 رکاوٹ بننے والوں سے دُور 2018-04-21 صحت کا پہلا نمبر 2018-04-20 لیجیے، شوہر بھی دردِ سَر ہوئے! 2018-04-19 چوتھا جِن 2018-04-18 آپ کا زمانہ کون سا ہے؟ 2018-04-17 اُصول اپنے اپنے 2018-04-16 گزرتا، ضائع ہوتا وقت 2018-04-15 نیند اور بیداری کا تحقیقی فلسفہ 2018-04-14 ’’ارے بس ٹھیک ہے‘‘ 2018-04-13 دو وقت کی روٹی سے آگے 2018-04-12 حِدّت پکڑتا انتخابی ماحول 2018-04-11 ناکامی کی طاقت 2018-04-10 کام ادھورے کام کے پورے 2018-04-09 نعمت سے نہیں کم صاف گوئی 2018-04-08 شیطان کو ہرانا لازم ہے 2018-04-07 جی ہاں، ون مین شو! 2018-04-06 صرف دولت سے کچھ نہیں ہوتا 2018-04-05 اعلیٰ تعلیم کی آڑ میں 2018-04-04 ناگواری جھیلنے کا صلہ 2018-04-03 چوہے، کتے اور کچرا 2018-04-02 کسبِ کمال کُن کہ عزیزِ جہاں شوی 2018-04-01 جُنون چاہیے، جُنون! 2018-03-31 مینڈیٹ کی ہڈی 2018-03-30 خود پرستی نہیں چلے گی 2018-03-29 ابھی تو پارٹی شروع بھی نہیں ہوئی! 2018-03-28 دامن ذرا بچاکے! 2018-03-27 خوش رہنے کا اختیار 2018-03-26 لمحۂ موجود کو اپنائیے! 2018-03-25 چل نہ پائے گا بہانہ کوئی 2018-03-24 بزم آرائی 2018-03-23 تریاق 2018-03-22 ’’سٹروک‘‘ آیا چاہتا ہے 2018-03-21 شادی سے پہلے، شادی کے بعد 2018-03-20 مطالعے سے گریز کیوں؟ 2018-03-19 پانی پانی کرگیا … دودھ کا ذکر! 2018-03-17 ناخوشگوار یادوں کی غلامی 2018-03-16 … کمال ہے صاحب! 2018-03-15 آئیے، کھائیے، پھنس جائیے! 2018-03-14 سُنیے گا تو قبولیت پائیے گا 2018-03-13 زبردست کا ٹھینگا سر پر 2018-03-12 تذکرہ ہے یہ ’’وفاداروں‘‘ کا 2018-03-11 بھارتی مُردہ خانہ 2018-03-10 تم جیو ہزاروں سال 2018-03-09 جذبِ باہم جو نہیں محفلِ انجم بھی نہیں 2018-03-08 مینڈیٹ کا مخمصہ 2018-03-07 اِس پار بھی رُسوائی، اُس پار بھی رُسوائی! 2018-03-06 معمولات کا پنجرہ 2018-03-05 جو دِکھتا ہے وہی بِکتا ہے! 2018-03-04 تبدیلی کو نعمت جانیے 2018-03-03 رشتے، تعلقات اور دولت 2018-03-01 ’’کامیابی کا مغالطہ‘‘ 2018-02-28 HAPPY \"DUST-DAYS\" TO US! 2018-02-27 ہاں، زمانے میں پنپنے کی یہی باتیں ہیں 2018-02-26 جواب دہ تو ہمیں ہیں… 2018-02-25 ’’وہ ہماری زبان تھی پیارے‘‘ 2018-02-24 بہتے ہی چلے جائیے ! 2018-02-23 کیا غضب کرتے ہو جی! 2018-02-22 … اور نیپال بھی جاگ اٹھا 2018-02-21 ’’خواتین نواز‘‘ تحقیق 2018-02-20 انفرادیت کے نام پر 2018-02-19 ہے کوئی‘ دھوکا کھانے والا! 2018-02-18 یہ چیز ہی ایسی ہے… 2018-02-17 کہاں ہیں وہ شرمیلے بچے؟ 2018-02-16 ’’شہتیر‘‘ 2018-02-15 محبت کا ’’منجن‘‘ 2018-02-14 … ایسی بھی کیا بے اعتمادی! 2018-02-13 اصلی بات کا ڈبّا گول 2018-02-12 ایک دن کی ’’سکندری‘‘ کے لیے! 2018-02-11 کام کریں ہمارے دشمن! 2018-02-10 ’’میں کہاں بولتا ہوں!‘‘ 2018-02-09 کچن کا ’’گول دائرہ‘‘ 2018-02-08 واہ کیا ’’پرائس‘‘ ہے! 2018-02-07 کراچی … یا بم؟ 2018-02-06 ’’گھر‘‘ کا بسنا کھیل نہیں ہے… 2018-02-04 ڈوب مرنے کا مقام ہے 2018-02-03 محبت کا اسٹاک ختم 2018-02-02 ’’صنفِ نازک‘‘ 2018-02-01 ڈٹے رہیے ! 2018-01-31 ’’صداقت نامہ‘‘ 2018-01-30 کیا غضب ہے ’’کمالِ بے ہُنری‘‘ 2018-01-29 کام کی بات پیچھے رہ گئی 2018-01-28 محققین کا ’’باریک کام‘‘ 2018-01-27 اپنی ذات کا مایا جال 2018-01-26 کہاں گئے وہ لوگ … 2018-01-25 جی کا زیاں نہ ہو! 2018-01-24 ہلکا کرنے والا بوجھ 2018-01-23 ذمہ دار تو آپ ہی ہیں! 2018-01-22 شجاعت اور جوتے 2018-01-21 قِصّہ ایک بُھوت کے پھنسنے کا! 2018-01-20 ’’ریسکیو کامیڈی‘‘ 2018-01-18 ’’تری مُورتی‘‘ 2018-01-16 بھیڑ، ہجوم یا ریوڑ؟ 2018-01-15 … نانا جی کی فاتحہ 2018-01-14 نئے فضائی بحران 2018-01-13 ’’بھکاری پرور‘‘ معاشرے 2018-01-12 چھوڑو یہ اہتمام، بڑی دیر ہوگئی! 2018-01-11 مسکرانے پر پابندی نہیں! 2018-01-10 چھوٹو کی بڑی دنیا 2018-01-09 پیار کی کہانی 2018-01-08 ’’کہاں ہے تیری بارش؟‘‘ 2018-01-07 یہ ہے اللہ کی تدبیر 2018-01-06 خبردار! اب ڈرنا منع ہے 2018-01-05 … مِرا پیار یاد رکھنا! 2018-01-04 اضافی دھماچوکڑی کا سال؟ 2018-01-02 اِک تِرے آنے سے پہلے…… 2018-01-01 اِس درد بھری شب کی سَحر ہے کہ نہیں ہے؟ 2017-12-31 مگر پہلے ذرا فرصت تو مل جائے 2017-12-30 درد کی یُوں ہوئی ’’پذیرائی‘‘ 2017-12-29 جب سامنے ہاتھی آجائے 2017-12-28 تم آسماں کی بلندی سے جلد لوٹ آنا 2017-12-26 ایک دن کی بادشاہت 2017-12-25 ’’اوئے، میں شیر آں!‘‘ 2017-12-23 تعلیم کے آنسو 2017-12-22 ’’مشروبِ کراچی‘‘ 2017-12-21 وہ مان کر بھی نہیں مانتے … 2017-12-20 ہوس کو ہے نشاطِ کار کیا کیا 2017-12-19 شارٹ کٹ کی تلاش 2017-12-18 مفت خوری ہے کہ بڑھتی جائے ہے! 2017-12-17 جانور کبھی ’’ترقی‘‘ نہیں کرسکتے 2017-12-16 یاد ہے یا عذاب ہے یارو! 2017-12-15 تِری زلف کے سَر ہونے تک 2017-12-14 اب اِس قدر بھی نہ ’’کھاؤ‘‘ … 2017-12-13 خواتین کے لئے پھر رعایتی نمبر 2017-12-12 اب ’’آنکھ‘‘ بننے سے بچنا ہے 2017-12-11 حُسن کی خیر ہو… 2017-12-10 ہمیں تو قید ہی رکھو … 2017-12-09 سب کا بھلا…اپنی خیر نہیں! 2017-12-08 جب دوا موت کا سبب بن جائے 2017-12-07 کسی کسی کو خدا یہ ’’کمال‘‘ دیتا ہے 2017-12-06 مزید آلوؤں سے معذرت 2017-12-05 وہی کرو جو کیرل نے کیا 2017-12-04 جب چل پڑے سفر کو تو کیا مُڑکے دیکھنا 2017-12-03 خبر کیا تھی کہ یہ انجام ہوگا دِل لگانے کا 2017-12-01 آخرت سے رجوع کرنا پڑے گا 2017-11-30 پولیس کی ٹریجڈی 2017-11-29 پتھر کی سِل پر نکاح نامہ 2017-11-28 ’’اسٹینڈرڈ پروسیجر‘‘ کی منزل 2017-11-27 مفہوم کی موت 2017-11-26 کھانا پینا بھی ہوگیا دشوار 2017-11-25 بابا؟ نا بابا! 2017-11-24 ’’پدماوتی‘‘بھارت کیلئے زندگی موت کا مسئلہ 2017-11-23 اِک نظر اُن کو بھی دیکھیں گے تو وحشت ہوگی! 2017-11-22 وقت کے غلام 2017-11-21 ’’پدماوتی‘‘ کا ہاہا کار 2017-11-20 بچ بچ کے چلنا حضور! 2017-11-19 یہ دیگ نہ اُترے چولھے سے 2017-11-18 پپّو یار، تنگ تو کر! 2017-11-17 منہ ٹھیک سے میٹھا نہ ہوا! 2017-11-16 سیاسی کِھچڑے کا پتیلا 2017-11-15 کامیابی کا ’’اوپن سیکریٹ‘‘ 2017-11-14 ڈاکا تو نہیں ڈالا، چوری تو نہیں کی ہے 2017-11-13 آواز لگتی رہنی چاہیے 2017-11-12 اکڑ … مگر کیوں؟ 2017-11-11 اب بسنتی راج کرے گی؟ 2017-11-10 ’’وائرل ازم‘‘ کا بخار 2017-11-09 سینے میں کوئی پتھر تو نہیں؟ 2017-11-08 لوگ سمجھاتے رہ گئے… 2017-11-07 دریائے شوق کے دھارے 2017-11-06 ہمیشہ دیر کر دیتے ہیں ہم! 2017-11-05 کہیں ’’آرٹ‘‘ نہ مر جائے 2017-11-04 کرے کوئی، مرے کوئی 2017-11-03 ہلا گلا ضرور مگر سوچ سمجھ کر 2017-11-01 بات بے بات کیوں پریشانی؟ 2017-10-31 سیلیبریشن ٹائم 2017-10-30 موت سے زندگی تک 2017-10-29 کہیں بٹن نہ دب جائے! 2017-10-27 ڈٹے رہو منا بھائیو! 2017-10-25 چھوٹی سی عمریا میں 2017-10-23 قوم بنانے کا طریقہ 2017-10-22 اصلی امریکی صدر کی تلاش 2017-10-21 دھارے کے خلاف 2017-10-20 کیجیے کچھ، ہوتا ہے کچھ! 2017-10-19 وہ کون ہوتے ہیں؟ 2017-10-17 اب کہیں ہم نہ آزمائے جائیں! 2017-10-16 آپ سمجھیں یا خُدا سمجھے! 2017-10-15 دردِ دل دردِ سر نہ ہو جائے! 2017-10-14 بات گدھوں تک آ پہنچی ہے 2017-10-12 یہ شادی ہو کر رہے گی! 2017-10-11 ہم نے کیا سیکھا؟ 2017-10-08 ’’نروس نائنٹی‘‘ میں سِکسر! 2017-10-07 دَر اِسی دیوار میں کرنا پڑے گا 2017-10-06 ’’بھنڈ‘‘ بھی بے سبب نہیں صاحب! 2017-10-05 جانے اِس قید سے اب کیسے نکلنا ہوگا؟ 2017-10-04 ساکھ! … یہ کیا ہوتی ہے! 2017-10-01 کچھ دیر کی جوانی 2017-09-29 یہ ہے صورتِ حال! 2017-09-28 شیر سے شروع، چوہے پر ختم 2017-09-26 بلا ضرورت، حد سے زیادہ! 2017-09-24 بابا، بم اور میزائل 2017-09-23 ’’بھوکا مار دو‘‘ 2017-09-22 … سَر ہے کہ نہیں! 2017-09-21 … اِدھر آ بے، ابے او … 2017-09-20 مدعی سست، گواہ چست 2017-09-19 شوقِ بے لگام کی بند گلی 2017-09-18 چَریا گھر 2017-09-15 نئے محاذ کی تیاری؟ 2017-09-14 ’’اچانک‘‘ 2017-09-12 …انجوائے منٹ کا دریا! 2017-09-10 سجدہ نہیں، قیام! 2017-09-08 سامری جادوگر کی پریشانی 2017-09-07 جھوٹ کے بازار میں 2017-09-05 گوشت خوری نے یہ دِن دِکھلائے ہیں 2017-09-02 ڈرنے اور مرنے سے پہلے 2017-08-31 سانس بھی لینا وہاں دشوار ہے! 2017-08-30 ڈُبکی اور سُبکی 2017-08-29 کھائیں تو کھائیں کہاں؟ 2017-08-28 چلے بھی ’’جاؤ‘‘ کہ ’’منڈی‘‘ کا کاروبار چلے! 2017-08-26 سورج گرہن کا ’’اجالا‘‘ 2017-08-25 ’’تیسری عالمی جنگ‘‘ 2017-08-24 چوہے دان 2017-08-23 شادی کے ’’سائڈ ایفیکٹس‘‘ 2017-08-22 وقت بچانا درست ہے، مگر … 2017-08-21 بیٹھے رہیں تصوّرِ جاناں کیے ہوئے! 2017-08-18 بج گئے باجے 2017-08-17 ’’جرائم‘‘ تو اچھے ہوتے ہیں! 2017-08-16 خوب جیو… مگر کیوں؟ 2017-08-14 کہاں ڈوبا ہے غیرت کا سفینہ؟ 2017-08-11 ایک ملک‘ ایک نشہ 2017-08-08 ’’محافظ‘‘ ہونے کا خنّاس 2017-08-07 نکل بھاگنے کا بھی اپنا مزا تھا! 2017-08-04 پڑوس کے ڈھول بھی سہانے 2017-08-03 دیوتا بننے کی حسرت … 2017-08-02 درد جب حد سے گزرتا ہے … 2017-07-31 … اپنی اداؤں پہ ذرا غور کریں! 2017-07-29 سُندر سپنے اور باسی روٹی! 2017-07-27 بارش کے ’’سائڈ ایفیکٹس‘‘ 2017-07-25 محبت وحبت سے آگے کی بات! 2017-07-24 آر پار ٹھنڈا ٹھار! 2017-07-22 جو نہیں ہے وہ خوبصورت ہے! 2017-07-20 ’’بگ باس‘‘ آخر چاہتا کیا ہے؟ 2017-07-18 خربوزے کا اصول 2017-07-15 سوچنے کا وقت کس کے پاس ہے؟ 2017-07-13 کہیں انسانیت ہی بہہ نہ جائے 2017-07-12 انسان اور پتھر 2017-07-11 شکر ہے، ہم انوکھے نہیں 2017-07-10 لاٹری اور ضبطِ نفس 2017-07-08 یہی آخر کو ٹھہرا فن ہمارا 2017-07-07 ’’ہمتِ نسواں‘‘ مددِ خدا! 2017-07-05 انکار کو سمجھنے کا ہُنر 2017-07-03 انکاری قبیلے کا ’’جوانِ رعنا‘‘ 2017-06-30 دولہا منڈی 2017-06-29 ’’ایزیو تھراپی‘‘ 2017-06-26 آئیے، کھائیے، جائیے! 2017-06-23 کیوں نہ رہیں پھر جیل میں ! 2017-06-21 ہاں، مگر حوصلہ نہیں ہوتا 2017-06-20 کیسے نکالیں منہ سے یہ کافر گُھسا ہوا! 2017-06-17 ’’کھلے دل‘‘ کے لوگ 2017-06-16 ہتھوڑے 2017-06-14 باتیں کروڑوں کی… 2017-06-11 بے ذہنی کی بہار … مگر کیوں؟ 2017-06-09 یہی چراغ جلیں گے تو روشنی ہوگی 2017-06-05 واہ پانڈے جی، واہ! 2017-06-03 بہتے پانی پہ کائی جم جائے! 2017-05-31 ’’فیملی فن فیئر‘‘ 2017-05-26 کام نے بالکل نِکمّا کردیا! 2017-05-25 ’’بھارت ہٹھ‘‘ 2017-05-22 تحقیق کا پھندا 2017-05-20 رسموں کا مایا جال 2017-05-19 نہ ہم سمجھے نہ آپ آئے کہیں سے! 2017-05-17 کبوتر 2017-05-16 نادان بھینس، سرکاری گھاس 2017-05-14 … آدمی بن جائیے! 2017-05-12 خواہش کی زنجیر 2017-05-11 خربوزہ اور چھری 2017-05-10 لے چلا جان مِری… 2017-05-07 ’’ہم ہیں ناں!‘‘ 2017-05-04 ’’لاتوں کے بھوت‘‘ ہوش یار! 2017-05-03 خونچکاں انجام 2017-05-02 کیچڑ سے ڈنڈے تک 2017-04-29 ’’ڈیلی پلیژر ٹرپ‘‘ 2017-04-28 گدھوں کی ’’رخصتی‘‘ 2017-04-26 پھر دل میں کیا رہے گا … 2017-04-24 گائے، بکری اور شیر 2017-04-20 ’’بغل بَچّے‘‘ بچانے کی کوشش 2017-04-17 کہانی پوری فلمی ہے! 2017-04-15 آتی جاتی ’’ساس‘‘ کا عالم نہ پوچھ! 2017-04-10 فلسفوں کی دُھول 2017-04-06 … ایسا کب تک چلے گا! 2017-04-01 تحقیق کی دوڑ … خرّاٹوں تک! 2017-03-23 موت سے زندگی تک 2017-03-19 جانوروں کو سمجھائے کون؟ 2017-03-16 مر کے بھی چین نہ پایا تو... 2017-03-11 ہاں، ’’تم‘‘ بھی نکل جاؤ! 2017-03-09 مان نہ مان … میں ہوں تجزیہ کار! 2017-03-04 کلہاڑی اور بیلچہ 2017-02-25 حیوان پرستی 2017-02-20 محبت وحبت کنارے کنارے 2017-02-18 بچے کھچے کھانے کی سپر مارکیٹ 2017-02-16 اختیارات کی ’’چیمپئن شپ‘‘ 2017-02-14 ٹھنڈی ٹھار زندگی 2017-02-11 چڑیا گھر کو بخش دیا جائے! 2017-02-09 مرے تیس کے، دفنائے گئے ساٹھ کے! 2017-02-07 پھر تو چل چُکی یہ دُنیا! 2017-02-04 ماس ٹرانزٹ کا ڈیلی سرکس 2017-02-02 … دیکھ تو لیتے پہلے 2017-02-01 نیند میں غرقاب رہیے اور ذہانت پائیے! 2017-01-31 یہ چَین سے کھانے بھی نہیں دیں گے! 2017-01-30 اور کاندھا مل گیا … 2017-01-26 سادگی تو دیکھیے! 2017-01-25 مغرب کا گورباچوف؟ 2017-01-24 ’’شاہی بُوٹی‘‘ 2017-01-21 اِک ذرا گھر سے نکلیے … 2017-01-19 … وقت کس کی رعونت پہ ’’آب‘‘ ڈال گیا! 2017-01-16 تان ٹوٹتی ہے بچے بڑھانے پر 2017-01-14 پاؤں رکھتا ہوں اور کہیں پڑتا ہے! 2017-01-12 سردی کا ستم! 2017-01-10 شیر کی دُم پر پاؤں 2017-01-07 لنکا ڈھانے کا فیشن 2017-01-05 ’’خوب‘‘ گزرے گی … 2017-01-03 یو ٹرن میں پی ایچ ڈی 2017-01-02 یہ کھیل نہیں ہے بچوں کا 2016-12-29 ’’میں کھاؤں، تُو نہ کھا!‘‘ 2016-12-28 گئی بھینس پانی میں … 2016-12-27 ’’مولا بخش‘‘ 2016-12-26 مشرق سے ابھرتے ہوئے سورج کو ذرا دیکھ! 2016-12-24 صدقے کی اڑان! 2016-12-20 عوام؟ … عوام کون؟ 2016-12-19 … زیبِ داستاں کے لیے 2016-12-12 بھارت کا عجب رویہ 2016-12-10 … سَر جھکا دیئے ہی بنے! 2016-12-07 شیر کا مُنہ اور ہمارا ہاتھ 2016-12-05 باتوں کی پیالی میں ٹھنڈی چائے ! 2016-12-02 میرا کی ’’مشکلات‘‘ 2016-12-01 ’’ہانکا‘‘ 2016-11-30 شر کے بطن سے ’’خیر‘‘ کی پیدائش 2016-11-29 کہیں سیٹی نہ بج جائے 2016-11-28 ایک، دو اور … تین! 2016-11-23 وہ کہیں اور سُنا کرے کوئی 2016-11-21 تیار تو رہنا پڑے گا!! 2016-11-20 شکر کی بوری 2016-11-19 کڑک چائے کا ’’مزا‘‘ 2016-11-18 … مگر 2016-11-16 ٹرمپ نے کھائی پلٹی! 2016-11-15 ’’بیٹی پیدا ہی کیوں ہوئی؟‘‘ 2016-11-14 مُرغے کی شامتِ اعمال 2016-11-10 پھر وہی … شادی خانہ آبادی! 2016-11-08 سُر میں گایا تو مار کھاؤگے! 2016-11-07 کون بنے گا بے وقوف؟ 2016-11-05 تو پھر … ’’وٹّہ سٹّہ‘‘ ہو جائے! 2016-11-03 قدم قدم پہ بِچھے ہیں عجیب ’’گالی چے‘‘ 2016-11-02 جو ڈر گیا، سمجھو مرگیا! 2016-10-31 مُرجھائے پُھول کِھل اُٹھے میرے مزار کے 2016-10-27 … فریاد کے دن تھوڑے ہیں! 2016-10-25 … جو کھوگئی وہ چیز کیا تھی؟ 2016-10-24 یہ کیا کم ہے کہ زندہ ہیں! 2016-10-22 … تماشا نہ ہوا ! 2016-10-20 حاضر جناب ! 2016-10-19 پاگل کُتّے نے نہیں کاٹا 2016-10-18 وقت کی ’’ٹارگٹ کلنگ‘‘ 2016-10-17 ’’مُردہ خرابی‘‘ کی روایت 2016-10-11 بات پہنچی … ’’دلالی‘‘ تک! 2016-10-10 ڈھول بجے تو کون نہ ناچے! 2016-10-08 حیوانات کو بخش دیا جائے 2016-10-06 ’’اوقات‘‘ میں لانے کی تیاری؟ 2016-09-26 ’’اب تو میں صرف جیت سکتا ہوں!‘‘ 2016-09-24 جہاں چار یار مل جائیں … 2016-09-23 ’’جُنونِ لطیفہ‘‘ 2016-09-22 خط لکھیں گے، گرچہ مطلب کچھ نہ ہو! 2016-09-16 اِخلاص سے اِخلاص تک 2016-09-13 اگر تم مل جاؤ … 2016-09-12 بندھی آپ کے در پہ بھی ایک گائے 2016-09-10 چھوڑو بھی… ہوتا رہے گا کام! 2016-09-08 جانوروں کی بہار 2016-09-06 آپ اِس سال ’’کیا‘‘ کر رہے ہیں؟ 2016-09-05 پہلے دل تو پیدا کیجیے! 2016-09-02 شاہ صاحب کا شکریہ ! 2016-09-01 سینے میں جلن، آنکھوں میں طوفان سا کیوں ہے؟ 2016-08-30 صرف پانچ منٹ 2016-08-29 ’’اُسترا‘‘ تو ہوتا ہے اِس طرح کے کاموں میں 2016-08-22 … پسِ آئینہ کوئی اور ہے! 2016-08-19 وہی رونا ہے یارو! دوستوں کا، دوستی کا! 2016-08-18 دو دن کام، پانچ دن آرام 2016-08-17 یہ عالم ’’خوف‘‘ کا دیکھا نہ جائے 2016-08-15 ’’ڈمپ‘‘ کارڈ 2016-08-12 کامیابی سے نفرت! … مگر کیوں؟ 2016-08-11 ہیں خواب میں ہنوز جو جاگے ہیں خواب میں 2016-08-10 پھر وہی پاؤں، وہی خارِ مغیلاں ہوں گے؟ 2016-08-09 وہ زمانہ کہاں سے لائیں ہم 2016-08-08 ’’تحقیق‘‘ کی مشین گن 2016-08-05 یہی تو ہم بھی کہتے آئے ہیں 2016-08-03 تعلیم کہاں سے بیچ میں آ جاتی ہے! 2016-08-02 موازنے کا بخار 2016-08-01 ہمیں تو لگ پتا گیا! 2016-07-29 بھلی کرے ’’پانی‘‘ آیا! 2016-07-27 ’’بے فضول‘‘ کی بحث 2016-07-26 اِک عمر کا رونا ہے دو دن کی شناسائی 2016-07-25 چھتّیس کا آنکڑا 2016-07-21 خواجہ صاحب کا جوش و خروش 2016-07-20 اُٹھا بندوق اور لگا نشانہ… مَردوں پر! 2016-07-18 بول کھوپڑی بول 2016-07-16 تفریح نامہ 2016-07-15 مزے مزے کی ملازمتیں 2016-07-14 عیدکے لمحات 2016-07-06 بس ذرا عید گزر جائے 2016-07-04 بارے ’’شاپنگ‘‘ کا بیاں ہوجائے! 2016-07-02 دکان داری 2016-06-30 ’’اپنا موضوع‘‘ آپ پیدا کر … 2016-06-27 ہم کہ ٹھہرے ’’پس ماندہ‘‘ … 2016-06-20 ملزم سُورج حاضر ہو! 2016-06-18 خرد کا نام جنوں رکھ دیا … 2016-06-11 ڈھیر لگ جائیں گے بستی میں گریبانوں کے 2016-06-07 کچھ جانور رہ گئے 2016-06-06 یاد رہے صرف کام کی بات 2016-06-02 سفید ہاتھی 2016-06-01 سمندر کے کنارے پر سمندر 2016-05-30 آج ہے محفل دید کے قابل … 2016-05-26 اقرار اور انکار کے درمیان 2016-05-25 بیماریوں میں دم کہاں؟ 2016-05-24 بیٹھ ہی جانا تھا یہ جھاگ 2016-05-23 ہم بیمار نہیں پڑیں گے! 2016-05-21 ’’پھسڈّی‘‘ 2016-05-20 تم سلامت رہو ہزار برس 2016-05-16 لتا جی سے معذرت کے ساتھ 2016-05-14 شادی اور شکار 2016-05-10 عالمی دنوں کا ’’تِراہا‘‘ 2016-05-09 خوب زندہ رہیے، مگر … 2016-05-07 پیٹ بھرے کی مستی 2016-05-06 انار کلی ڈِسکو چلی 2016-05-05 جلد بازی اور بے صبری 2016-05-03 جُھوٹ پٹاری 2016-05-02 ’’کیمسٹری‘‘ کی تلاش 2016-04-30 کس قیامت کے یہ جلسے … 2016-04-28 پرستش ہو تو ایسی ہو! 2016-04-26 وطن کا چہرہ 2016-04-23 شاپنگ ڈریگن 2016-04-22 گورے آخر چاہتے کیا ہیں؟ 2016-04-21 انسان کہاں رہ گیا؟ 2016-04-19 ’’تحقیق و ترقی‘‘ کا عذاب 2016-04-16 لگے رہو طاہر بھائی! 2016-04-14 آنکھ کب کھلے گی؟ 2016-04-13 رب کا شکر ادا کر بھائی! 2016-04-12 پاناما لیکس کا شکریہ! 2016-04-11 ہم کیا، ہماری ذہانت کیا؟ 2016-04-08 ’’کیا حکم ہے میرے آقا!‘‘ 2016-04-07 … یورپ کی آزمائش 2016-04-06 اب تو عادت سی ہے ہم کو … 2016-04-02 چوہوں کی باری 2016-03-31 پسپائی کیوں؟ 2016-03-30 ’’خمیرہ کھائو دماغ‘‘ 2016-03-28 ایک بچہ اور سہی 2016-03-25 ’’بابوں‘‘ کا دیس 2016-03-24 ریکارڈز ہمارے غلام 2016-03-22 چشتی صاحب کی کہانی 2016-03-21 … آسیب کا سایہ ہے، یا کیا ہے؟ 2016-03-18 راوی ’’ٹھنڈا ٹھار‘‘ لکھتا ہے! 2016-03-16 لوگ کریں میرا کو یونہی بدنام! 2016-03-15 سَر جُھکانا پڑے گا 2016-03-11 نائٹ شفٹ کا راگ کھٹ راگ 2016-03-09 اِس تکلّف کی کیا ضرورت تھی! 2016-03-08 زندگی کو غنیمت جانیے 2016-03-07 انسان اور پرندے … ایک پیج پر! 2016-03-05 ہم تو پہلے سے جانتے ہیں! 2016-03-03 اب محبت کہاں سے لائیں ہم! 2016-03-01 ’’اِنچان کو شب پتا ہوتا ہے!‘‘ 2016-02-29 بے پَر کی اُڑانے کا فن 2016-02-28 ’’بول میری مچھلی، کتنا پانی؟‘‘ 2016-02-27 خلا اور بیت الخلا 2016-02-25 پیو اور جیو، جب تک دم میں ہے دم! 2016-02-24 خود کو دُہراتی تاریخ 2016-02-23 غزل اُس نے چھیڑی … 2016-02-22 بھیڑ چال کی بھی واپسی؟ 2016-02-21 دو چار ’’ہٹلر‘‘ درکار ہیں ! 2016-02-19 ماہرین کا چور دروازہ 2016-02-18 … ’’غمِ یار‘‘ کو لات مارنے کا مقام 2016-02-16 جنگ آپ اپنی فاتح ہوتی ہے ! 2016-02-15 صرف ایک دن کیوں؟ 2016-02-14 ہم ’’بڑے‘‘ کب ہوں گے؟ 2016-02-13 انسان بھی تو کچھ سمجھے اور سیکھے! 2016-02-12 ہڑتال کی لینڈنگ 2016-02-11 اصلی کالا جادو 2016-02-10 نیلے فیتے کا زہر 2016-02-09 ’’تقریب کار‘‘ 2016-02-08 … چلتا رہے یہ کارواں 2016-02-07 تعلیم کا ڈبہ گول 2016-02-06 ’’اپنا تھانہ‘‘ آپ پیدا کر … 2016-02-04 تَھر: سنہرا موقع بھی تو ہے! 2016-02-03 یہی سَر کام کے ہوجائیں تو اچھا! 2016-02-02 آگ کو سمجھنا ضروری ہے! 2016-01-31 بندر ہی سے کچھ سیکھیے 2016-01-30 خیالی پلاؤ 2016-01-29 … ہم دل کشادہ رکھتے ہیں! 2016-01-28 ’’پارٹی تو اب شروع ہوئی ہے!‘‘ 2016-01-26 تیل تماشا 2016-01-25 ہے کوئی ہم کو جگانے والا؟ 2016-01-24 مُوڈ بحال کرنے کا نُسخہ 2016-01-23 فرمائشی پروگرام 2016-01-21 ’’رائے خامہ‘‘ کے جائزے 2016-01-19 ’’ہیٹ ٹرک‘‘ کا انتظار 2016-01-18 ڈرنا ہے تو چُوہے ڈریں! 2016-01-17 ’’شریف آدمی‘‘ 2016-01-16 … بُرا مان گئے! 2016-01-14 اور ’’منٹو‘‘ جیت گئی! 2016-01-12 دال کا سال 2016-01-11 یُوں تو چھوٹی ہے ذات مکھی کی 2016-01-09 ’’آئے ہوئے شاعر‘‘ 2016-01-08 ’’ذکرِ سگاں‘‘ بھی ہوجائے! 2016-01-07 ہم کہ ٹھہرے مقناطیس 2016-01-05 ماتھے پر کچھ اور لکھا ہے 2016-01-04 ’’پیدائشی فریضہ‘‘ 2016-01-03 تناؤ کی ٹینشن 2016-01-01 ’’سازش‘‘ 2015-12-31 ’’عذابات‘‘ کرو ہو! 2015-12-30 امن کا مچھر 2015-12-29 یہ ڈرامے دکھائیں گے کیا سین 2015-12-27 … مرگِ مفاجات! 2015-12-22 اللہ میاں کی گائے 2015-12-21 کھاتے پیتے جہاں سے گزر 2015-12-20 لا وارث گدھوں سے ذرا بچ کے 2015-12-19 انتظار کا پلیٹ فارم 2015-12-17 MODI SMILING! 2015-12-16 وہی رونا ہے … کراچی کا! 2015-12-14 غضب ڈھاتی تکیہ کلامی 2015-12-13 مہا راج ہیں اپنی غرض کے بندے 2015-12-12 کیا کرنا ہے اِتنا جی کے؟ 2015-12-11 پیسہ پھینک ٗ تماشا دیکھ 2015-12-09 ’’چمکتا، دمکتا‘‘ بھارت 2015-12-08 سنگیت کا جادو 2015-12-06 شیر اور بکرا بکری 2015-12-05 آسانیوں کی دلدل 2015-12-03 کون سی نئی بات ہے؟ 2015-12-02 کچھ ہوتا نظر کیوں نہیں آتا؟ 2015-12-01 ’’دِلیرانہ‘‘ آئے، صدا کر چلے 2015-11-29 نئی بوتل 2015-11-28 ’’تھیم‘‘ کا کمال 2015-11-27 … اور ملتان آگیا 2015-11-25 لگی بندھی سوچ کے کھمبے 2015-11-24 دل کا دورہ؟ مائی فُٹ! 2015-11-23 بات تو سچ ہے، مگر … 2015-11-22 کوئی دیکھے ’’کمالِ بے ہُنری‘‘ 2015-11-21 آسان نسخہ 2015-11-19 خراٹے اور تعلیم 2015-11-16 ہوش جاتے رہے تو ہوش آیا! 2015-11-15 ’’تخلیقی‘‘ جوہر سے ذرا بچ کے! 2015-11-14 سیکھا‘ تو گئے کام سے! 2015-11-11 بات پہنچی … موٹاپے تک 2015-11-10 ووٹ بینک کی سیاست … کب تک؟ 2015-11-09 ’’اَن سوشل‘‘ میڈیا 2015-11-08 باڈی لینگویج 2015-11-04 گھر کے کام اور عالمی ریکارڈ 2015-11-03 ’’کیکٹس‘‘ 2015-11-02 نہ ستائش کی تمنّا، نہ صِلے کی پروا 2015-11-01 صرف سُونگھ کر … 2015-10-30 مارے گئے گل فام؟ 2015-10-28 ڈپریشن ذرا سامنے تو آئے 2015-10-27 گوجرانوالہ سے کویت تک 2015-10-26 ایسا موقع پھر کہاں ملے گا؟ 2015-10-23 فرصت کے دھندے 2015-10-19 گربہ کُشتن روزِ اوّل 2015-10-18 ایک اور ایک … ایک! 2015-10-17 اتنے جوتے کہاں سے لائیں ہم؟ 2015-10-15 جو مل گیا وہی مُقدّر 2015-10-14 ’’قاتلوں‘‘ کو یہ بھی آتا ہے ہنر! 2015-10-13 ہم کو عبث بدنام کیا! 2015-10-12 دل کے بہلانے کو… 2015-10-11 ’’انہیں‘‘ تو اور کوئی کام بھی نہیں آتا 2015-10-10 زور کا جھٹکا دھیرے سے لگے! 2015-10-09 خواتین کے زخموں پر تحقیق کا نمک 2015-10-05 ہم کون ہیں؟ 2015-10-04 دل ٹوٹ جائیں گے! 2015-10-03 کچری پاؤڈر 2015-10-01 خوف کا فسانہ 2015-09-29 وہ صبح کبھی تو آئے گی! 2015-09-28 آج کا دن کئی ذبیحے چاہتا ہے! 2015-09-25 کم بخت زمینی حقائق! 2015-09-22 سرکاری ہسپتالوں کی صحتِ عامہ 2015-09-21 … ہم بھی تو پڑے ہیں راہوں میں! 2015-09-20 اکیس سال قیدِ ’’بامسرّت‘‘ 2015-09-16 چھوٹی عمر، بڑی زندگی 2015-09-15 بُری عادت چھوڑنے کا طریقہ 2015-09-13 بات پہنچی… پھر دماغ تک 2015-09-12 سُورج کا نرالا استعمال 2015-09-11 گدھے … یہیں کے! 2015-09-10 ’’نیا پاکستان‘‘ 2015-09-08 پتھر ہی لے چلیں 2015-09-07 جھٹکا ماقبلِ ذبیحہ 2015-09-05 کہہ دو کوئی نا کرے یہاں کام! 2015-08-31 کہیں کا نہ چھوڑا … سیلفی نے 2015-08-30 ماروں گُھٹنا … پُھوٹے آنکھ 2015-08-23 پھندا 2015-08-22 تحقیق کے بے زبان اہداف 2015-08-20 ’’تُو مسلمان کو ہاتھ لگالے!‘‘ 2015-08-19 بولتے رہو مُنّا بھائی! 2015-08-18 تحفظات کی سُولی! 2015-08-17 آگ سے علاج 2015-08-14 ’’محبوبی‘‘ مزاج کا شکریہ 2015-08-13 پھر وہی بھیڑ چال؟ 2015-08-12 ریاست کھڑی ہے 2015-08-11 انڈوں کا حساب 2015-08-10 ہم بھی وہیں موجود تھے 2015-08-09 دنیا تو جُھوٹی ہے 2015-08-08 قصہ درخت پیمائی کا 2015-08-06 تبدیلی کا راگ 2015-08-05 جی ہی لیتے ہیں لوگ 2015-08-04 شیر اور بندر 2015-08-01 آئے موسم ہمیں آزمانے 2015-07-28 زندہ لاشیں 2015-07-27 فیصلے کی گھڑی 2015-07-26 ’’سیلابی میلہ‘‘ 2015-07-24 ہم کہ ٹھہرے ’’شاپنگ گزیدہ‘‘ ! 2015-07-23 پہلے کتا نکالیے! 2015-07-22 حالاتِ حاضرہ کو کئی سال ہوگئے ! 2015-07-21 عید کی شاپنگ کا جنون 2015-07-17 گرمی کا ناقابل یقین فائدہ 2015-07-11 انسان کو زندہ کرنا پڑے گا! 2015-07-05 تم بات کرو ہو کہ ’’مذاقات‘‘ کرو ہو! 2015-07-04 اور اب … ’’دہشت گرمی‘‘ 2015-06-30 جوانی لوٹ کے آئے نا! 2015-06-28 بے دِماغی کو معجزہ کہیے! 2015-06-27 کوئی ہمیں چٹ نہ کرجائے! 2015-06-24 مان نہ مان، میں تیرا استاد 2015-06-20 اُلّو اور گدھے 2015-06-16 کچھ ’’کھٹّا‘‘ ہو جائے 2015-06-15 یہ نشہ کب اترے گا؟ 2015-06-14 نیند کیوں ’’پیٹ‘‘ بھر نہیں آتی؟ 2015-06-13 کون کرے اب کام؟ 2015-06-09 اصلیت کا رنگ نہ چُھوٹے! 2015-06-06 ’’فنکاری‘‘ 2015-06-04 ’’مجبوری‘‘ 2015-06-02 رسموں سے ذرا بچ کے 2015-06-01 کون روک سکتا ہے؟ 2015-05-30 سیکھنا تو پڑے گا! 2015-05-28 ’’آپ تو قتلِ عام کر رہے ہیں!‘‘ 2015-05-27 بھرپور ترقی سے کیا ملتا ہے؟ 2015-05-26 چڑھ جاتے ہیں نالے! 2015-05-23 چڑھ جاتے ہیں نالے! 2015-05-16 شرافت کا تقاضا 2015-05-22 ’’تحقیق و ترقی‘‘ کا پھندا 2015-05-19 گورے باز نہ آئیں گے 2015-05-18 سَلّو بھائی کا نیا سیزن 2015-05-17 سیلفی فوبیا 2015-05-16 فکشن رائٹر سے انٹرویو 2015-05-13 سوشل میڈیا کا شکنجہ 2015-05-12 سوشل میڈیا کا شکنجہ 2015-05-11 یہ دریا اتر نہ جائے کہیں! 2015-05-11 نو ٹینشن، پلیز! 2015-05-09 بیٹے کی بُوٹی 2015-05-08 انڈے کا فنڈا … 2015-05-06 یہ کوئی نیا فن نہیں ! 2015-05-05 نگرانی کا آپشن 2015-05-04 …کہانی محبت کی زندہ رہے گی ! 2015-05-03 دُکھ بھلانے کا آسان نسخہ! 2015-05-02 اور کرو جُھوٹ سے نفرت! 2015-04-30 ایک ذرا سے نام کی خاطر 2015-04-28 بندروں پر بُرا وقت 2015-04-27 چھوٹے دِماغ کے لوگ 2015-04-25 ہاضمے کا چُورن! 2015-04-24 جُھوٹ بولو، جُھوٹ! 2015-04-21 محبت ایسی بھی اندھی نہ ہو … 2015-04-20 وسوسوں کے سوداگر 2015-04-19 shock کی کوئی قیمت نہیں 2015-04-18 مہدی حسن نے پھر رُلا دیا! 2015-04-15 لگے رہو … ’’لالی وُڈ‘‘ بھائی! 2015-04-14 طویلے کی بَلا بندر کے سَر 2015-04-13 منتخب ایوان کی شگفتہ بیانیاں 2015-04-11 لکھنے کا دردِ سر 2015-04-08 لائف ٹائم ایونٹ 2015-04-05 کام تو چل ہی رہا ہے! 2015-04-04 علم کہاں سے بیچ میں آگیا؟ 2015-03-30 جھکنا سیکھ لیجیے 2015-03-29 ابھی تو ’’وہ‘‘ جوان ہیں! 2015-03-28 ’’بُزدِل‘‘ کہیں کے! 2015-03-27 پاکستانی مزاج کا برطانوی بچہ 2015-03-24 ’’ٹوئسٹ‘‘ کی تلاش 2015-03-23 بوجھ وہ آن پڑا ہے … 2015-03-17 ترقی کا نتیجہ 2015-03-16 ’’سریلی گورننس‘‘ 2015-03-15 زمین کو بھی یاد رکھیے! 2015-03-13 اپنی بجلی آپ پیدا کر … 2015-03-09 خدا کرے کہ یہ دیوانگی رہے باقی 2015-03-08 یک نہ شُد، دو شُد! 2015-03-07 آرام کی کہانی 2015-03-05 ’’سچ بولیں‘‘ تو کَوّا کاٹے! 2015-03-03 تول مول کے بول 2015-03-02 کرو یا مَرو 2015-03-01 ’’پیار‘‘ سے ڈر لگتا ہے! 2015-02-28 … باتوں سے ’’خوشبو‘‘ آئے! 2015-02-27 کیسینو سے فوجی عدالت تک 2015-02-25 نصیر بھائی … انگور کھٹے ہیں؟ 2015-02-24 از خود نوٹس 2015-02-23 تماشا جاری رہنا چاہیے! 2015-02-22 پیٹ بھرے کی مستی 2015-02-21 بھونکنا منع ہے! 2015-02-20 قِصّہ ڈوب مرنے کا 2015-02-19 تعلیم ہو تو ایسی 2015-02-18 وکھری ٹائپ کے نازنین 2015-02-16 وہی انگریزی کا رونا 2015-02-15 ’’محبت‘‘ اور آسانی 2015-02-14 ’’سنبھالنے‘‘ والا! 2015-02-13 عام آدمی کا چمتکار 2015-02-11 لائن رینٹ 2015-02-09 کوئی تو ہو … 2015-02-08 دِل ہی جب درد ہو تو کیا کیجے! 2015-02-07 نیند کیوں رات بھر نہیں آتی؟ 2015-02-05 دِل کا کیا کریں صاحب! 2015-02-04 لمبی عمر کا کرنا کیا ہے؟ 2015-02-03 بیٹھے رہیں ’’تصوّرِ کھانا‘‘ کئے ہوئے! 2015-02-02 مہنگائی کا جِن 2015-02-01 موٹاپے کو بائے بائے؟ 2015-01-31 چینیوں نے کچھ نہیں سیکھا 2015-01-29 آؤ مچائیں شور! 2015-01-27 نہائیں کیا، نچوڑیں کیا؟ 2015-01-24 پٹرول کی ٹھنڈک 2015-01-22 امریکی پالیسیوں کا حاصل ! 2015-01-20 گُڑیا کے بال 2015-01-17 دو ٹانگوں والے گدھے 2015-01-14 ’’مَدھو بَن‘‘ میں رادِھیکا ناچے 2015-01-12 دلوں پر قفل 2015-01-11 ’’واٹر ٹیسٹ کیس‘‘ 2015-01-06 مداری کا دردِ سَر 2015-01-03 کیسی سازش؟ 2014-12-30 آئیے، فخر کریں! 2014-12-26 … عجب زمانہ ہے یہ زمانہ 2014-12-23 سُپر چُوہے 2014-12-20 کلکتہ کا جو ذِکر کیا … 2014-12-16 بڑے دھوکے ہیں اِس راہ میں 2014-12-13 اک ذرا سی شادی کی خاطر 2014-12-08 چڑیا گھر کی زبان 2014-12-06 ٹنکی اور نوٹنکی 2014-12-03 خط نہیں، خطِ مُستقیم! 2014-12-02 32 سیکنڈ کا مُصافحہ 2014-12-01 ’’بولتے رہو، مزا آرہا ہے!‘‘ 2014-11-29 جون ایلیا کی تلاش 2014-11-26 طوفان کی آنکھ 2014-11-25 خطرے کی گھنٹی 2014-11-23 فیصلہ کن جنگ 2014-11-22 ’’خود خوش‘‘ سیاست دان 2014-11-20 لائیو کا چَسکا 2014-11-19 اور پانی مرگیا 2014-11-17 ’’خطرناک‘‘ قوم 2014-11-16 تجھ کو پرائی کیا پڑی 2014-11-15 مایا نگری 2014-11-13 سُوکھی زمین کا سیلاب 2014-11-11 خدا محفوظ رکھے … ماہرین سے! 2014-11-09 احتجاج کا چٹخارا 2014-11-07 طوفان کی بھینس گئی پانی میں! 2014-11-02 اسٹیک ہولڈرز ہُشیار باش! 2014-11-01 آؤ سو جائیں! 2014-10-30 تھوڑا سا پاگل پن 2014-10-29 خوابوں کی جنّت 2014-10-28 پولیس کی مہربانی 2014-10-27 عظمت اور پاگل پن 2014-10-25 انگور کا دانہ 2014-10-23 بچپنے کا شباب، کیا کہیے! 2014-10-21 … جلسوں میں اٹکے! 2014-10-18 آج پھر تم پہ ’’خار‘‘ آیا ہے! 2014-10-17 ایک دن کا ہفتہ 2014-10-14 کچی شراب، پکے نشے 2014-10-13 توپ خانہ 2014-10-11 دروازہ اور روشن دان 2014-10-10 وہ چھری کب پِھرے گی؟ 2014-10-06 ڈنڈے سے تسبیح تک 2014-10-05 انجام بخیر ہونا چاہیے! 2014-10-03 آنا جانا بھی روز کا ہے عذاب 2014-10-02 بات کچھ اور تو نہیں؟ 2014-09-30 میٹر گھوم چُکا ہے، مگر … 2014-09-29 احترام جانوروں کیلئے ہے 2014-09-28 حُسنِ اختلاف کی تابندہ علامت 2014-09-27 … انجام خدا جانے 2014-09-24 مُنہ چِڑاتی تصویر 2014-09-23 سمجھوتہ غموں سے کرلو … 2014-09-22 وہ سیلاب کب آئے گا؟ 2014-09-20 کوکنگ ایکسپرٹ سے انٹرویو 2014-09-16 دم نہ کشیدم … 2014-09-13 انتہا سے انتہا تک 2014-09-10 ملبہ کون اُٹھائے گا؟ 2014-09-07 لنگوٹی ہی سہی 2014-09-06 کون سُنے فریاد؟ 2014-09-05 بند گلی کا دیس 2014-09-03 بس ہوچکی نماز، مُصلّیٰ اُٹھائیے! 2014-08-30 خیر گزری کہ … 2014-08-28 ’’کام میرا چل رہا ہے!‘‘ 2014-08-26 گلاس توڑا، بارہ آنے 2014-08-23 یہ ہنگامہ اے خدا کیا ہے! 2014-08-20 بے موسم کا پھل 2014-08-19 پکا پکایا تازہ انقلاب 2014-08-16 ہیپی ’’باتھ ڈے‘‘ ٹُو می! 2014-08-13 مُرغے کا انڈا 2014-08-09 برفانی تودے کا سِرا 2014-08-05 شاپنگ رے شاپنگ! 2014-07-28 یوں تو چھوٹی ہے ذات بکرے کی 2014-07-26 اِس غم کو مار ڈالو! 2014-07-22 سانپ اور بِچّھو جیت گئے 2014-07-20 زور کا جھٹکا، دِھیرے سے لگے! 2014-07-16 کھانے کاجذبہ 2014-07-14 میچ تھا یا مذاق؟ 2014-07-12 انقلاب؟ کیا مذاق ہے جناب! 2014-07-02 ’’انقلاب‘‘ سے انٹرویو 2014-06-30 کچن آف لائن 2014-06-28 اینٹ کا جواب دیوار؟ 2014-06-24 دِل جلانے کی بات کرتے ہو! 2014-06-23 فریبِ ذات سے آگے … 2014-06-19 لات کھاؤ، مال پاؤ! 2014-06-18 گرمی کا دُشمن … احتجاجی شربت 2014-06-16 جنگل کا قانون؟ 2014-06-14 ایک لفظ کی جادو گری 2014-06-10 نکلے تری تلاش میں … 2014-06-08 پوائنٹ اسکورنگ سے آگے 2014-06-04 ذبیحہ اور جھٹکا 2014-06-02 بندر کا ویزا 2014-05-29 انڈین چائنا شاپ 2014-05-28 ریکارڈز کا زمانہ 2014-05-26 ’’انتہائی‘‘ رویّہ 2014-05-22 ’’نیچرل اینٹی ڈپریسنٹ‘‘ 2014-05-17 خُونیں معاشرہ، خُونی امراض 2014-05-09 عوام انقلاب چاہتے ہیں؟ 2014-05-07 دُکان پکوڑوں کی 2014-05-04 گدھے کے گوشت کی کہانی 2014-05-03 بُھوک لگتی نہیں‘ پیٹ بھرتا نہیں! 2014-05-02 مُرغیوں سے بطخوں تک! 2014-04-30 عام آدمی سے گفتگو 2014-04-28 بے وقوف بنانے کا دھندا 2014-04-26 یہ نصف صدی کا قِصّہ ہے … 2014-04-24 ہاتھی کی سواری گزر رہی ہے! 2014-04-22 ’’جا بیل، اُسے مار!‘‘ 2014-04-21 مغربی دانش کے دلدادہ 2014-04-19 نمک کی کان 2014-04-16 آملیٹ 2014-04-15 بس، بندہ ڈھیٹ ہونا چاہیے! 2014-04-12 مارننگ سُپر مارکیٹ 2014-04-03 کرکٹ کا بخار اور ’’خار‘‘ 2014-04-01 حد کردی آپ نے 2014-03-29 ایک قدم آگے جاکر 2014-03-28 طیارہ ڈھونڈنے کا صحیح طریقہ 2014-03-23 اِک آگ کا دریا ہے اور ڈوب کے جانا ہے 2014-03-22 وہ کہاں اور ہم کہاں! 2014-03-16 رونق میلے کی خیر ہو! 2014-03-11 سب کا حال بُرا ہے یارو! 2014-03-08 اور کرکٹ جیت گئی! 2014-03-04 جب کیک کا پیٹ چاک ہوا 2014-03-03 بہت دُور کی سُوجھی! 2014-03-01 تحقیق کے شاخسانے 2014-02-26 درد کا حد سے گزرنا ہے دوا ہو جانا؟ 2014-02-23 سیاسی خوش فہمی! 2014-02-22 مذاکرات کی ڈگڈگی 2014-02-20 اب رہائی ملے گی تو مر جائیں گے! 2014-02-15 اِک تیر میرے سینے پہ مارا کہ ہائے ہائے 2014-02-14 منظور وسان کی تازہ انٹری 2014-02-10 مہا راج کی اُونچی اُڑان 2014-02-09 ہنسنے پر کوئی پابندی نہیں! 2014-02-08 ’’شیشہ‘‘ پِلائی دیوار! 2014-02-05 جل بھی چُکے پروانے، ہو بھی چُکی رسوائی 2014-02-01 باتوں کے فیشن ڈیزائنر 2014-01-28 رات کے راہی 2014-01-24 خاکم بہ ’’شِکم‘‘ 2014-01-22 خاکم بہ ’’شِکم‘‘ 2014-01-22 یہ ہے چنگ چی میری جان! 2014-01-21 ٹیڑھے مزاج کے لوگ 2014-01-18 جانوروں کو رُسوا‘ نہ کریں 2014-01-14 مجبوری کا نام شکریہ 2014-01-11 کامیڈینز کی ٹریجڈی 2014-01-08 ہزاروں خواہشیں ایسی… 2014-01-04 یہ تو کوئی بات نہ ہوئی! 2014-01-01 کرکٹ اور کوڑا کرکٹ 2013-12-28 ولولہ تو خوب ہے ، مگر… 2013-12-25 بے چاری جمہوری حکومتیں 2013-12-21 یومیہ تفریحی سفر 2013-12-19 ’’اخراجِ عقیدت‘‘ 2013-12-18 ’’شوروغل‘‘ کے واسطے پیدا کیا انسان کو؟ 2013-12-14 اژدہے کا نیا پروگرام 2013-12-10 ’’ہم‘‘ سے اچھا کون ہے؟ 2013-12-07 ڈھنگ کا مزاح 2013-12-03 … کھائیں گے کیا! 2013-12-02 ’’جینیس‘‘ کی فاضل پیداوار 2013-11-30 کرکٹ کا خیمہ، میڈیا کا اونٹ 2013-11-29 کام کریں آپ کے دُشمن 2013-11-26 گولڈن کامیڈی سرکس 2013-11-23 نوٹ چھاپ معیشت 2013-11-19 ’’اب پیاز بم سے مارے گا پاکستان!‘‘ 2013-11-14 انوکھا لاڈلا، کھیلن کو مانگے … مریخ! 2013-11-09 ہے کیا جو کوئی سُونگھے؟ 2013-11-08 چمچ، گلاس اور بالٹی 2013-11-04 suffer کی training 2013-11-02 کھال اُتاری جاتی رہے گی 2013-10-28 امریکہ کے لیے ’’ٹف ٹائم‘‘ 2013-10-26 ہارٹ بریکنگ نیوز 2013-10-22 مجنوں نظر آتی ہے، لیلیٰ نظر آتا ہے! 2013-10-19 یہی تو زندہ طلسمات ہے سائیں! 2013-10-12 ’’سِکّہ خائف الوقت‘‘ 2013-10-08 ایک کال، لاکھوں کا سَپنا … اور لُٹ گئے آپ! 2013-10-07 جانے وہ دِن کب آئے؟ 2013-10-05 ڈالر کے آگے سجدہ ریز ہونے کا مقابلہ 2013-10-02 ہم ہوئے، تم ہوئے کہ میرؔ ہوئے 2013-10-01 دو مُردوں کی گفتگو 2013-09-27 خواب سے پیش گوئی تک 2013-09-26 کھر صاحب کی شگفتہ بیانی 2013-09-24 آپشن ٹیبل 2013-09-21 گونگی بدمعاشی 2013-09-16 جادوگر کیا بیچتے ہیں! 2013-09-14 صاف پانی کے مچھر 2013-09-11 جھوٹ پکڑنے کی مشین 2013-09-08 اچھا ہے‘ ہم دُور سے پہچانے جائیں! 2013-09-05 ہمیں بھی کاش کوئی پیر مل جائے! 2013-09-03 ’’نصیب‘‘ پریشان ہے! 2013-09-02 جِنّ پرست 2013-08-31 اندھی رقابت کی بند گلی 2013-08-30 ’’سکیورٹی‘‘ کا جادو! 2013-08-28 پانچواں موسم سیلاب کا 2013-08-27 ہم ہیں پاکستانی‘ ہم تو ’’جھیلیں‘‘ گے! 2013-08-24 دونوں طرف ہے آگ برابر لگی ہوئی 2013-08-20 ’’وہ ایک ماریں، تُم پچاس مارو!‘‘ 2013-08-19 ’’چَن میری مکّھیاں‘‘ 2013-08-18 دِل کی دیوار خالی ہے 2013-08-15 عید کے بعد … 2013-08-12 عید کی شاپنگ 2013-08-09 ’’بے فضول‘‘ 2013-08-07 ایک اور سیزن؟ 2013-08-06 وہی مال و منال کا بَچھڑا 2013-08-03 مستند ترین ماہرین کی فیکٹری 2013-07-31 عام آدمی کا فسانہ 2013-07-28 وہ دِماغ ہی نہ رہا! 2013-07-26 ٹماٹر کے بُلند درجات 2013-07-20 لِکھنے کا مزا تو اب آیا! 2013-07-18 گوگل وائف 2013-07-17 کِس شیر کی آمد ہے کہ رَن کانپ رہا ہے! 2013-07-13 شیطان کا کُھلا خط 2013-07-12 نوید سے وعید تک! 2013-07-09 ’’نظریۂ سازش‘‘ 2013-07-06 نئی امریکی گولی 2013-06-30 اب ایسی بھی کیا جلدی ہے! 2013-06-26 جی میں خوب روئیے اب بیٹھ کر کہیں! 2013-06-25 سپنوں کا راج کمار 2013-06-22 آگیا اور چھاگیا … ٹھاہ کرکے! 2013-06-20 کباب میں ہَڈّی 2013-06-15 وقت کم، مقابلہ سخت؟ ہا ہا ہا! 2013-06-14 خود فریبی کا نِرالا سنسار 2013-06-10 اقتدار کا انتقال 2013-06-07 اِک اور دریا کا سامنا؟ 2013-06-05 اِتنا ’’سَنّاٹا‘‘ کیوں ہے بھائی! 2013-06-03 بوتل کہاں سے آئے گی؟ 2013-06-01 کون سی قیامت آ جائے گی؟ 2013-05-31 اپنی پولیس کو سمجھنا پڑے گا 2013-05-27 یہ گھڑی ’’انکار‘‘ کی ہے! 2013-05-26 مُکھڑاچھپاتی بجلی 2013-05-25 آئی پی ایل کا مینا بازار! 2013-05-24 بس‘ اب کام شروع کیا جائے 2013-05-23 احتجاجی قیام نہیں، شکر کا سجدہ! 2013-05-20 منظور وسان کا نیا خواب 2013-05-19 اِنکاری قبیلہ 2013-05-18 حکومت سازی کامشکل مرحلہ 2013-05-16 کیڑوں سے پُرانی دوستی ہے! 2013-05-15 حقیقی فتح کا انتظار 2013-05-14 تخریب کے بھاری پتھر 2013-05-13 بیضۂ بُوم سے اب کے تو ہُما پیدا ہو! 2013-05-12 ووٹ دیں‘تبدیلی لائیں 2013-05-11 انتخابی نشانات کا ’’گول دائرہ!‘‘ 2013-05-07 تین پہیوں کی سیاست 2013-05-06 ’’اشرف المُشکلات‘‘ 2013-05-05 جب کوئی بات ’’پھسل‘‘ جائے! 2013-05-04 ’’گھونگھٹ اُٹھالوں کہ گھونگھٹ نِکالوں؟‘‘ 2013-05-03 ذرا ہٹ کے، ذرا بچ کے! 2013-05-01 روشنی کے شہر میں ظُلمت مُقدّر ہوگئی! 2013-04-30 پولیٹیکل سرکس کا آخری آئٹم 2013-04-29 فِکاہیہ سے مِزاحیہ تک! 2013-04-27 شُکر ہے، ایمان بچ گیا! 2013-04-26 مزا درکار ہے … مگر کیوں؟ 2013-04-24 وہ بھی آجائیں تو مزا آجائے! 2013-04-22 دیکھیے اِس بحر کی تہہ سے اُچھلتا ہے کیا! 2013-04-21 اور جیب کٹ گئی! 2013-04-20 جیسی روح ویسے فرشتے 2013-04-19 نوٹ چھاپنے کی بیماری 2013-04-18 کھیل کُود سے اداکاری تک! 2013-04-17 لوگ جل جائیں گے … 2013-04-16 کوئی جل گیا اور کِسی نے دُعا دی! 2013-04-15 ’’اندھی مَچی ہوئی ہے!‘‘ 2013-04-12 لوہے کو گرم تو ہونے دیجیے 2013-04-11 پتلی گلی اور ٹیڑھی انگلی 2013-04-09 لال بیگ پریشان ہیں! 2013-04-06 اب کے ہم بچھڑے تو شاید کِسی جلسے میں ملیں! 2013-04-04 لہو گرم رکھنے کا ہے اِک بہانہ! 2013-04-02 واعِظ کے مُنہ سے آنے لگی بُو شراب کی! 2013-04-01 ہم بھی کیا یاد کریں گے کہ خُدا رکھتے تھے! 2013-03-28 ’’محفل میں کِس خیال سے پھر آگئے ہیں وہ؟‘‘ 2013-03-26 ’’فنڈنگ‘‘ اللہ کی طرف سے ہو تو اچھا! 2013-03-25 مینارِ پاکستان کی آپ بیتی 2013-03-23 گاجر کا سالن، مُرغی کا حلوہ! 2013-03-20 سُلگتے نشیمن سے جلتے چمن تک! 2013-03-19 چارہ گروں نے اور بھی ’’درد کا دِل‘‘ بڑھا دیا! 2013-03-16 بول کہ لب ’’آزار‘‘ ہیں تیرے! 2013-03-15 جس میں ذرا بھی عقل تھی، دیوانہ ہوگیا! 2013-03-13 بُھوک کی موت 2013-03-09 پھرتے ہیں ’’مرد‘‘ خوار، کوئی پُوچھتا نہیں! 2013-03-08 کُتا کب تک کاٹتا رہے گا! 2013-03-06 عمل کا تصور 2013-03-04 ’’عوامی اتحاد‘‘ کا وقت آن پہنچا! 2013-02-28 کالا جادو 2013-02-26 خسارے کی فارمنگ 2013-02-22 مبالغہ بھی چلے گا , مگر سوچ سمجھ کر 2013-02-19 ایک شہر تھا عالم میں انتخاب! 2013-02-16 ایک شہر تھا عالم میں انتخاب! 2013-02-09 سیاسی محبت کے اظہار کا موسم 2013-02-14 ن لیگ کی ’’دَھرنی‘‘ کا چالیسواں! 2013-02-10 مجبوری کا نام دھرنا! 2013-02-08 ترقیاتی ’’دَھنصوبے‘‘ 2013-02-06 خواتین کو کنٹرول کرنے والا لفظ 2013-02-03 کمزور لمحات کا شکنجہ ! 2013-01-31 بیان بازار کے رنگارنگ اسٹال 2013-01-30 بیان بازار کے رنگارنگ اسٹال 2013-01-23 ایک اور ’’بی جے پی‘‘ خون پینے کیلئے تیار! 2013-01-29 چلو کچھ دیر ہنس لیں ہم ! 2013-01-28 بھائی لوگ کی کہانی 2013-01-27 جو لوگ کچھ نہیں کرتے , کمال کرتے ہیں! 2013-01-25 پرنالے وہیں بہتے رہیں گے ! 2013-01-24 حالات کی دیگ, سیاست کالنگر! 2013-01-23 کچراپرستی کا کلچر 2013-01-22 شوکن میلے دی 2013-01-21 حکومت غائب ..... عوام لائن حاضر 2013-01-20 ڈی چوک سے کنٹرول لائن تک ! 2013-01-19 کامیڈی کا سونامی 2013-01-18 موٹی مرغی ... پتلاانڈا! 2013-01-17 ہم تو خطاب سمجھ رہے تھے... 2013-01-16 پتلا تما شا 2013-01-15 خندق, بارود, پٹرول اوربانجھ پن 2013-01-14 یہ ڈراما دکھائے گا کیا سین 2013-01-13 لیجیے, لانگ مارچ پائپ لائن سے باہر آیاچا ہتا ہے! 2013-01-12 سانپ اور نیولے کی نوراکشتی 2013-01-11 معیشت کے مزار کا لنگر 2013-01-10 میاں صاحب کی بے خبری اور رحمٰن ملک کا زہریلا انتباہ! 2013-01-09 طاہرالقادری اورسردی کالانگ مارچ 2013-01-08 پارکنگ لاٹ نہیں، ڈمپنگ گرائونڈ کہیے جناب! 2013-01-07